نیویارک کے مرکزی علاقے میں زیر زمین بھاپ پائپ لائن پھٹنے سے دھماکے

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 21st July 2018, 12:21 PM | عالمی خبریں |

واشنگٹن21جولائی (ایس او نیوز؍ آئی این ایس انڈیا )نیویارک شہر کے فائر ڈپارٹمنٹ نے کہا ہے کہ مین ہیٹن کی گلیوں میں زیر زمین گزرنے والا ایک ہائی پریشر بھاپ کا پائپ پھٹ گیا جس کے نتیجے میں ففتھ ایونیو کے مرکز میں واقع ایک سوراخ سے بھاپ نکل کر ہوا میں پھیلنا شروع ہو گئی۔میڈیارپورٹس کے مطابق عہدے داروں کا کہنا تھا کہ ہونے والے اس دھماکے سے کسی کے زخمی ہونے کی اطلاع نہیں ملی۔اطلاعات کے مطابق احتیاطی تدابیر کے پیش نظر حادثے کے مقام کیارد گرد کی گلیاں بند کر دی گئیں۔

مقامی میڈیا نے ایک گلی کے وسط میں بڑے سوراخ کی فوٹیج دکھائی ہیں۔ خبروں میں بتایا گیا ہے علاقے میں ایک اور مین ہول میں بھی دھماکے سنے گئے ہیں۔دھماکے کے مقام پر ہنگامی سروسز کے اہل کار ملبہ صاف کر رہے ہیں اور یہ جاننے کی کوشش کر رہے ہیں کہ دھماکوں کا اصل سبب کیا ہے۔ یہ دھماکہ گیارہ سال پہلے گرینڈ سنٹرل اسٹیشن کے قریب اسی نوعیت کے دھماکوں کے بعد ہوا ہے۔18 جولائی سن 2007 میں ٹرین اسٹیشن کے قریب 83 سال پرانا ایک زیر زمین بھاپ کا پائپ پھٹنے سے ملبے کے ٹکڑے 40 منزلہ عمارت تک ہوا میں بلند ہوئے تھے اور علاقے میں گارے کا مینہ برسنا شروع ہو گیا تھا۔

ایک نظر اس پر بھی

فتح تحریک کا حماس پر اسرائیل کے ساتھ سازباز کا الزام

فلسطینی تحریک ’فتح‘ نے ’حماس‘کی قیادت پر الزام لگایا ہے کہ اس نے اسرائیل کے ساتھ سازباز کی ہے اور وہ پناہ گزینوں کی واپسی کے حق سے دست بردار ہو گئی ہے۔ جمعے کی شام جاری ایک بیان میں فتح تحرتیک کا کہنا ہے کہ حماس تنظیم ٹرمپ انتظامیہ اور نیتین یاہو کی حکومت کو پیغامات بھیج رہی ...

اسلام مخالف اے ایف ڈی دوسری سب سے بڑی جماعت، جائزہ رپورٹ

ایک تازہ عوامی جائزے کے مطابق اسلام اور مہاجرین مخالف دائیں بازوں کی سیاسی جماعت آلٹرنیٹیو فار ڈوئچ لینڈ یا اے ایف ڈی، جرمنی کی دوسری سب سے بڑی جماعت بن گئی ہے۔ اس جائزے کے مطابق حکومتی اتحاد اپنی حمایت کھو رہا ہے۔ جرمن براڈ کاسٹر ARD کی طرف سے کرائے جانے والے عوامی جائزے کے ...

رافیل معاملے میں فرانس کے سابق صدر نے کیا مودی کے جھوٹ کا پردہ فاش ’’حکومت ہند نے دیا تھا ریلائنس کا نام‘‘

رافیل جنگی طیارہ سودے کے تعلق سے حکومت اور اہم اپوزیشن پارٹی کانگریس میں جاری جنگ کے بیچ فرانس کے سابق صدر فرانسوااولاند نے نیاانکشاف کرتے ہوئے کہاہے کہ ہندوستان کی طرف سے ہی سودے کے لئے انل امبانی کی کمپنی ریلائنس ڈیفنس انڈسٹریز کے نام کی تجویز پیش کی گئی تھی ۔