بکل نواب نے دیا شیعہ وقف بورڈ سے استعفی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th September 2018, 9:52 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،10؍ ستمبر (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) اتر پردیش شیعہ سینٹرل وقف بورڈ کے ممبر مظہر علی خاں عرف بکل نواب نے آج بورڈ کی رکنیت سے استعفیٰ دے دی ہے۔انہوں نے چیف سکریٹری (اقلیتی امور) کو لکھے خط میں یہ اطلاع دی ہے۔ جبکہ شیعہ سینٹرل وقف بورڈ نے آج ہی ایک خط چیف سکریٹری اقلیتی امور کو لکھ کر کہا ہے کہ بکل نواب 27-07-2017کو اتر پردیش قانون ساز کونسل کی رکنیت سے استعفیٰ دے دیا تھا۔اس لئے اسی دن قانونی طور سے ان کی وقف بورڈ سے رکنیت ختم ہو گئی تھی۔معلوم ہو کہ آج کل اتر پردیش شیعہ سینٹرول وقف بورڈ کے چیئر مین وسیم رضوی کو لے کر شیعہ برادری میں کافی غصہ پایا جا رہا ہے ۔ایران سے ان کے خلاف ایک فتویٰ منگایا گیا ہے جس میں رضوی کو اسلام سے خارج بتایا گیا ہے ۔اس کے علاوہ شیعہ عالم دین مولانا کلب جواد نے گزشتہ دنوں اپنے جمعہ کے خطبے میں وسیم رضوی کو اسلام سے خارج کئے جانے کا اعلان کیا ہے ۔ اسی بیچ آج نواب بکل نے بھی بورڈ کی رکنیت سے استعفیٰ دینے کا اعلان کرتے ہوئے حکومت اتر پردیش سے بورڈ کو تحلیل کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔جبکہ بورڈ نے بکل نواب کی شیعہ سینٹرل وقف بورڈ کے رکن ہونے پر ہی سوال کھڑے کئے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

شارداچٹ فنڈ:سپریم کورٹ میں مغربی بنگال کے تین افسران کی موجودگی پر ہوگی سماعت

سپریم کورٹ نے مغربی بنگال کے چیف سکریٹری، پولیس ڈائریکٹر جنرل اور کولکاتہ کے پولیس کمشنر کو زاردا چٹ فنڈ کیس سے متعلق توہین کے معاملے میں ذاتی طور پر پیش ہونے کے بارے میں منگل کو کوئی حکم جاری نہ کرنے کا فیصلہ کیا۔

ممبرا۔اورنگ آبادداعش معاملہ، چار ریمانڈ مکمل ہوجانے کے باجود اے ٹی ایس ملزمین کے خلاف پختہ ثبوت پیش نہیں کرسکا، ایڈوکیٹ خضر پٹیل

مہاراشٹر کے اورنگ آباد اور ممبئی سے قریب مسلم آبادی والے ممبرا سے گرفتا ۹؍ مسلم نوجوانوں کو گذشتہ کل اورنگ آباد کی خصوصی یو اے پی اے عدالت نے عدالتی تحویل میں دیئے جانے کے احکامات جاری کیئے

محبوبہ مفتی نے عمران خان کو دیا جواب،کہا،پٹھان کوٹ حملے کے مجرموں کو اب تک نہیں دی گئی سزا

جموں و کشمیر کی سابق وزیر اعلی اور پی ڈی پی صدر محبوبہ مفتی نے پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان کی طرف سے ہندوستان سے پلوامہ دہشت گردانہ حملے کا ثبوت مانگے جانے پر اپنی نا اتفاقی ظاہر کی ہے۔