اقلیتی فلاح و بہبودی کے منصوبوں اور اسکیموں کے تعلق سے ذمہ داران کو آگاہ کرنے بھٹکل تنظیم میں منعقد ہوا اہم پروگرام

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 25th July 2018, 9:17 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بھٹکل :25/جولائی (ایس اؤ نیوز) حکومتیں اقلیتوں کی ترقی ، فلاح وبہبودی کےلئے مختلف منصوبے اور اسکیمیں جاری کرتی ہیں، مگران منصوبوں اور اسکیموں کے متعلق صحیح جانکاری نہ  ہونےکی وجہ سے عوام  خاطرخواہ استفادہ نہیں کرپارہےہیں ، انہی وجوہات کی بنا پر عوام میں اقلیتی منصوبہ جات کے متعلق بیداری پیدا کرنےکے لئے آج یہاں کے قومی و سماجی دارہ مجلس اصلاح و تنظیم میں  پروگرام منعقد کیا گیا ہے۔ عوام الناس کو چاہئے کہ وہ ان اسکیموں سے فائدہ اُٹھائیں ان باتوں کا اظہار بھٹکل اسسٹنٹ کمشنر ساجد ملا نے کیا۔

وہ یہاں بدھ کی صبح مجلس اصلاح وتنظیم بھٹکل اور محکمہ اقلیتی فلاح وبہبودی کے اشتراک سے تنظیم ہال میں منعقدہ سرکاری اسکیموں کے متعلق عوامی بیداری پروگرا م میں مہمان ِ خصوصی کی حیثیت سے خطاب کررہے تھے۔  اقلیتی محکمہ کے مختلف منصوبوں اور اسکیموں کے معلوماتی کتابچہ کا اجراء کرنے کے بعد ساجد ملا نےکہاکہ دیگر مقامات کے مقابلے میں  بھٹکل کااقلیتی طبقہ تعلیم یافتہ ہے ، انہوں نے اقلیتوں پر زور دیا کہ وہ  حکومتی منصوبہ جات سے استفادے کی طرف توجہ دے کر دیگر مقامات کے لئے بھی مثال بنے۔ انہوں نے پروگرام میں شریک  مختلف سنٹروں اورجماعتوں کے ذمہ داران سے درخواست کی کہ وہ یہاں دی جانے والی جانکاری کو عوام تک پہنچائیں۔

تحصیلدار وی این باڈکر نے اس موقع پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ اقلیتی محکمہ کے جتنےبھی منصوبے اور اسکیمیں ہیں بھٹکل تعلقہ میں ان کے نتیجہ خیز نفاذ میں یہاں کے نوجوان  اہم رول ادا کرسکتے ہیں۔  وہ متحرک و سرگرم ہوکر اس سلسلےمیں کام کریں تو عوام کوکافی فائدہ پہنچے گا۔انہوں نے بتایا کہ بھٹکل میں میٹرک کے بعد اعلیٰ تعلیم کے لئے  اقلیتی طلبا کو ہاسٹل کی سہولت فراہم کرنے کے لئے قریب 9گنٹہ زمین منظور کی گئی ہے۔انہوں نے ہاسٹل کی تعمیر میں اقلیتی طبقہ کے نمائندوں سے تعاون کی اپیل کی۔

محکمہ اقلیتی فلاح و بہبودی کے تعلقہ آفیسر شمش الدین نے محکمہ کے منصوبوں اور اسکیموں کے متعلق جانکاری دیتے ہوئے استفادہ کی صورت میں ضوابط ، اصول ، شرائط وغیرہ پر تفصیل سے روشنی ڈالی۔ انہوں نے محکمہ کی طرف سے خاص کر اقلیتی طلبا کے وظائف ، بیرونی ممالک میں خصوصی تحقیقات ، ریسرچ وغیرہ کے لئے دی جانے والی سہولیات کی جانکاری دی۔ انہوں نے متعلقہ منصوبہ جات کے متعلق عوام کا بھرپور تعاون دینے ،انکی رہنمائی کے لئے ہمیشہ تیار رہنے کی بات  کہتے ہوئے کہاکہ شہرمیں مولانا آزاد ماڈل اسکول کی تعمیر بھی زیر غور ہے۔انہوں نے زور دے کر کہاکہ ضلع کے کسی ایک مقام پر اردو بھون کی بھی تعمیر کا منصوبہ ہے اگر بھٹکل کے  مسلمان اس سلسلے میں کوشش کریں تو کافی فائدہ ہوگا۔  

