پاکستان آرمی کی خیبر ایجنسی کی وادی راجگال میں دہشت گردوں کے خلاف کارروائی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 17th July 2017, 10:28 AM | عالمی خبریں |

اسلام آباد،16؍جولائی(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)پاکستان آرمی نے وفاق کے زیر انتظام قبائلی علاقے خیبر ایجنسی کی وادی راجگال میں آپریشن ردّ الفساد کے تحت دہشت گردوں کے خلاف اتوار کے روز خیبر4 کے نام سے نئی کارروائی شروع کردی ہے۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے ڈائریکٹر جنرل ،میجر جنرل آصف غفور نے ایک نیوز کانفرنس میں وادی راجگال میں دہشت گردوں کے قلع قمع کے لیے آپریشن شروع کرنے کا اعلان کیا ہے۔اس کے تحت دہشت گردوں کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا جائے گا۔انھوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ اس آپریشن کا ابھی کوئی نظام الاوقات مقرر نہیں کیا گیا ہے۔انھوں نے بتایا کہ فوج نے خیبر4 آپریشن کے آغاز سے قبل افغان فورسز کو آگاہ کردیا ہے اور اگر افغان آرمی سرحد کے اپنی جانب اس کارروائی میں معاونت کرنا چاہتی ہے تو وہ ایسا کرسکتی ہے ۔پاک فوج کے ترجمان نے مزید کہا کہ ملک میں کسی اور فوج کے بوٹ نہیں ہوں گے اور تمام کارروائیاں پاکستانی سکیورٹی فورسز کررہی ہیں۔اگر افغان قیادت دہشت گردوں کے خاتمے کیلیے معاون کارروائیوں کی خواہاں ہے،تو کابل کے ساتھ معلومات کا تبادلہ کیا جائے گا۔انھوں نے کہا کہ آپریشن ردّ الفساد کے تحت ہم اپنی سرحدوں کو مضبوط بنائیں گے۔ہم دہشت گردوں کی سرحد پار نقل وحرکت پر بھی نظر رکھیں گے اور اس سلسلے میں ہمارے افغانستان کے ساتھ رابطے جاری ہیں۔انھوں نے مزید بتایا کہ افغانستان اور ایران کے ساتھ سرحد پر باڑ لگائی جارہی ہے اور ہر ڈیڑھ کلومیٹر کے بعد اس پر چوکیاں بنائی جائیں گی اور ان کی نگرانی کی جائے گی۔

ایک نظر اس پر بھی