مودی کے آیوشمان بھارت کو کرناٹک نے مسترد کردیا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 30th August 2018, 11:21 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،30؍اگست(ایس او نیوز) مرکزی حکومت کی طرف سے عوامی صحت کی حفاظت کے نام پر شروع کئے جانے والے آیوشمان بھارت پراجکٹ کو کرناٹک نے لاگو کرنے سے انکار کردیا ہے۔

ریاستی حکومت نے کہا ہے کہ مرکزی حکومت کی طرف سے شروع کیاجانے والا پراجکٹ برائے نام ہے، اس پراجکٹ کے لئے مرکزی حکومت صرف دس سے بیس فیصد فنڈ مہیا کراتی ہے جبکہ باقی فنڈ ریاستی حکومت کو مہیا کرانے ہوں گے۔

وزیراعظم مودی نے اپنے یوم آزادی خطاب کے دوران اعلان کیاتھاکہ 25 ستمبر سے وہ آیوشمان بھارت پراجکٹ پورے ملک میں لاگو کریں گے، جس کے تحت خط افلاس سے نیچے زندگی بسر کرنے والے خاندانوں کو پانچ لاکھ روپیوں تک کے علاج کی سہولت دی جائے گی۔

ریاستی حکومت کا کہنا ہے کہ اس پراجکٹ کے لئے مرکزی حکومت کی طرف سے صرف دس سے بیس فیصد رقم ہی دی جارہی ہے، باقی 80 تا90 فیصد رقم ریاستی حکومتوں کو برداشت کرنی ہے، پیسہ ریاستی حکومتوں کو برداشت کرنا پڑتا۔ پیسہ ہمارا اور سستی شہرت مرکزی حکومت کی ہو کرناٹک کو یہ کسی بھی صورت میں منظور نہیں۔

ریاستی حکومت نے کہا ہے کہ پچھلی سدرامیا حکومت نے ریاست میں تمام کے لئے صحت کے نام سے ہیلتھ اسکیم جاری کی ہے اس کے تحت وہی سہولتیں بی پی ایل خاندانوں کو دی جارہی ہیں جو مرکزی حکومت اپنے آیوشمان منصوبے کے تحت دینا چاہتی ہے، اسی لئے کرناٹک کو اس اسکیم کی ضرورت نہیں۔

کرناٹک نے کہاہے کہ ریاست میں اگر آیوشمان بھارت منصوبہ لاگو ہونا ہے تو غریب خاندانوں کے علاج کا پورا خرچ مرکزی حکومت برداشت کرے ، صرف دس سے بیس فیصد رقم دے کر شہرت حاصل کرنے کی کوئی کوشش کرناٹک حکومت برداشت نہیں کرے گی۔

وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمارسوامی نے اس سلسلے میں مرکزی وزارت صحت کی طرف سے ریاستی محکمۂ صحت کو روانہ کی گئی تجویز مستر د کرنے کی ہدایت دیتے ہوئے کہا ہے کہ کرناٹک میں جو کرناٹکا آروگیہ منصوبہ لاگو ہے اسے برقرار رکھا جائے۔ اس منصوبے کی جگہ آیوشمان بھارت کو لاگو کرنے کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔ 

ایک نظر اس پر بھی

کیا جنگلاتی زمین کے حقوق سے متعلقہ مسائل حل کرنے میں دیش پانڈے ہورہے ہیں ناکام ؟ کاروار میٹنگ میں کئی اہم آفسران کی غیر حاضری پر دیش پانڈے گرم

کیا جنگلاتی زمین کے حقوق سے متعلقہ مسائل حل کرنے میں ضلع اُترکنڑا کے انچارج وزیر آر وی  دیش پانڈے ہورہے ہیں ناکام ثابت ہورہے ہیں ؟ یہ سوال اس لئے پیدا ہورہا ہے کہ پیر کو کاروار کے  ضلع پنچایت میٹنگ ہال میں منعقدہ کرناٹکا ڈیولپمنٹ پروگرام (کے ڈی پی) کی میٹنگ کی صدارت کرتے ہوئے ...

بنگلورو میں گڈھوں کو بند کرنے میں بی بی ایم پی کی سست روی پر ہائی کورٹ برہم

شہر میں مسلسل بارش کی وجہ سے سڑکوں پر گڈھوں کی تعداد میں دن بدن اضافے پر تشویش ظاہر کرتے ہوئے ریاستی ہائی کورٹ نے بی بی ایم پی کی طرف سے گڈھوں کو بند کرنے میں اپنائی جارہی سست روی پر برہمی کا اظہار کیا ہے