شام میں مزید فوجی اڈوں کے قیام کے ایرانی منصوبے کا انکشاف

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 17th July 2017, 12:03 PM | خلیجی خبریں | عالمی خبریں |

دبئی،16جولائی(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)ذرائع ابلاغ نے انکشاف کیا ہے کہ ایرانی حکومت شام میں اپنے جنگجوؤں اور فوجیوں کی تعداد بڑھانے کے لیے وہاں پر مزید فوجی اڈوں کے قیام کے لیے کوشاں ہے۔اخبارالشرق الاوسط نے اپنی رپورٹ میں اسرائیلی ذرائع ابلاغ کے حوالے سے اطلاع دی ہے کہ ایرانی عسکری انتظامیہ نے شام میں اسد رجیم سے ایک فوجی اڈا حاصل کیا ہے۔ اس کے علاوہ ایرانی حکومت وسطی شام میں ایک بری فضائی اڈے کے حصول کے لیے دمشق سے بات چیت کررہی ہے۔ اس مجوزہ فوجی اڈے پر ایران کی حمایت یافتہ ملیشیاؤں کے جنگجوؤں کو تعینات کیا جائے گا۔اسرائیل کے عسکری ذرائع کا کہنا ہے کہ وسطی شام میں قائم کردہ فوجی اور ہوائی اڈوں میں پاکستان، افغانستان سے لائے گئے اجرتی قاتلوں اور پاسداران انقلاب کے اہلکاروں سمیت پانچ ہزار جنگجوؤں کو تعینات کیا جائے گا جو کسی بھی ہنگامی حالت میں بشارالاسد کے دفاع میں لڑائی میں حصہ لیں گے۔مغربی ذرائع ابلاغ کے مطابق ایران طرطوس بندرگاہ کے حصول کے لیے بھی کوشاں ہے تاکہ اسے ایک بحریہ کے اڈے کے طورپر استعمال کیا جاسکے۔مبصرین کا کہنا ہے کہ تہران دمشق کے ساتھ عسکری تعاون کے ساتھ ساتھ شام میں اپنے مستقل اڈوں کے قیام کے لیے کوشاں رہا ہے۔ شام میں حکومت کے خلاف شروع ہونے والی بغاوت کی تحریک کے آغاز ہی سے ایران نے اپنے عسکری مشیر دمشق روانہ کردیے تھے۔ اس کے بعد باغیوں کی تحریک کچلنے کے لیے ایران اور بشارالاسد حکومت کے درمیان مادی، معنوی، لاجسٹک اور عسکری تعاون میں اضافہ ہوتا رہا ہے۔ یہاں تک کہ ایران نے پاکستان، افغانستان اور دوسرے ملکوں سے اجرتی قاتل بھرتی کرکے شام بھیجنے شروع کیے۔ لبنانی شیعہ ملیشیا حزب اللہ کو دمشق کیدفاع میں استعمال کیا گیا۔ اسرائیلی ذرائع ابلاغ کے مطابق صرف حزب اللہ شام کی جنگ میں جھونکے اپنے جنگجوؤں پر سالانہ 800 ملین ڈالر کی رقم خرچ کرتی رہی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

مصر اور سعودی عرب کی مشترکہ فضائی مشقیں جاری

سعودی عرب اور مصرکی فضائیہ پر مشتمل فوجی مشقیں ’فیصل 11‘ جاری ہیں۔ گذشتہ روز مصری فوج کے ترجمان کرنل تامر الرفاعی نے ایک ویڈیو جاری کی جس میں دونوں ملکوں کے فضائیہ پر مشتمل مشقوں ’فیصل 11‘ کی تفصیلات جاری کی گئی تھیں۔

شاہ سلمان کا روہنگیا مہاجرین کے لیے 1.5 کروڑ ڈالر کا اعلان

سعودی شاہی دفتر کے مشیر اور کنگ سلمان سینٹر فار ہیومنیٹیرین ایڈ اینڈ ریسکیو کے نگرانِ عام ڈاکٹر عبدالعزیز الربیعہ نے بتایا ہے کہ سعودی فرماں روا شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے مرکز کو 1.5 کروڑ امریکی ڈالر مختص کرنے کی ہدایت کی ہے

سعودی عرب اور برطانیہ کے درمیان دفاعی شعبے میں تعاون کا سمجھوتا

سعودی عرب اور برطانیہ کے درمیان دفاعی شعبے میں تعاون کا ایک سمجھوتا طے پا گیا ہے۔سعودی ولی عہد اور وزیر دفاع شہزادہ محمد بن سلمان اور برطانوی وزیر دفاع مائیکل فالن نے جدہ میں ملاقات کے دوران فوجی اور سکیورٹی کے شعبے میں دوطرفہ تعاون سے متعلق اس سمجھوتے پر دستخط کیے ہیں۔

قوم ِ نوائط کے سپوت سید خلیل الرحمن متحدہ عرب امارات کے 100فطین شخصیات میں شامل :عربین بزنس میگزین کی رپورٹ

اپنی برق رفتار ترقی، بلند و بالا عمارات اور خیرہ اندوزی سے عالم کو حیرت زدہ کرنےو الے خلیجی ممالک کی دلہن نگری دبئی سے انگریزی اور عربی زبان میں شائع ہونے والی ہفتہ وار میگزین ’’عربین بزنس ‘‘کےخصوصی شمار ے ’’100 اسما رٹسٹ پیوپل اِن دی یو اےا ی ‘‘میں قومی و بین الاقوامی سطح ...