بنگلور میں 8 ڈسمبر کو ہورہا ہے APCR کا ریاستی ورک شاپ؛ سابق چیف جسٹس آف انڈیا سمیت اہم قانونی ماہرین ہوں گے شریک

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 5th December 2018, 9:23 PM | ریاستی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے | ساحلی خبریں |

بنگلور 5/ڈسمبر (ایس او نیوز)اسوسی ایشن فور پروٹیکشن آف سیول رائٹس (APCR) کرناٹک شاخ کی جانب سے  مورخہ 8 ڈسمبر بروز سنیچر کو  بنگلور کے IAT اڈیٹوریم، کوئنس روڈ میں ریاست بھر کے سبھی APCR ممبران کے لئے   ایک ورک شاپ کا انعقاد کیا گیا ہے جس میں  اہم ماہرین قانون شریک ہوں گے۔ اس بات کی اطلاع  APCR کے ریاستی جنرل سکریٹری ایڈوکیٹ نیاز احمد نے دی ہے۔

پریس ریلیز جاری کرتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ صبح 10:30  بجے سے شام پانچ بجے تک چلنے والے اس ورکشاپ کی صدارت ممبئی ہائی کورٹ کے سنئیر کونسل اور APCR کے نیشنل صدر ایڈوکیٹ یوسف مچھالا کریں گے۔جبکہ سابق کرناٹکا   ہائی کورٹ کے پبلک پروسیکوٹر بی ٹی وینکٹیش  کلیدی خطاب فرمائیں گے۔ ریاست کے مختلف اضلاع سے تشریف فرما  APCR کے  ممبران کو قانون کی مکمل جانکاری فراہم کرنے کے لئے نیشنل لاء اسکول آف انڈیا یونیورسٹی، بنگلور کے اسسٹنٹ پروفیسر کُنال امبسٹا  کی خدمات بھی حاصل کی گئی ہے، جو اس ورکشاپ میں  خصوصی لیکچر  دیں گے۔

اس موقع پرسابق چیف جسٹس آف انڈیا جناب ایم این  وینکٹ چلّیا کے ہاتھوں  APCR کی سونئیر  ریلیز کی جائے گی۔ جماعت اسلامی ہند (کرناٹک) کے سکریٹری مولانا محمد یوسف کُنہی صاحب پروگرام میں نگراں کار کی حیثیت سے شریک ہوں گے۔

ورک شاپ کو بہترین اور منظم انداز میں  آرگنائز کرنے کے لئے  APCR کے ریاستی صدر ایڈوکیٹ  سعدالدین ایم صالح  سمیت ریاستی ایکزی کوٹیو کے سبھی ممبران  اپنے اپنے طور پر کوششوں میں لگے ہوئے ہیں۔اس تعلق سے  بنگلور میں میٹنگوں  کا سلسلہ بھی جاری ہے۔

پریس ریلیز میں بتایا گیا ہے ریاست کے ہر اضلاع سے اے پی سی آر کے کم از کم پانچ سے دس اراکین شریک ہونے کی توقع ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

آئی ایم اے کیس کی ایس آئی ٹی جانچ تقریباً مکمل، 9ستمبر کو چارج شیٹ ممکن

کروڑوں روپے کے آئی ایم اے فراڈ کیس کی جانچ میں لگی ریاستی پولیس کی خصوصی تحقیقاتی ٹیم(ایس آئی ٹی) اس معاملے میں 9ستمبر کو چارج شیٹ دائر کرنے کی تیاری میں لگی ہے تو دوسری طرف اس کیس کی جانچ ابھی ابھی اپنے ماتحت لینے والی مرکزی تحقیقاتی ایجنسی سی بی آئی کی طرف سے اس کیس میں ایک سابق ...

ایڈی یورپا کو پارٹی ہائی کمان کی تنبیہ۔ وزارتی قلمدان تقسیم کرو یا پھر اسمبلی تحلیل کرو

عتبر ذرائع سے ملنے والی خبر کے مطابق بی جے پی ہائی کمان نے وزیراعلیٰ کرناٹکا ایڈی یورپا کو تنبیہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ وزارتی قملدانوں سے متعلق الجھن اور وزارت سے محروم اراکین اسمبلی کے خلفشار کو جلد سے جلد دور کرلیں ورنہ پھر اسمبلی کو تحلیل کرتے ہوئے از سرِ نو انتخابات کا سامنا ...

اے پی سی آر نے داخل کی انسداددہشت گردی قانون میں ترمیم کے خلاف سپریم کورٹ میں اپیل

مرکزی حکومت نے انسداد دہشت گردی قانون یو اے پی اے میں جو حالیہ ترمیم کی ہے اور کسی بھی فرد کو محض شبہات کی بنیاد پر دہشت گرد قرار دینے کے لئے تحقیقاتی ایجنسیوں کو جو کھلی چھوٹ دی ہے اسے چیلنج کرتے ہوئے ایسوسی ایشن فار  پروٹیکشن آف سوِل رائٹس (اے پی سی آر) نے سپریم کورٹ میں اپیل ...

ملپے میں پاکستانی دہشت گرد موجود ہونے کی خبر۔سوشیل میڈیا پرہوئی وائرل۔ کوسٹ گارڈ پولیس نے کی وضاحت

سوشیل میڈیا اور کچھ الیکٹرانک میڈیا پر آج یہ خبر وائرل ہوئی ہے کہ بندرگاہی شہر ملپے میں ایک پاکستانی دہشت گرد موجود ہے جو تملناڈو سے فرار ہوکر یہاں کسی مقام پر چھپ گیا ہے۔

منگلورو میں جعلی دستاویزات کے ذریعے بینکوں اورگاڑیوں کے مالکان کو دھوکہ دینے والی4رکنی ٹولی گرفتار

منگلورو سٹی نارتھ کے اسپیشل کرائم ویجیلنس اسکواڈ اور اکنامک اینڈ نارکوٹک کرائم سے وابستہ پولیس افسران نے جعلی دستاویزات کے ذریعے بینکوں اور موٹر گاڑیوں کے مالکان کو لوٹنے والی چار رکنی ٹولی کو گرفتا ر کرلیا ہے۔

منگلورو میں کولشیکر کے قریب ریلوے پٹری پر زمین کھسک گئی؛ مینگلور سے گوا اورممبئی جانے والی ٹرین سروس متاثر؛ کئی ٹرینیں رد

تعلقہ کے کُولشیکر کے قریب پہاڑی  زمین کھسکنے  سے ریلوے ٹریک پر بہت ہی زیادہ مٹی اور کیچڑ کا ڈھیر لگ گیا  جس  کے نتیجے میں منگلورو اور اس روٹ پر آگے کی طرف جانے اور منگلورو کی طرف سے گوا اور ممبئی کی طرف چلنے والی ٹرین سروس متاثر ہوگئی۔  واردات جمعہ کو پیش آئی ہے۔

بھٹکل تعلقہ کے دوپنچایتوں کے جھگڑےمیں  مٹدہتلو اور مرڈیشور کا راستہ یتیم : عوامی نمائندوں پر عوام کی نظر

بھٹکل تعلقہ مرڈیشور کے ماولی -2 اور کائی کنی گرام پنچایتوں کی سرحد کی پیچیدگیوں چلتے مٹدہتلو اور مرڈیشور کے درمیان والی سڑک کا ایک ٹکڑا  یتیم ہوکر راہ گیروں اور بائک سواروں کے لئے مشکلات پیدا کئے ہوئے ہے۔