کنداپور: انتخابی ضابطۂ اخلاق لاگو کرنے والے افسران پر حملہ ۔ دو افراد گرفتار

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 10th April 2018, 6:34 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

کنداپور 10؍اپریل (ایس او نیوز) کنداپور کے ایک مضافاتی علاقے انکڈادکٹّے میں واقع ایک ہوٹل میں انتخابی ضابطۂ اخلاق کی خلاف ورزی کرتے ہوئے شراب فروخت کیے جانے کی شکایت موصول ہونے پر جب افسران وہاں پہنچے تو مبینہ طور پر گاہک اور ہوٹل کے مالک نے افسران کو اپنی ڈیوٹی انجام دینے سے روک دیا  اور ان پر حملے کی کوشش کی گئی۔

اس اسمبلی حلقے کے انتخابی افسر اسسٹنٹ کمشنر بھو بالن، پروبیشنری اسسٹنٹ کمشنر پوویتا اور ایکسائز ڈپٹی کمشنر نیرو نندن نے جب رات کے وقت مذکورہ ہوٹل کا دورہ کیا تو وہاں کچھ لوگ شراب پی رہے تھے۔ انتخابی افسران نے جب اس کی ویڈیو فوٹیج کے لئے ریکارڈنگ شروع کی تو وہاں پر موجود ایک گاہک ان سے الجھ پڑا اور جھگڑے پر آمادہ ہوگیا ۔ انتخابی افسران کا کہنا ہے کہ اس بیچ ان پر حملہ کرنے کی بھی کوشش کی گئی۔

اسسٹنٹ کمشنر کی شکایت پر پولیس نے انتخابی ضابطۂ اخلاق لاگو کرنے والے افسران کی راہ میں رکاوٹ پید اکرنے اور ان پر حملہ کرنے کا کیس درج کیا ہے اورہوٹل کے مالک اور مذکورہ گاہک کو گرفتار کرلیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

شیرور مٹھ سوامی کو زہر دینے کے لئے استعمال کی گئی بوتل بر آمد ہونے کی افواہ۔ پولیس سپرنٹنڈنٹ نے کیا انکار؛ تحقیقاتی ٹیم ممبئی روانہ

شیرور مٹھ کے سوامی لکشمی ورا تیرتھاکی پراسرار موت کے تعلق سے جوشبہ ظاہر کیا جارہا تھا کہ انہیں زہر دے کر قتل کیا گیا ہے، ابتدائی طبی رپورٹ بھی زہر خورانی کی طرف اشارہ کررہی تھی

گوکرن سمندر میں تیرتی ہوئی لاش کو لائف گارڈ نے نکالا باہر

  تعلقہ کے گوکرن سمندر میں کل شام ایک لاش  بحر عرب میں تیرتی ہوئی پائی گئی تھی، مگر موجوں میں کافی زیادہ روانی  ہونے کی وجہ سے  لاش کو باہر نکالا نہیں جاسکا تھا، آج پولس نے لائف گارڈ کی مدد سے  متعلقہ لاش کو کنارے  لانے میں کامیاب ہوگئے ہیں۔

ایران میں زلزلے کے شدید جھٹکے، 290 زخمی

ایران میں دو دنوں سے جاری زلزلہ کے تیز جھٹکوں کی وجہ سے زخمیوں کی تعداد بڑھ کر 290 ہو گئی ہے۔ پیر کو جنوب مشرقی ایران میں 5.8 شدت کے زلزلہ کے شدید جھٹکے محسوس کئے گئے.میڈیا رپورٹوں کے مطابق اتوار کو ایران کے مغربی علاقے میں 5.9 شدت کے زلزلہ کے جھٹکے محسوس کئے گئے تھے۔

بی جے پی کی شکست کے لیے ہم کسی بھی پارٹی سے اتحاد کے لیے تیارہیں : مایاوتی 

بی جے پی کو شکست دینے کے لئے بی ایس پی کسی بھی پارٹی سے اتحاد کو تیار ہے۔ اس فیصلے کا اعلان خود مایاوتی نے کیا۔ دہلی میں ان کے گھر پر ملک بھر سے آئے بی ایس پی کے کو آرڈنیٹر کی میٹنگ ہوئی۔ مایاوتی نے بی ایس پی لیڈروں کو میڈیا سے دور رہنے کی صلاح دی ہے۔ انہوں نے خبردار کرتے ہوئے کہا ...

الور موب لنچنگ واقعہ: اویسی نے کیا ٹویٹ، مودی حکومت کے چار سال ۔ لنچ راج

آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے صدر اور رکن پارلیمنٹ اسدالدین اویسی نے راجستھان کے الور میں پیش آئے موب لنچنگ کے تازہ واقعہ پر اپنے سخت ردعمل کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے ایک ٹویٹ کے ذریعہ اس واقعہ کو لے کر مرکز کی مودی حکومت پر سخت حملہ بولا ہے۔