امسال سے چوتھی تا ساتویں جماعت پبلک امتحان ہوگا: تنویر سیٹھ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 14th July 2017, 3:44 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،13؍ جولائی(ایس او نیوز) ریاستی وزیر برائے بنیادی وثانوی تعلیمات تنویر سیٹھ نے کہاکہ چوتھی سے ساتویں جماعت تک کے طلبا کی تعلیمی صلاحیتوں کو بہتر بنانے اور معیار تعلیم کو بلند کرنے کیلئے ان کو سالانہ پبلک امتحان کروانے پر سنجیدگی سے غور کیاجارہا ہے۔آج ایس ایس ایل سی سپلیمنٹری امتحان کے نتائج کا اعلان کرتے ہوئے انہوں نے بتایاکہ حال ہی میں رام نگرم میں بچوں کی تعلیمی صلاحیتوں کی جانچ کی گئی، جس میں بہت سارے بچے کامیاب نہیں ہوپائے اور یہ بات سامنے آئی کہ ان بچوں کا معیار تعلیم بہت ہی گھٹیا ہے، اسی مقصد کے تحت ریاستی حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ چوتھی سے ساتویں جماعت اب پبلک امتحان لیا جائیگا۔ رواں سال ہی پبلک امتحان کیلئے چوتھی جماعت کو شامل کیا جاچکا ہے۔اس امتحان میں اگر بچے ناکام رہے تو انہیں مناسب تربیت سے آراستہ کرکے سپلیمنٹری امتحان میں کامیاب بنایا جائے گا۔ انہوں نے کہاکہ اس امتحان میں لکھے جانے والے پرچوں کی جانچ متعلقہ بی ای او زون میں آنے والے مختلف اسکولوں کے اساتذہ کے ذریعہ اسکول بدل کر کروائی جائے گی۔ انہوں نے بتایاکہ شمالی کرناٹک میں اسکولوں کے معیار کو بلند کرنے کیلئے سائنس اور میتھس کے دس ہزار اساتذہ کا تقرر کیاجارہا ہے۔ 6826 اساتذہ کو خاص طور پر حیدرآباد کرناٹک کے علاقوں میں متعین کیاجائے گا اور باقی اساتذہ ریاست بھر میں خدمات انجام دیں گے۔ اساتذہ کے تبادلوں کے متعلق سیٹھ نے بتایاکہ امسال تبادلوں کے ضوابط میں ترمیم لائی گئی ہے، اور نئی ترمیمات کے مطابق 22 دنوں تک کونسلنگ کے ذریعہ تبادلے مکمل کرلئے جائیں گے۔ وزیر موصوف نے بتایاکہ مرکزی یونیورسٹیوں اور مرکزی نصاب کے تحت تعلیم دینے والے اسکولوں سمیت تمام انگریزی اسکولوں میں کنڑا کی تعلیم لازمی قرار دی جاچکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ان تمام اسکولوں میں کنڑا کو ایک سبجکٹ کے طور پر پڑھانا لازمی ہوگا۔اسی طرح تمام کنڑا اسکولوں میں انگریزی کو ایک سبجکٹ کے طور پر سکھانا لازمی قرار دیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ اگر کسی اسکول نے کنڑا سکھانے سے انکار کیا تو آئندہ سال اسے اسکول چلانے کی منظوری نہیں دی جائے گی۔ سرکاری اسکولوں اور کالجوں میں ایک موضوع کے طور پر انگریزی سکھائی جائے گی، انہوں نے کہاکہ حق تعلیم قانون کے تحت کوئی اسکول اگر داخلے سے انکار کرے تو ان اسکولوں کی منظوری اسی وقت رد کردی جائے گی۔ ایس ایس ایل سی امتحان میں صد فیصد ناکامی حاصل کرنے والے اسکولوں کو نوٹس جاری کی جاچکی ہے، جن اسکولوں میں بنیادی سہولیات دستیاب نہ ہوں ان کی منظوری بھی رد کی جاچکی ہے۔وزیر موصوف نے بتایاکہ آر ٹی ای سے متعلق شکایات کے اندراج کیلئے محکمۂ تعلیمات میں ایک الگ شعبہ قائم کیاجاچکا ہے۔ 

ایک نظر اس پر بھی

4مارچ کو سدارامیا کے ہاتھوں چرچ اسٹریٹ کاافتتاح ’10پارکنگ بے‘ کی تعمیرپربی بی ایم پی کا غور،گاڑیوں سے فری زون بنانے مقامی لوگوں کا مطالبہ

چرچ اسٹریٹ میں تعمیری کام گزشتہ 22؍فروری 2017سے چل رہا ہے ۔چونکہ کام میں کافی تاخیر ہوگئی جس کی وجہ سے یہاں کے کاروباریوں کو کافی پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑا مگر اب کام آخری مرحلہ میں ہے ۔

جے ڈی ایس صدر پی جی آر سندھیا نے سدرامیا پر لگایا اقتدار کے نشہ میں چور ہونے کا الزام

جنتادل (ایس) کے قومی کارگذار صدر پی جی آر سندھیا نے کہاکہ وزیر اعلیٰ سدرامیا اقتدار کے نشہ میں چور ہوچکے ہیں اسی لئے انہیں کسی کی عزت واحترام اور مرتبہ کی پرواہ نہیں ہے، ایک بار اقتدار کا نشہ اتر جائے تو وہ راہ راست پر آجائیں گے۔

کرناٹک ریلی میں وزیراعظم مودی پر راہول گاندھی نے سادھا نشانہ؛ پوچھا آپ کی ناک کے نیچے سے کیسے چلا گیا PNB کا پیسہ

 پنجاب نیشنل بینک (PNB)  گھوٹالہ معاملے میں سخت کارروائی کے وزیر اعظم نریندر مودی کے بیان کو مسترد کرتے ہوئے کانگریس صدر راہل گاندھی نے سنیچر کو ان سے پوچھا کہ پہلے یہ بتائیں کہ اتنی بڑی رقم  ان کی ناک کے نیچے سے کس طرح بینکوں سے لے جایا گیا ؟