تنظیم کے نائب صدر عنایت اللہ شاہ بندری نے پروگرام کی  صدارت کی۔ تنظیم کے جنرل سکریٹری محی الدین الطاف کھروری نے استقبال کرتے ہوئے افتتاحی کلمات  پیش کئے ۔ سکریٹری مولانا سید یاسربرماور ندوی نے نظامت کے فرائض انجام دئیے ۔  ڈائس پر بلاک ایجوکیشن آفسر ایم آر منجی، تنظیم کے ذمہ داران فاروق شاہ بندری ، جعفر محتشم، بلدیہ صدر محمد صادق مٹا، جالی گرام پنچایت صدر آدم پنمبور وغیرہ موجود تھے۔ بھٹکل کے ساتھ ساتھ، مرڈیشور، منکی و شراوتی بیلٹ کے کافی ذمہ داران  پروگرام میں شریک تھے۔ دوردراز کے مقامات سے آنے والوں کے لئے تنظیم کی جانب سے دوپہر کی ضیافت کا بہترین انتظام کیا گیا تھا۔

محکمہ اقلیتی فلاح و بہبودی کے تعلقہ آفسر شمس الدین نے اقلیتوں کے لئے جاری منصوبوں  کے متعلق جو جانکاری دی، اُس کی وڈیو ریکارڈنگ ذیل میں پیش کی جارہی ہے:

 

ایک نظر اس پر بھی

21مارچ سے ایس ایس ایل سی امتحانات : اترکنڑا ضلع میں کل 9766طلبا و طالبات کی سالانہ امتحانات میں شرکت

طلبا کی تعلیمی  زندگی کا پہلا اہم مرحلہ   ایس ایس ایل سی کے سالانہ امتحانات 21مارچ 2019سے 04 اپریل 2019منعقد ہونگے ۔ جس کے لئے اترکنڑا ضلع محکمہ  تعلیمات عامہ پوری طرح تیار رہنے کی  ڈپوٹی ڈائرکٹر کے منجوناتھ نے اطلاع دیتے ہوئے جانکاری دی ہے کہ اترکنڑا تعلیمی ضلع کے 5تعلقہ جات میں ...

اُڈپی : آر ایس ایس مسلمانوں سے زیادہ دلت مخالف ہے: سابق بجرنگ دل لیڈر مہیندر کمار

 آر ایس ایس حقیقت میں  دلت، شودر، مظلوم ، پسماندہ طبقات ، ہندو  اور ملک مخالف ہےوہ  مسلم مخالف نہیں ہے ،کیونکہ  یہ سب صرف نوجوانوں کو غلط راستے پر لے جانےکے لئے انہیں استعمال کرتی ہے۔ اگر اس کو اب نہیں سمجھیں گے تو پھر ایک بار ملکی آزادی کے لئے جدوجہد کی ضرورت پڑے گی۔ سماجی مفکر ...

بھٹکل کے ایک اُردو اسکول کے کمپائونڈ میں خون کے دھبے اور کھڑکی کے ٹوٹے گلاس پائے جانے کے بعد زبردست ہاتھاپائی ہونے کا شبہ

یہاں مدینہ کالونی ، محی الدین اسٹریٹ  میں واقع  اُردو ہائیر پرائمری اسکول  کی دیوار اور صحن پرجابجا  خون کے دھبے سمیت ایک کھڑکی کا شیشہ ٹوٹا ہوا پائے جانے  کے بعد شبہ ظاہر کیا جارہا ہے کہ یہاں رات کو زبردست ہاتھاپائی یا ماردھاڑ کی واردات رونما ہوئی ہے۔ واقعے کے بعد  اسکول کے ...

