سیاسی نظریات کی جنگ ہے اسمبلی انتخابات:سچن پائلٹ

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 19th November 2018, 10:15 PM | ملکی خبریں |

جے پور:19/نومبر(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)کانگریس کے ریاستی صدر سچن پائلٹ نے پیر کو کہا ہے کہ ریاست میں آئندہ اسمبلی انتخابات دو سیاسی نظریات کی جنگ ہے۔پائلٹ نے ٹونک اسمبلی نشست سے پرچہ نامزدگی داخل کرنے کے بعد صحافی سے کہا کہ بی جے پی نے عوام کو دھوکہ دیا اور اس کارپورٹ کارڈ عوام کے سامنے ہے۔انہوں نے کہا کہ ناراض لوگ کانگریس کے لئے ووٹ ڈالنے کے لئے پرجوش ہے۔انہوں نے کہا کہ آئندہ اسمبلی انتخابات میں کانگریس نہ صرف ٹونک سیٹ جیتے گی بلکہ پوری ریاست میں غیر متوقع اکثریت جیت حاصل کرے گی۔انہوں نے کہا کہ یہ ایک بہت اہم انتخاب ہے اور ریاست بھر میں کانگریس کی لہر ہے۔دریں اثناپائلٹ کے سامنے الیکشن لڑرہے بی جے پی کے یونس خان نے بھی پیر کو اپنا پرکہ داخل کرایا۔بی جے پی کے 200امیدوارں کی فہرست میں یونس واحد مسلم چہرہ ہے۔نامزدگی داخل کرنے کے بعد خان نے کہا کہ میں ذات یا مذہب پر تبصرہ نہیں کرنا چاہوں گا،جب سچن نے مجھ سے ملاقات کی، تومیں نے ان کے چہرے پرتناؤدیکھا،ہم دونوں ہی امیدوار کے طور پر ٹونک کی سر زمین پرپہلی بار آئے ہیں۔
قابل ذکر ہے کہ بی جے پی نے ڈیڈوانا سے رکن اسمبلی یونس خان کا نام اپنی فہرست میں آخری وقت میں شامل کرتے ہوئے انہیں ٹونک سے اپنا امیدوار بنایا۔پہلے پارٹی نے ٹونک سے ایم ایل اے اجیت سنگھ مہتا سنگھ کوامیدواربنایاتھالیکن حتمی فہرست میں ان کا نام کاٹ کر یونس خان کو ٹکٹ ملاتھا۔

ایک نظر اس پر بھی

جے پی سی سے جانچ کرانے کا راستہ ا بھی کھلا ہے، عام آدمی پارٹی نے کہا،عوام کی عدالت اورپارلیمنٹ میں جواب دیناہوگا،بدعنوانی کے الزام پرقائم

آپ کے راجیہ سبھا رکن سنجے سنگھ نے کہا ہے کہ رافیل معاملے میں جمعہ کو آئے سپریم کورٹ کے فیصلے کے باوجود متحدہ پارلیمانی کمیٹی (جے پی سی) سے اس معاملے کی جانچ پڑتال کرنے کا اراستہ اب بھی کھلا ہے۔

رافیل پر سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد ، راہل گاندھی معافی مانگیں: بی جے پی

فرانس سے 36 لڑاکا طیارے کی خریداری کے معاملے میں بدعنوانی کے الزامات پر سپریم کورٹ کی کلین چٹ ملنے کے بعد کانگریس پر نشانہ لگاتے ہوئے بی جے پی نے جمعہ کو کہا کہ کانگریس پارٹی اور اس کے چیئرمین راہل گاندھی ملک کو گمراہ کرنے کیلئے معافی مانگیں۔