بحرین : 24 شیعہ افراد کو دہشت گرد گروپ تشکیل دینے پر جیل کی سزائیں ، شہریت منسوخ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 21st April 2018, 1:11 PM | خلیجی خبریں |

منامہ20 اپریل (ایس او نیوز؍ آئی این ایس انڈیا)بحرین میں ایک عدالت نے 24 شیعہ افراد کو ایک دہشت گرد گروپ تشکیل دینے اور تخریبی سرگرمیوں میں ملوث ہونے کے الزامات میں قصور وار قرار دے کر مختلف مدت کی قید کی سزائیں سنائی ہے اور ان تمام کی بحرین کی شہریت منسوخ کردی ہے۔بحرین کے ایک عدالتی ذریعے نے بتایا ہے کہ ان مشتبہ افراد پر ایک دہشت گرد گروپ کی تشکیل کے علاوہ ہتھیار چلانے اور دھماکا خیز مواد کی تیاری کی تر بیت کے لیے عراق اور ایران جانے اور پولیس افسروں کے قتل کی سازش کے الزامات بھی عاید کیے گئے تھے۔بحرین کی اعلیٰ فوجداری عدالت نے ان میں دس مجرموں کو عمر قید ، دس کو دس ،دس سال اور چار کو تین سے پانچ سال تک قید کی سزاؤں کو حکم دیا ہے۔ان میں بعض مجرمان گذشتہ سال بحرین کی باپکو ریفائنری اور سعودی عرب کی بڑی تیل کمپنی آرامکو کے درمیان تیل پائپ لائن کو دھماکے سے اڑا نے کے واقعے میں بھی ملوث بتائے گئے ہیں۔اس دھماکے کے بعد سعودی صوبے ظہران اور باپکو ریفائنری کے درمیان پائپ لائن سے تیل کی ترسیل منقطع ہوگئی تھی اور اس کی مرمت کے بعد اس کو بحال کیا جاسکا تھا۔منامہ کی حکومت نے فروری میں اس تیل پائپ لائن پر حملے کے الزام میں چار مشتبہ افراد کو گرفتار کرنے کی اطلاع دی تھی اور ایران پر ان میں سے دو افراد کو عسکری تربیت دینے کا الزام عاید کیا تھا لیکن ایران نے اس کی تردید کی تھی۔

ایک نظر اس پر بھی

دبئی میں شیرور اسوسی ایشن کے زیر اہتمام گیٹ دو گیدر؛مرحوم باشو بھائی کی خدمات کو خراج عقیدت

شیرور اسوسی ایشن کے زیر اہتمام البستان ریسیڈنس میں شیروریئن کا گیٹ ٹو گیدر منعقد کیا گیا۔ جس میں گرین ویلی اسکول شیرور کے بانی مرحوم جناب عبدالقادر عرف باشو بھائی کو ان کی بے لوث خدمات پر خراج عقیدت پیش کیا

سعودی عرب : پانچ شہروں میں خواتین کے لیے ڈرائیونگ اسکولز قائم

سعودی عرب میں محکمہ ٹریفک کے ڈائریکٹر بریگیڈیئر جنرل محمد بن عبداللہ البسامی کا کہنا ہے کہ مملکت میں خواتین کی ڈرائیونگ سے معلق تمام مطلوبہ امور کی تیاری مکمل کر لی گئی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ بعض سعودی جامعات کے تعاون سے خواتین کے لیے کئی ماڈل ڈرائیونگ اسکولز بھی متعارف کروا ...

دبئی کے معروف ڈاکٹر اسماعیل قاضیا سے ایک ملاقات جن کے تینوں بیٹے بھی ڈاکٹر ہیں

طبی میدان یعنی میڈیکل سے وابستگی کو بہت ہی معتبر اور مقدس سمجھا جاتاہے ، گرچہ جدید دورمیں مادیت کی وجہ سے اس میں کچھ کمی ضرور آئی ہے مگر آج بھی ایسے بے شمار طبیب ہیں جو عوام کی بھلائی کی خاطر ڈاکٹری پیشہ سے وابستہ رہتے ہوئے مخلصانہ خدمات انجام دے رہےہیں۔ مسلمانوں نے طب کے میدان ...