ایم پی فنڈ کا مکمل استعمال نہ کرنے والوں میں اننت کمار ہیگڈے کا ۹واں نمبر

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 9th March 2019, 7:33 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

کاروار9؍مارچ (ایس او نیوز) پارلیمانی انتخابات بالکل قریب آ گئے ہیں اور اس پس منظر میں اراکین پارلیمان نے اپنے حلقوں کے لئے جاری کیے گئے فنڈز کا استعمال کس حد تک کیا ہے اور کتنا فنڈ استعمال کیے بغیر یوں ہی بیکار چھوڑ دیا ہے ا س کی تفصیلات عام کی گئی ہیں۔ 

ان اعداد وشمار پر نظر ڈالنے سے پتہ چلتا ہے کہ جن اراکین پارلیمان نے اپنے حلقے کی ترقی کے لئے  مختص فنڈ ز کو پوری طرح استعمال نہیں کیا ان کی فہرست میں کینرا حلقے کے رکن پارلیمان اور موجودہ مرکزی وزیر اننت کمار ہیگڈے کا نمبر ۹ واں ہے۔ موصولہ تفصیلات کے مطابق سولہویں لوک سبھا میعاد 2014-19 کے دوران کینرا حلقے کی ترقی کے لئے جو رقم ایم پی فنڈ کے طور پر جاری کی گئی تھی وہ 15کروڑ روپے تھی۔ اننت کمار ہیگڈے نے اس میں سے11.47کروڑ روپوں کا استعمال کیااور3.75کروڑ روپے بغیر خرچ کیے یوں ہی چھوڑ دئے ہیں۔ اسی طرح سابقہ میعاد میں اننت کمار ہیگڈے نے انہیں ملنے والے فنڈ سے 4.85کروڑ روپے خرچ کیے بغیر چھوڑ دئے تھے۔

بتایاجاتا ہے کہ پارلیمان کی اس میعاد میں تمام اراکین کے لئے جملہ 559.10کروڑ روپوں کا فنڈ مختص کیا گیا تھا۔ اس میں سے کُل 474.32 کروڑروپے اراکین پارلیمان نے اپنے اپنے حلقوں میں خرچ کیے اور جملہ 84.77کروڑ روپے بے مصرف پڑے رہ گئے۔یعنی تمام اراکین پارلیمان نے من جملہ دستیاب فنڈ کا 87.43% حصہ ہی استعمال کیا ہے۔
 

ایک نظر اس پر بھی

مینگلور: مُلکی پولیس نے کیا بین الریاستی چوروں کو گرفتار۔40لاکھ روپے مالیت کا مسروقہ مال ہوا بر آمد

مُلکی   پولیس اسٹیشن سے وابستہ پولیس افسران نے ایک بین الریاستی چوروں کی ٹولی سے تعلق رکھنے والے دو ملزمین کوگرفتار کرنے کے بعدان کے قبضے سے 40لاکھ روپے مالیت کا مسروقہ مال برآمد کیا ہے۔پولیس کا کہنا ہے کہ اس ٹولی کے دیگر2دیگر اراکین بھاگ نکلنے میں کامیاب ہوگئے۔

’ڈرائیوروں کے لئے آٹھویں تک کی تعلیم ہونے کی شرط ختم‘

 روڈٹرانسپورٹ اور شاہراہوں کے وزیر نتن گڈکری نے کہاکہ ملک میں کم تعلیم یافتہ لوگوں کو روزگار کے مواقع دستیاب کرانے کے لئے ڈرائیوروں کے لئے آٹھویں تک کی تعلیم کی کم از کم تعلیمی اہلیت کی لازمیت کو ختم کردیا گیا ہے۔

نچلی عدالت نے چار ملزمین کو عمر قید اور ایک ملزم کو باعزت بری کیا، جمعیۃ علماء نچلی عدالت کے فیصلہ کو ہائی کورٹ میں چیلنج کرے گی:گلزاراعظمی

14 سالوں کے طویل انتظار کے بعدآج الہ آباد کی خصوصی عدالت نے رام جنم بھومی (ایودھیا دہشت گردانہ حملہ) معاملے میں اپنا فیصلہ سنایا اور پانچ میں سے ایک جانب جہاں چار ملزمین کو عمر قید کی سزا دی وہیں ناکافی ثبوت وشواہد کی بنیاد پر ایک ملزم کو باعزت بری کردیا۔