بابو لال گور کی بہو کو ٹکٹ ملنے سے ناراض بی جے پی کارکنوں کا دفتر کے باہراحتجاج 

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 9th November 2018, 2:24 AM | ملکی خبریں |

بھوپال :8/نومبر(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) مدھیہ پردیش اسمبلی انتخابات کے لیے جاری بی جے پی امیدواروں کی تیسری فہرست میں پارٹی نے معروف رہنما اور ریاست کے سابق وزیراعلیٰ بابو لال گور کی بہو کو ٹکٹ دیا ہے۔ بابو لال گور کی بہوکرشنا گورکے لیے پارٹی نے گووندپوراسیٹ سے ٹکٹ دیا ہے۔کرشنا غور کو ٹکٹ ملنے سے پارٹی کے کچھ کارکن ناراض ہو گئے ہیں۔ انہوں نے ناراضگی ظاہر کرتے ہوئے پارٹی کے ہیڈ آفس کے باہر مظاہرہ کیا۔ واضح ہو کہ امیدواروں کی تیسری فہرست بی جے پی نے جمعرات کو جاری کی ہے ۔ اس فہرست میں پارٹی نے 32 امیدواروں کے نام کا اعلان کیا ہے۔ 32 امیدواروں کی اس فہرست میں کنبہ پروری غلبہ رہا،دراں حالے کہ بی جے پی کنبہ پروی کے نام پر خوب سیاست کرتی رہی ہے ۔ کرشنا غور کے لیے بی جے پی نے گو ندپورا سے ٹکٹ دیا تو وہیں جنرل سکریٹری کیلاش وجے ورگی کے بیٹے آکاش کو اندور ۔3 سے امیدوار بنایا ہے۔ وہیں حال ہی میں کانگریس چھوڑ کر بی جے پی میں آئے راکیش چودھری کو بھنڈ اور پریم چند گڈ کے بیٹے کو بھی ٹکٹ دیا گیا ہے۔ سابق وزیر اجے وشنوئی کی بھی واپسی ہوئی ہے اور انہیں ٹکٹ دیا گیا ہے۔اس سے پہلے بی جے پی نے 5 نومبر کو 17 امیدواروں کی فہرست جاری کی تھی۔ وہیں دو نومبر کو بی جے پی نے 177 امیدواروں والی پہلی فہرست جاری کی تھی۔ پہلی فہرست میں تین وزراء کے ٹکٹ کاٹ دئے گئے تھے۔ مدھیہ پردیش میں 28 نومبر کو ایک مرحلے میں ووٹ ڈالے جائیں گے اور نتیجے مدھیہ پردیش، چھتیس گڑھ، تلنگانہ اور میزورم کے ساتھ 11 دسمبر کو آئیں گے۔صوبہ میں اہم مقابلہ کانگریس اور بی جے پی کے درمیان ہے۔ اسمبلی کی 230 سیٹیں ہیں۔ سال 2013 کے اسمبلی انتخابات میں بی جے پی نے 165 سیٹوں پر سال 2013 کے اسمبلی انتخابات میں بی جے پی نے 165 سیٹوں پر جیت کے ساتھ اقتدار پر اپنا قبضہ جاری رکھا تھا۔ کانگریس محض 58 سیٹیں ہی جیت پائی تھی ۔ جیت کے ساتھ اقتدار پر اپنا قبضہ جاری رکھا تھا۔

ایک نظر اس پر بھی

پربھنی میں جمعیۃعلماء مراٹھواڑہ کی ورکنگ کمیٹی میں اہم امور طے ہوئے

جمعیۃعلماء مراٹھواڑہ کے اراکین عاملہ کا ایک اہم اجلاس مفتی مرزا کلیم بیگ ندوی صدر جمعیۃعلماء مراٹھواڑہ کی صدارت میں سٹی فنکشن ہال ،پربھنی میں منعقد ہوا ،جس میں حالات حاضرہ اور دیگر چند اہم امور پر تبادلہ خیال کے بعد فیصلہ لیا گیا ۔مجلس عاملہ جمعیۃعلماء مراٹھواڑہ کے اس اجلاس ...