امیت شاہ نے کرناٹک الیکشن کوبھی گجرات کارنگ دے دیا،متنازعہ بیان کے ساتھ مہم شروع

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 11th January 2018, 12:42 PM | ریاستی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

چترادرگ،10؍جنوری (ایس او نیوز)مذہبی بنیادوں پر الزامات کے ساتھ ہی بی جے پی کے قومی صدر امیت شاہ نے کرناٹک اسمبلی انتخابات کے لیے بگل بجادیاہے۔انہوں نے الزام لگایا کہ کرناٹک کے وزیراعلی سدارامیا کی حکومت ہندو مخالف ہے۔واضح ہوکہ گجرات الیکشن میں بھی زمین کھسکتی دیکھ کرالیکشن کومذہبی رنگ دے دیاگیاتھااورمتنازعہ بیانات کے سلسلے جاری ہوگئے تھے ۔انہو ں نے چترادرگ میں نواکرناٹک نرمان پریورتن یاترا سے خطاب کرتے ہوئے کہا ’’ سدارامیا حکومت ووٹ بینک کی سیاست میں ملوث ہے ‘ یہ مخالف ہند حکومت ہے جس نے ایس ڈی پی آئی کے خلاف تمام معاملات سے دستبرداری اختیار کی ہے جو مخالف ہند تنظیم ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

امبیڈنٹ گھوٹالہ پر پردہ ڈالنے کی منظم سازش گھپلہ باز وجئے تا تا کو بچانے میں سینئر پولیس افسرملوث :ویدیکے

امبیڈنٹ چٹ فنڈ کمپنی کے گھوٹالہ معاملہ پر پردہ ڈالنے کی منظم کوشش ہورہی ہے ۔ حکومت کرپٹ سیاستدانوں کو بچانے کیلئے امبیڈنٹ سے دھوکہ کھائے متاثرین کے ساتھ ناانصافی کررہی ہے۔

ریاست کرناٹک میں پلاسٹک پر پابندی سے تمام اقتصادی شعبہ جات متاثر

یاست کرناٹک اور خاص طور پر بنگلور شہر میں پلاسٹک پر پابندی کے اقدام کو حکام اور افسران کی طرف سے پوری شدت کے ساتھ نافذ کیا جا رہا ہے اور اس کی وجہ سے پلاسٹک کا کاروبار کرنے والے افراد خاص طورپر بہت ہی زیادہ متاثر ہو رہے ہیں۔

بی جے پی سیاسی فائدہ کی خاطر ایوان میں غیر ضروری معاملے نہ اٹھائے :ضمیر احمد خان وقف بورڈ میں دھاندلیوں کاجائزہ لینے حکومت نے کوئی کمیٹی تشکیل نہیں دی۔مانپاڑی کمیٹی غیر قانونی

ریاستی وزیر برائے امور اقلیت ، اوقاف اور حج بی زیڈ ضمیر احمد خان نے آج ریاستی قانون ساز کونسل میں کہا کہ بشمول شمالی کرناٹک ریاست کی ترقی اور مسائل پر بحث و مباحثہ کے لئے بیلگاوی اسمبلی سیشن منعقد کیا گیا ہے ۔

بے کار پڑا ہے بھٹکل بندر پر پینے کے صاف پانی کا مرکز۔ 12لاکھ روپے کا تخمینہ۔ ادھورا پڑا ہے منصوبہ

بھٹکل تعلقہ کے ماوین کوروے علاقے میں واقع بندرگاہ پر پینے کے صاف پانی کا ایک مرکز 12لاکھ روپے کی لاگت سے تعمیر کرنے کا منصوبہ شروع ہوئے دو سال کا عرصہ گزرچکا ہے۔ ٹھیکے دار کی غفلت اور افسران کے کاہلی کی وجہ سے ابھی تک یہ منصوبہ پورا نہیں ہوا ہے اور عوامی استعمال کے لئے دستیاب ...