مولانا سلمان ندوی کے بیان پر اسدالدین اویسی کا شدید حملہ؛ حیدرآباد میں منعقدہ بورڈ کی سہ روزہ میٹنگ کے آخری دن جلسہ عام میں زبردست خطاب

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 13th February 2018, 1:27 AM | ملکی خبریں |

حیدرآباد 12/فروری (ایس او نیوز) اے آئی ایم آئی ایم کے سربراہ اسدالدین اویسی نے حیدرآباد میں منعقدہ بورڈ کی سہ روزہ میٹنگ کے آخری دن جلسہ عام میں زبردست خطاب کرتے ہوئے مولانا سلمان حُسینی ندوی کے حال ہی میں آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کے خلاف ٹی وی میڈیا پر دئے گئے بیانات پر زبردست وار کیا اوربورڈ سے الگ ہونے پر اُن کا نام لئے بغیر   مسلمانوں سے کہا  کہ  آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کا کام  شخصیتوں سے نہیں چل رہا ہے، یہ کام اللہ کے کرم سے چلتا ہے۔لوگ آئیں گے چلے جائیں گے۔ اسدالدین اویسی آج زندہ ہے، کل نہیں رہے گا،  وہ بھی زمین کی غذا بن جائے گا ، اگر کوئی غرور میں یہ کہہ رہا ہے کہ پرسنل لاء بورڈ کی عمر اب ختم ہوچکی ہے تو میں کہتا ہوں کہ حضرت  آپ کی عمر ختم ہوجائے گی، آپ ختم ہوجائیں گے مگر  پرسنل لاء بورڈ زندہ رہے گا۔ اویسی نے مسلمانوں سے کہا کہ ہندوستان میں مسلمانوں کا ایک ہی ایسا مضبوط ادارہ ہے جس میں  تمام مکتب فکر  کے ذمہ داران موجود ہیں اور وہ آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ ہے، مزید کہا کہ یہ بورڈ 45 سال سے کام کررہا ہے۔ انہوں نے مودی کا نام لئیے بغیر اُنہیں فرعون اور نمرود قرار دیا اور کہا کہ ان کا بھی خاتمہ ہوگا۔ اویسی نے یہاں  بھی مولانا سلمان ندوی کا نام لئے بغیر کہا کہ بعض لوگ  حکومت کے اشاروں پر بڑی بڑی باتیں کرکے  ہمارے اکابرین اور بزرگوں کی محنتوں پر پانی پھیرنا چاہتے ہیں

اویسی نے کہا  کہ مولانا سلمان ندوی ان لوگوں میں شامل ہیں جنھوں نے 2001 میں بابری مسجد کی زمین نہ چھوڑنے کی بات کہی تھی، لیکن اب اپنی ہی باتوں سے پلٹ گئے ہیں۔ مولانا سلمان پر تلخ حملہ کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ ایسے سبھی لوگوں کا سماجی بائیکاٹ کر دیا جانا چاہیے جو بابری مسجد کی زمین کو رام مندر تعمیر کے لیے دینے کی بات کرتے ہیں۔

واضح رہے کہ مولانا سلمان ندوی نے جمعہ سے شروع ہوئی آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کی 26ویں میٹنگ سے قبل کی شام بنگلورو میں شری شری روی شنکر سے ملاقات کی تھی اور یہ تجویز رکھی تھی کہ 6 دسمبر 1992 تک جس زمین پر بابری مسجد کھڑی تھی اس زمین کو رام مندر تعمیر کے لیے چھوڑ دینا چاہیے اور مسجد کی تعمیر کسی دوسری جگہ کرنی چاہیے۔ اس بیان کے بعد مولانا ندوی کی چہار جانب سے تنقید شروع ہو گئی۔ اویسی کا کہنا ہے کہ ’’وہ (ندوی) کہہ رہے ہیں کہ ان کی تجویز سے ملک میں امن اوراتحاد قائم ہوگا۔ کیا ہم عرب میں اتحاد کے نام پر مسجد اقصیٰ (یروشلم میں الاقصیٰ مسجد) کو بھی چھوڑ دیں۔‘‘

