بابری مسجد معاملہ: اجودھیا میں معمولات زندگی معمول پر، پولیس کی سخت چوکسی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 7th December 2017, 12:13 AM | ملکی خبریں |

ایودھیا، 7؍دسمبر(ایس او نیوز؍ایجنسی) اجودھیا میں متنازعہ ڈھانچہ منہدم ہونے کی 25 ویں برسی پر معمولات زندگی تو معمول پر ہے لیکن پولیس سخت چوکسی برت رہی ہے۔ برسی کو ہندو اور مسلمان اپنے اپنے طریقے سے منا رہے ہیں. وشو ہندو پریشد اور کچھ دیگر ہندو تنظیم فتح یا شوریہ دیوس کی حیثیت سے پروگرام منعقد کر رہے ہیں جبکہ مسلمانوں کی جانب سے ’یوم غم ‘ منایاجا رہا ہے. بائیں بازو کی پارٹیوں نے اس دن کو آئین بچاؤ دن کے طور پر منانے کا اعلان کیا ہے. مسلمانوں نے کہیں کہیں تجارتی ادارے بند رکھے ہیں۔ وی ایچ پی ہیڈکوارٹر کارسیوک پورم میں دوپہر بعد اجتماع کے انعقاد کا اعلان کیا ہے۔ ان واقعات کو دیکھتے ہوئے سیکورٹی کے وسیع پیمانہ انتظامات کئے گئے ہیں. چپے چپے پر پولیس نظر رکھ رہی ہے. مرکزی فورسز کی بھی تعیناتی کی گئی ہے۔

مسلمانوں نے ظہر کی نماز میں سپریم کورٹ سے بابری مسجد کے حق میں فیصلہ آنے کے لئے دعا کرنے کی اپیل کی ہے۔ دونوں فرقوں کے پروگراموں کے پیش نظر اتر پردیش میں کل ہی هائی الرٹ جاری کر دیا گیا تھا. اس سلسلے میں ضلع مجسٹریٹوں اور ضلع کے پولیس سپرنٹنڈنٹوں کو ہدایت دے دیئے گئے تھے۔ دریں اثنا، ضلع مجسٹریٹ انل پاٹھک نے بتایا کہ قانون اور امن و امان برقرار رکھنے کیلئے ضلع کو چار زون اور دس سیکٹر میں بانٹ کر چار زونل مجسٹریٹ، دس سیکٹر مجسٹریٹ اور چودہ اسسٹنٹ سیکٹر مجسٹریٹ کی تعیناتی کی گئی ہے۔ اس کے علاوہ سات مجسٹریٹ کو ریزرو میں بھی رکھا گیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ متنازع شري رام جنم بھومی کی حفاظت کے لیے مقامی پولیس فورس کے علاوہ دس ایڈیشنل پولیس سپرنٹنڈنٹ، چار ڈپٹی پولیس سپرنٹنڈنٹ، 12 کمپنیاں نیم فوجی دستے، چار سو سپاہی ، ایک پلاٹون خواتین كمانڈو، ایک سو پچاس كانسٹبل لگائے گئے ہیں. اس کے علاوہ بم ڈسپوزل اسکواڈ سمیت مختلف مقامات پر سی سی ٹی وی کیمرے بھی لگائے گئے ہیں. حساس علاقوں میں پولیس مسلسل گشت کر رہی ہے۔ مسٹر پاٹھک نے بتایا کہ احتیاط کے طور پر دفعہ 144 لگانے کے ساتھ ہی ضلع کی سرحد میں داخل ہونے والی سڑکوں پر گاڑیوں کی تلاشی لی جا رہی ہے. انہوں نے بتایا کہ تمام ایڈیشنل ضلع مجسٹریٹ کو اپنے اپنے تحصیل علاقوں میں امن و امان برقرار رکھنے کی سخت ہدایات دی گئی ہیں۔ نئے پروگراموں کے انعقاد کی اجازت نہیں دی گئی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ سڑک پر اجتماع اور جلوس پر بھی روک لگا دی گئی ہے. ہوٹل، اسپتال میں ٹھہرے افراد پر نگرانی رکھی جا رہی ہے. پورے ضلع میں چوکسی برتنے کی ہدایات دی گئی ہیں.

