ایم پی فنڈ کا مکمل استعمال نہ کرنے والوں میں اننت کمار ہیگڈے کا ۹واں نمبر

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 9th March 2019, 7:33 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

کاروار9؍مارچ (ایس او نیوز) پارلیمانی انتخابات بالکل قریب آ گئے ہیں اور اس پس منظر میں اراکین پارلیمان نے اپنے حلقوں کے لئے جاری کیے گئے فنڈز کا استعمال کس حد تک کیا ہے اور کتنا فنڈ استعمال کیے بغیر یوں ہی بیکار چھوڑ دیا ہے ا س کی تفصیلات عام کی گئی ہیں۔ 

ان اعداد وشمار پر نظر ڈالنے سے پتہ چلتا ہے کہ جن اراکین پارلیمان نے اپنے حلقے کی ترقی کے لئے  مختص فنڈ ز کو پوری طرح استعمال نہیں کیا ان کی فہرست میں کینرا حلقے کے رکن پارلیمان اور موجودہ مرکزی وزیر اننت کمار ہیگڈے کا نمبر ۹ واں ہے۔ موصولہ تفصیلات کے مطابق سولہویں لوک سبھا میعاد 2014-19 کے دوران کینرا حلقے کی ترقی کے لئے جو رقم ایم پی فنڈ کے طور پر جاری کی گئی تھی وہ 15کروڑ روپے تھی۔ اننت کمار ہیگڈے نے اس میں سے11.47کروڑ روپوں کا استعمال کیااور3.75کروڑ روپے بغیر خرچ کیے یوں ہی چھوڑ دئے ہیں۔ اسی طرح سابقہ میعاد میں اننت کمار ہیگڈے نے انہیں ملنے والے فنڈ سے 4.85کروڑ روپے خرچ کیے بغیر چھوڑ دئے تھے۔

بتایاجاتا ہے کہ پارلیمان کی اس میعاد میں تمام اراکین کے لئے جملہ 559.10کروڑ روپوں کا فنڈ مختص کیا گیا تھا۔ اس میں سے کُل 474.32 کروڑروپے اراکین پارلیمان نے اپنے اپنے حلقوں میں خرچ کیے اور جملہ 84.77کروڑ روپے بے مصرف پڑے رہ گئے۔یعنی تمام اراکین پارلیمان نے من جملہ دستیاب فنڈ کا 87.43% حصہ ہی استعمال کیا ہے۔
 

ایک نظر اس پر بھی

اگر آپ عزت دار ماہی گیر ہیں تو آننت کمار ہیگڈے کو ہرگز ووٹ نہ دیں؛ بھٹکل میں ماہی گیروں سے پرمود مدھوراج کی اپیل

اگر آپ عزت دار ماہی گیر ہیں تو  آپ کو چاہئے کہ  ماہی گیروں کی پرواہ نہ کرنے والے بی جے پی اُمیدوار آننت کمار ہیگڈے  کو ہرگز ووٹ  نہ دیں۔ ملپے سے نکلی سات ماہی گیروں پر مشتمل بوٹ لاپتہ ہوکر  پانچ ماہ ہوچکے ہیں مگر مرکزی وزیر آننت کمار ہیگڈے کو ماہی گیروں کی پرواہ ہی نہیں ہے۔ ...

منگلورو میں ایک عجیب سانحہ۔بوتھ کے آخری ووٹر نے ووٹ دینے کے بعد لی آخری سانس

پاجیرو گاؤں کے پانیلا میں ایک شخص نے پولنگ بوتھ میں اپنا ووٹ ڈالنے کے بعد گھر لوٹتے ہی دم توڑ دیا۔پانیلا کے رہنے والے والٹر ڈیسوزا(۴۰سال) گردے کی بیماری میں مبتلا تھاجس کے لئے وہ بہت عرصے سے زیرعلاج تھا۔

دو مراحل میں ایس پی۔بی ایس پی اور کانگریس ’ صفر‘: یوگی

اتر پردیش کے وزیر یوگی آدتیہ ناتھ نے جمعہ کو کہا کہ لوک سبھا انتخابات کے لئے ووٹنگ کے اختتام پذیر ہو چکے دو مراحل میں ایس پی، بی ایس پی اور کانگریس ’ صفر‘ رہی ہیں۔ یوگی نے سنبھل میں ایک جلسہ عام میں کہا کہ ووٹنگ کے دو مرحلے ہو چکے ہیں۔ بی جے پی کو سب سے زیادہ ووٹ ملے ہیں۔ انہوں نے ...

لوک سبھا انتخابات: کیا اُترکنڑا میں انکم ٹیکس کے مزید چھاپے پڑنے والے ہیں؟

پارلیمانی الیکشن کے پس منظر میں محکمہ انکم ٹیکس اور انتخابی نگراں اسکواڈ کی طرف سے مختلف ٹھکانوں پر جو چھاپے مارے جارہے ہیں، اس تعلق سے خبر ملی ہے کہ ضلع شمالی کینرا میں مزیدکئی سیاسی لیڈروں اورتاجروں کے ٹھکانوں پر چھاپے پڑنے والے ہیں۔