ضلع شمالی کینرا کا انتخاب۔ منووادی اور غیر منووادیوں کے درمیان مقابلہ ہے؛ سیکولراُمیدوار کو جیت دلانا اہم مقصد ہونا چاہئے؛ سابق وزیر آر این نائک کا بیان

درپیش پارلیمانی انتخابات اور خاص کرکے ضلع شمالی کینرا کی سیٹ کو کانگریس کی طرف سے جنتا دل ایس کو مختص کیے جانے کے بعد سابق وزیر اور کانگریسی لیڈر ایڈوکیٹ آر این نائک نے تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ اس بار ہونے والا انتخاب پارٹیوں کی جیت یا پارلیمان میں امیدواروں کی تعداد بڑھانے والا ...

انڈونیشیا میں سیلاب اور تودے سے مرنے والوں کی تعداد 89 ہوئی

  انڈونیشیا کے مشرقی علاقے پاپوا میں سیلاب اور مٹی کے تودے گرنے سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 89 ہو گئی ہے اور لاپتہ 74 لوگوں کی تلاش کے لئے ریسکیو آپریشن چلایا جا رہا ہے۔ راحت رسانی مہم میں مصروف حکام نے منگل کو یہاں یہ اطلاع دی۔

کرناٹک میں نوٹیفکیشن کے پہلے دن 6؍امیداروں کی نامزدگیاں داخل 

ریاست میں لوک سبھا الیکشن کے پہلے مرحلہ میں 14؍سیٹوں پر 18؍اپریل کو ہونے والے الیکشن کے لئے پرچہ نامزدگی کرنے کا آغاز ہوگیا ۔ پہلے دن چار حلقوں میں6؍ امیدواروں کی جانب سے 11؍ مزدگیاں داخل کئیں۔ یہ اطلاع ریاستی الیکشن افسر سنجیو کمار نے دی۔

بھٹکل کے ایک اُردو اسکول کے کمپائونڈ میں خون کے دھبے اور کھڑکی کے ٹوٹے گلاس پائے جانے کے بعد زبردست ہاتھاپائی ہونے کا شبہ

یہاں مدینہ کالونی ، محی الدین اسٹریٹ  میں واقع  اُردو ہائیر پرائمری اسکول  کی دیوار اور صحن پرجابجا  خون کے دھبے سمیت ایک کھڑکی کا شیشہ ٹوٹا ہوا پائے جانے  کے بعد شبہ ظاہر کیا جارہا ہے کہ یہاں رات کو زبردست ہاتھاپائی یا ماردھاڑ کی واردات رونما ہوئی ہے۔ واقعے کے بعد  اسکول کے ...

اسد الدین اویسی نے حیدرآباد پارلیمانی سیٹ سے پرچہ نامزدگی کیا داخل

لنگانہ میں لوک سبھا انتخابات کے اعلامیہ کی اجرائی کے بعد سب سے پہلے صدر مجلس و رکن پارلیمنٹ حیدرآباد بیرسٹر اسدالدین اویسی نے آج حیدرآباد لوک سبھا  سیٹ سے مجلس کے امیدوار کی حیثیت سے اپنا پرچہ نامزدگی داخل کیا ہے۔

انڈونیشیا میں سیلاب سے 77 لوگوں کی موت، 4000 سے زیادہ لوگوں کو بچانے کی کوشش

انڈونیشیا کے مشرقی علاقہ کے پاپوا صوبے میں سیلاب اور مٹی کے تودے گرنے کے واقعات میں مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 77 ہو گئی ہے۔ ان حادثوں میں 116 زخمی بھی ہوئے ہیں۔  وہیں تقریبا 4000 لوگوں کو بچانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