امریکہ کے یروشلم کو اسرائیل کی راجداھانی تسلیم کرنے سے خطہ میں تشدد بڑھنے کا خدشہ :عرب لیگ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 3rd December 2017, 8:09 PM | عالمی خبریں |

قاہرہ،3دسمبر ( ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)عرب لیگ نے کہا ہے کہ امریکہ کے یروشلم کو اسرائیل کے دارالحکومت کے طور پر تسلیم کرنے سے تشدد بڑھنے کا خدشہ ہے۔ عرب لیگ کی ویب سائٹ پر شائع خبر کے مطابق انہوں نے کہاہم آج واضح طور پر یہ کہتے ہیں کہ ایسا کرنا منطقی نہیں ہے۔ اس سے امن و امان کی بجائے بنیاد پرستی اور تشدد بڑھے گی۔انہوں نے کہاکہ اس سے صرف ایک فریق کو فائدہ پہنچے گا۔ اسرائیل حکومت امن مخالف ہے۔امریکی انتظامیہ کے افسر کے اگلے ہفتے امریکی صدر ٹرمپ طرف ایسے اعلان کے امکان کے ایک دن بعد عرب لیگ نے سیکرٹری جنرل احمد ابو غیاث کا یہ بیان سامنے آیا ہے۔غور طلب ہے کہ فلسطینی لوگ یروشلم کو اپنی ممکنہ راجدھانی کے طور پر دیکھتے ہیں۔ بین الاقوامی برادری یہودیوں، مسلمانوں اور عیسائیت کے مقدس پورے یروشلم پر اسرائیل کے دعوے کو تسلیم نہیں کرتی۔مسٹر ٹرمپ کا یہ اعلان سابق امریکی صدور کی پالیسی سے مختلف ہو گی۔سابق امریکی صدور نے یروشلم کے مسئلے کو باہمی بات چیت سے حل کرنے کے حق میں تھے. مسٹر ٹرمپ کے اس اعلان سے فلسطینی اور خلیج ممالک میں ناراضگی بڑھ سکتی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

کرد ملیشیا کی عفرین میں ترکی کے خلاف اسدی فوج سے معاہدے کی تردید

شام کے علاقے عفرین میں ترک فوج کا مقابلہ کرنے والی کردملیشیا ’کرد پروٹیکشن یونٹ‘ کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں ان خبروں کی سختی سے تردید کی ہے جن میں دعویٰ کیا گیا تھا کہ کرد ملیشیا نے ترکی کا مقابلہ کرنے کے لیے اسدی فوج کے ساتھ ساز باز کرلیا ہے۔