ایک نظر اس پر بھی

22نومبر کووزیر اعظم نریندرمودی کے ہاتھوں رکھا جائے گا ’سٹی گیس ‘ کا سنگ بنیاد۔ منصوبے میں منگلورو شہر بھی شامل

مرکزی حکومت کی اسکیم’سٹی گیس‘ کا سنگ بنیاد وزیر اعظم نریندر مودی ہاتھوں22نومبر کو شام 4بجے نئی دہلی کے وگیان بھون میں رکھا جائے گا۔ اس منصوبے کے تحت آئندہ رسوئی گیس سلینڈروں کے بجائے براہ راست پائپ کنکشن کے ذریعے گھر گھر پہنچائی جائے گی۔

پورے ملک میں جوش وخروش کے ساتھ منایا جارہا ہے جشن عید میلاد النبیؐ

آج یعنی 21 نومبر کو عید میلاد النبی کا تیوہار منایا جارہا ہے۔ مسلمانوں کے لئے یہ دن بے حد خاص ہوتا ہے۔ مسلمان اسے تیوہارکے طورپرمناتے ہیں۔ عید میلاد النبی پیغمبرحضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم کی یوم ولادت کے طورپرمنایا جاتا ہے۔ مسلمان آخری نبی حضرت محمد مصطفیٰ صلی اللہ علیم وسلم ...

سکھ فسادات 1984: یشپال سنگھ کوسزائے موت اورنریش کوعمرقید کی سزا

سکھ فسادات 1984 معاملے میں پٹیالہ ہاوس کورٹ نے ایک قصوروارکو عمرقید کی سزا سنائی تودوسرے ملزم کو پھانسی کی سزا سنائی۔ اس معاملے میں قصورواریشپال کوپھانسی کی سزا سنائی گئی ہے۔ عدالت نے دونوں قصورواروں پر35-35 لاکھ کا جرمانہ بھی عائد کیا ہے۔ 1984 کے سکھ فسادات میں سزائے موت سنائے ...

کانگریس کوغرورہے، 2019 میں نہیں ہوگا اتحاد: اکھلیش یادونے دیا کانگریس کوزبردست جھٹکا

 سماجوادی پارٹی کے قومی صدراکھلیش یادو نے 2019 کے عام انتخابات میں کانگریس سے دوری بنانے کا اشارہ دیا ہے۔ انہوں نے اشارہ دیا کہ 2019 میں سماجوادی پارٹی کا کانگریس کے ساتھ کوئی اتحاد نہیں ہونے جارہا ہے۔ مدھیہ پردیش میں نیوز 18 سے بات کرتے ہوئے اکھلیش نے کہا کہ کانگریس کو بڑی پارٹی ...

چھٹیس گڑھ : زبردست سیکورٹی کے درمیان دوسرے اورآخری مرحلے میں 72 فیصد سے زائد ووٹنگ

زبردست سیکورٹی بندوبست کے درمیان چھتیس گڑھ میں دوسرے اور آخری مرحلے کی 72 اسمبلی سیٹوں پر آج پرامن ووٹنگ ہو گئی۔ اب تک موصولہ اطلاع کے مطابق 72 فیصد سے زیادہ ووٹروں نے اپنے ووٹ کے حق استعمال کیا۔

سابق مرکزی وزیرسی پی جوشی کا بڑا بیان، کانگریس کا وزیراعظم ہی تعمیرکرائے گا رام مندر

کانگریس کے سینئر لیڈر اورسابق مرکزی وزیر ڈاکٹرسی پی جوشی نے بی جے پی پررام مندرکے موضوع پرسیاست کرنے کا الزام لگاتے ہوئے بڑا بیان دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی کوالیکشن آتے ہی رام یاد آنے لگتے ہیں۔ ابھی اس کے ٹائٹل کا تنازعہ سپریم کورٹ میں زیرغورہے۔