کتے کو پی ٹی آئی کے پرچم میں لپیٹ کر گولی مارنے والے ملزمان گرفتار

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 30th July 2018, 2:36 AM | عالمی خبریں |

بنوں/اسلام آباد :29/جولائی(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)جانی خیل میں معصوم و بے زبان جانور کو تحریک انصاف کا جھنڈا پہنا کر فائرنگ کرکے ہلاک کرنے والے ملزمان کو گرفتارکرلیا گیا۔گزشتہ روز سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو وائرل ہوئی تھی جس میں چند افراد نے بے زبان کتیکے ساتھ انسانیت سوز سلوک کرتے ہوئے اسے تحریک انصاف کا جھنڈا پہناکر فائرنگ کرکے جان سے ماردیاتھا۔ یہ ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد صارفین کی جانب سے سخت ردعمل سامنے آیا تھا۔واقعے کی وڈیو منظرعام پر آئی تو ڈپٹی کمشنر اور پولیس حکام حرکت میں آگئے اور دونوں ملزمان کو گرفتار کرلیا۔ ڈپٹی کمشنر بنوں کا کہنا ہے کہ انسان اور بے زبان مخلوق پر ظلم ہمارے لیے ایک ہے، ان ملزمان کو بے زبان جانور کے ساتھ انسانیت سوز سلوک کرنے پر سزا دی جائے گی۔یہ واقعہ قومی وطن پارٹی کے امیدوار کے حلقے میں پیش ا?یا تھا۔ قومی وطن پارٹی کے امیدوار کا کہنا ہے کہ یہ ہمارے خلاف پروپیگنڈہ ہے جس کے بعد امیدوار عدنان وزیر نے ملزمان کو پولیس کے حوالے کر دیا۔پاکستان تحریک انصاف نے کتے کو فائرنگ کرکے ہلاک کرنے کے واقعے کی سخت الفاظ میں مذمت کی ہے، جب کہ خیبرپختونخوا پولیس نے ٹوئٹ کرتے ہوئے کہا ہے کہ بے زبان جانور پر تشدد کرکے مارنا اور اس افسوسناک واقعے کی ویڈیو بنانا انتہائی ناقابل برداشت جرم ہے۔ بنوں پولیس نے 12 گھنٹوں کے اندر کارروائی کرتے ہوئے دونوں ملزمان کو گرفتارکرلیا ہے۔اس کے ساتھ ہی انہوں نے سوشل میڈیا صارفین کاشکریہ اداکرتے ہوئے کہا کہ انہوں نیاس واقعے پر سوشل میڈیا پر ا?واز اٹھائی جس کے باعث ملزمان کی گرفتاری عمل میں ا?سکی۔واضح رہے کہ اس سے قبل پنجاب میں گدھے پر سابق وزیر اعظم کا نام لکھ کر تشدد کیاگیا تھا اس تشدد کی ویڈیو منظر عام پر ا?نے کے بعد سماجی کارکنان نے ا?گے ا?کر گدھے کی دیکھ بھال کا ذمہ اٹھایا تھا تاہم گدھا زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے مرگیا تھا۔

ایک نظر اس پر بھی

فرش سے عرش تک لبیک اللھم کی صدائیں،مناسک حج کا آغاز؛ عرفات پہنچنے والے لاکھوں افراد میں 175025 ہندوستانی عازمین بھی شامل

دنیا بھر سے ہر قوم و نسل کے تقریبا 30 لاکھ عازمین حج جس میں ہندوستان کے 175025 عازمین بھی شام ل ہیں،  بیت اللہ کیلئے مکہ مکرمہ میں ہیں جو عمرے کی ادائیگی کے بعد رات سے ہی بسوں اور دیگر گاڑیوں میں سوار ہوکر اور پیدل منیٰ پہنچ رہے ہیں۔