حاکم دبئی کا الجزائری طالبہ کے نام 10 لائبریریاں قائم کرنے کا اعلان

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 3rd May 2017, 11:51 AM | خلیجی خبریں |

دبئی،2؍مئی(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)متحدہ عرب امارات کے نائب صدر اور حاکم دبئی الشیخ محمد بن راشد آل مکتوم نے افریقی عرب ملک الجزائر سے تعلق رکھنے والی ایک 17 سالہ طالبہ کے نام 10 لائبریریاں قائم کرنے کا حکم دیا ہے۔حاکم دبئی کی طرف سے یہ اعلان الجزائری طالبہ فاطمہ گولام کے شوق مطالعہ اور حصول علم کے سفر کے دوران پیش آنے والی ناگہانی موت پراس کے ساتھ ہمدردی اور غم گساری کے طور پرکیا ہے۔ فاطمہ گولام حاکم دبئی کی جانب سے شروع کیے گئے’عرب ریڈرز چیلنج‘ کے پروگرام میں شرکت کے لیے آ رہی تھیں کہ الجزائر کے دارالحکومت سے 1500 کلو میٹر دور البیض شہر میں ایک المناک ٹریفک حادثے میں اپنے ایک دوسرے ساتھی سمیت انتقال کرگئی۔ فاطمہ کی ناگہانی موت پر پورا الجزائر ہی نہیں بلکہ عرب دنیا بھی سوگوار ہے۔

الشیخ راشد آل مکتوم نے حادثے میں جاں بحق ہونے والی طالبہ کے خاندان اور الجزائری قوم کے نام اپنے تعزیتی پیغام میں گہرے دکھ کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے فاطمہ گولام کے شوق حصو علم کے اعتراف میں اپنی جان کا نذرانہ پیش کرنے پر اس کے نام پر دس لائبریریاں قائم کرنے کا حکم دیا ہے۔خیال رہے کہ متحدہ عرب امارات کینائب صدر، وزیراعظم اور حاکم دبئی الشیخ محمد بن راشد آل مکتوم نے گذشتہ برس ’عرب ریڈرز چیلنج‘ کے عنوان سے ایک نیا پروگرام شروع کیا تھا جس کے تحت عرب ممالک کی سطح پر مطالعے کے شوقین طلباء وطالبات کے درمیان مقابلے کرائے جاتے ہیں۔
 

ایک نظر اس پر بھی

شیخ خلیفہ ایکسلینس ایوارڈ 2018 ۔ تُمبے گروپ کو ملے 4 ایوارڈز

دبئی میں قائم جنوبی کینرا کے معروف کاروباری تُمبے گروپ کو’شیخ خلیفہ ایکسلینس ایوارڈ 2018‘کے تحت جملہ 4ایوارڈز سے نوازا گیا ۔ اس طرح ایک ہی سال میں چار ایوارڈ پانے کا اعزاز اس ایوارڈ کی تاریخ میں پہلی بار تُمبے گروپ کو حاصل ہوا ہے۔

یمن : حوثیوں کے لیے کام کرنے والے ایرانی جاسوس عرب اتحاد کے نشانے پر

یمن میں آئینی حکومت کو سپورٹ کرنے والے عرب اتحاد کے لڑاکا طیاروں نے تعز شہر کے مشرقی حصّے میں جاسوسی کے ایک مرکز کو نشانہ بنایا۔ اس مرکز میں ایرانی ماہرین بھی موجود ہوتے ہیں جو باغی حوثی ملیشیا کے لیے کام کرتے ہیں۔

شاہ سلمان اور صدر السیسی کے درمیان ٹیلیفونک رابطہ

سعودی عرب کے فرمانروا خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود اور مصری صدر عبدالفتاح السیسی کے درمیان ٹیلیفون پر رابطہ ہوا ہے۔ اس موقع پر شاہ سلمان نے مصر کی سلامتی اور استحکام کی خواہش کا اظہار کیا ہے۔