جی ایس ٹی اب بنگلور یونیورسٹی کے نصاب میں داخل امید ہے کہ ٹیکس کا یہ نظام آئندہ 40سال تک قائم رہے گا:منی نارائن اپا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th November 2017, 11:05 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،11/نومبر(ایس او نیوز) ملک بھر میں بحث کا موضوع بناہوا فروخت اور خدمات محصول ، گوڈس اینڈ سرویس ٹیکس (جی ایس ٹی ) کو بنگلور یونیورسٹی کے بی کام اور بی بی یم کے 5ویں سمسٹر کے نصاب میں شامل کیاگیاہے۔ بنگلور یونیورسٹی کامرس شعبہ کے صدر پروفیسر منی نارائن اپا نے بتایا کہ جی یس ٹی ایک ضروری موضوع ہے اسلئے ہم نے نصاب میں تبدیلی کرتے ہوئے اسی سال سے اس موضوع کو نصاب میں متعارف کرایا ہے۔ چونکہ اس موضوع میں مہارت رکھنے والے اساتذہ کی کمی ہے بنگلور یونیورسٹی نے اساتذہ کی تربیت کا انتظام کیا ہے۔ انسی ٹیوٹ آف کمپنی سکریٹریز آف انڈیا کے تعاون سے 220اساتذہ تربیت حاصل کرچکے ہیں۔ تربیت کے دوسرے مرحلے کا جلد ہی اعلان کیا جائے گا۔ یونیورسٹی کے تمام کالجوں کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ اپنے کامرس اساتذہ کو تربیت کے لئے روانہ کریں۔ ایک سرکاری کالج کے کامرس لکچرر بنکاراجو نے بتایا کہ 22؍نومبر سے امتحانات شروع ہورہے ہیں۔ اس کے باوجود کالجوں میں جی ایس ٹی کے موضوع پر تعلیم نہیں ہوئی۔ کیوں کہ کالجز کے بہت اساتذہ کو اس سلسلہ میں تربیت فراہم نہیں کی جاسکی ہے۔پروفیسر منی نارائن اپا نے بتایا کہ بنگلور یونیورسٹی کا منصوبہ ہے کہ اگلے تعلیمی سال سے جی ایس ٹی ایک علاحدہ سبجیکٹ کے طور پر پڑھا جائے۔ کامرس شعبہ میں اس کا نصاب تیار کیا جارہا ہے۔ حکومت کی منظوری حاصل کرنے کے بعد یہ نصاب شروع کیا جائے گا۔ ان کے مطابق ٹیکس کا یہ نظام آئندہ 30تا 40 سال تک جاری رہے گا۔ جس کی توقع کی جاری ہے۔ لہٰذا اس موضوع پر مہارت کا حصول ضروری ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

حکومت کی غیر ذمہ دارانہ حرکت سے پرائیویٹ ڈاکٹروں کامسئلہ الجھا ہے : حزب مخالف لیڈر جگدیش شٹر

ریاستی سرکار کی غیر ذمہ دارانہ حرکت اور ان دیکھی سے مسئلہ الجھا ہے اور پرائیویٹ ڈاکٹروں کا احتجاج ریاست گیر سطح پر عوام کے لئے پریشانی کا باعث بننے کا حزب مخالف لیڈر جگدیش شٹر نے خیال ظاہر کیا۔

حکومت کے مجوزہ کے پی ایم ای ترمیمی بل کی جے ڈی ایس سخت مخالف : ایچ ڈی دیوے گوڈا

جنتادل سکیولر (جے ڈی ایس )ریاستی حکومت کی طرف سے پرائیویٹ ڈاکٹروں پر لگام کسنے کے لئے جاری اجلاس میں پیش کئے جانے والے مجوزہ کے پی ایم ای ترمیمی بل کی سخت مخالفت کئے جانے کا سابق وزیرا عظم ایچ ڈی دیوے گوڈا نے اعلان کیا۔

کالج کی نابالغ طالبہ کی اجتماعی عصمت ریزی،لاڈج کے کنٹراکٹر سمیت چار ملزمین سلاخوں کے پیچھے

کالج کی نابالغ طالبہ کی اجتماعی عصمت ریزی کا ایک واقعہ شہر کے کاڈگوڈی پولیس تھانہ کی حدود میں سامنے آیا ہے۔ کے آر پورم کی ایک کالج میں زیر تعلیم 17سالہ طالبہ کے ساتھ مسلسل ایک ہفتہ تک منہ کالا کرنے والے چار افراد کو کے آر پورم پولیس نے گرفتار کرلیا ہے۔

گنپتی معاملہ پر بی جے پی کا اسمبلی میں دھرنا ختم

ڈی وائی ایس پی گنپتی کی مبینہ خود کشی کے معاملے میں سی بی آئی کی طرف سے وزیر ترقیات بنگلور کے جے جارج کے خلاف ایف آئی آر درج کرنے کے معاملے پر بحث کا مطالبہ کرتے ہوئے پچھلے دو دنوں سے ریاستی اسمبلی کی کارروائیوں میں رخنہ اندازی کرنے والی بی جے پی نے آج اپنا احتجاجی دھرنا واپس لے ...