دریں اثنا، وشو ہندو پریشد (وی ایچ پی) کے ترجمان شرد شرما نے بتایا کہ ملک بھر میں مختلف مقامات پر وشو ہندو پریشد اور بجرنگ دل کے کارکن ہندو سماج سے اپیل کریں گے کہ وہ مٹھ ،مندروں اور گھروں میں پوجا پاٹھ کرکے پرشوتم بھگوان شری رام کی نگری اجودھیا میں متنازعہ شري رام جنم بھومی پر خوبصورت رام مندر کی تعمیر کرانے کا حلف لیں۔ مسٹر شرما نے بتایا کہ وشو ہندو پریشد کے ہیڈکوارٹر کارسیوک پورم میں شوریہ دیوس میں ’سوابھیمان سنکلپ سبھا‘ کیا گیا ہے. اس تقریب میں متنازعہ مذہبی مقام پر خوبصورت رام مندر کی تعمیر کے ساتھ ساتھ کاشی اور متھرا کی بازیابی کا بھی حلف لیا جائے گا۔ یہ اجتماع دوپہر بعد ہوناہے. اس اجتماع میں شري رام جنم بھومی ٹرسٹ کے چیئرمین، منی رام داس، چھاؤنی کے مہنت نرتيہ گوپال داس، مہنت کوشل کشور داس، جگدگرو پرشوتم آچاريہ، شري رام جنم بھوم ٹرسٹ کے سینئر رکن اور ہندو دھام کے مہنت اور سابق ممبر پارلیمنٹ ڈاکٹر رام ولاس داس ویدانتي، مہنت كشوری شرن سمیت وشو ہندو پریشد کے لیڈر اور سنت دھرماچاريہ شرکت کریں گے۔ ادھر، شیوسینا کے ریاستی سربراہ ٹھاکر انل سنگھ صوبہ کور کمیٹی کے ساتھ سریو کے کنارے پرم ہنس رام چندر داس کی سمادھی پر جاکر شہید کارسیوکوں کو خراج عقیدت پیش کیا اور رام للا کے درش کئے. اکھل بھارتیہ ہندو مہاسبھا کی جانب سے 30 اکتوبر اور دو نومبر 1990 کو مارے گئے کارسیوکوں کو سریو کے کنارے خراج عقیدت پیش کی گئی۔ دوسری جانب ، بابری مسجدایکشن کمیٹی کے اعلان کے مطابق مسلمان یوم غم منا رہے ہیں اور بابری مسجد کی دوبارہ تعمیر کے لیے دعا کر رہے ہیں۔ انڈین یونین مسلم لیگ کے صوبائی صدر ڈاکٹر نجم الحسن غنی نے بتایا کہ مسلم لیگ یوم سیاہ کے طور پر منا رہی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

رائے بریلی میں بھاجپائی لیڈر پر ریپ کا الزام، متاثرہ نے کہا ڈیڑھ ماہ تک آبروریزی کرکے ویڈیو بنائی 

اتر پردیش کے ضلع رائے بریلی میں ایک خاتون نے بی جے پی لیڈر پر آبروریزی کا الزام لگایا ہے۔ خاتون کا یہ بھی الزام ہے کہ بی جے پی لیڈر نے فحش ویڈیوز بنا کر اسے بلیک میل کرتا رہا ۔ متاثرہ کا کہنا ہے کہ اس کی شکایت پر پولیس نے مقدمہ بھی درج کیا، لیکن ملزم کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی ...

ایوان میں مودی کی تقریر پر اپوزیشن کی رائے: کانگریس نے ڈرامہ بازی قراردیا، چندرا بابو نائیڈو نے پی ایم کو گھمنڈی کہا 

عدم اعتماد کی پیشکش پر بحث کے دوران مودی کی تقریر کو کانگریس نے 'ڈرامے بازی' قرار دیا ہے۔ پارٹی نے کہا کہ پی ایم مودی سے رافیل ڈیل ، نیرو مودی ، سمیت دیگر کئی مسائل پرسوال پوچھے گئے، لیکن انہوں نے کسی بھی سوال کا جواب نہیں دیا ۔ کانگریس لیڈر ملک ارجن کھڑگے نے کہا کہ ان تقریر 'ڈرامے ...

مودی کی مقبولیت کا ردعمل موب لنچنگ ہے : میگھوال 

راجستھان کے الور ضلع میں ایک بار پھر زر خرید ہجو م کے ذریعہ گائے اسمگلنگ کے شبہ میں اکبر نامی ایک مسلم تاجر کو پیٹ پیٹ کر شہید کر دیا گیا۔اس واقعہ پر مرکزی وزیر ارجن رام میگھوال نے کہا ہے کہ وہ اس واقعہ کی مذمت کرتے ہیں لیکن یہ صرف تنہا واقعہ نہیں ہے ہمیں اس کی تاریخ میں جائیں گے. ...

مودی سے راہل کے گلے ملنے پر یشونت سنہا کو ملا طنزکا موقع 

مودی حکومت کے خلاف مسلسل باغیانہ تیور اختیار کرنے والے سابق بی جے پی لیڈر یشونت سنہا نے جمعہ کو پارلیمنٹ میں راہل گاندھی کی طرف سے پی ایم مودی کو گلے لگائے جانے کو لے کر مودی پر طنز کیا ہے۔ وہیں کانگریس صدر راہل گاندھی کو گلے لگنے والے تنازعہ میں یشونت سنہا کا ساتھ ملا ہے۔ اکثر ...

بی جے پی سے ترک تعلق کرنے والے لیڈر نے تھاماترنمول کانگریس کادامن 

بی جے پی کے سابق رہنما اور راجیہ سبھا سے دو بار رکن رہ چکے سینئر صحافی چندن مترا نے آج کولکاتہ میں ایک ریلی کے دوران ترنمول کانگریس کا دامن تھام لیا ہے۔ ممتا بنرجی کی ٹی ایم سی میں آج ایک بڑی ریلی کے دوران ویسے تو بہت سے چہرے شامل ہوئے، مگر چندن مترا سے قدآور لیڈر کوئی نہیں تھی

راہل گاندھی نے بھارتی سیاستدان کی تصویر کو شدید نقصان پہنچایا: جیٹلی

راہل گاندھی پر فرانسیسی صدرکے ساتھ بات چیت کی کہانی گڑھنے کا الزام لگاتے ہوئے مرکزی وزیر ارون جیٹلی نے آج کہا کہ کانگریس صدر نے دنیا کے سامنے کسی ہندوستانی سیاستداں کی تصویر کو شدید نقصان پہنچایا ہے۔ مودی حکومت کے خلاف کل لوک سبھا میں عدم اعتماد کی تجویز پر بحث کرتے ہوئے ...