بھٹکل انجمن ڈگری کالج اور اردو اکیڈمی بنگلورو کے اشتراک سے شاندار کل ہند مشاعرے کا انعقاد :سنجیدہ اور فکری کلام کی داد تحسین

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 12th February 2018, 10:20 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل:12/ فروری (ایس اؤنیوز)انجمن آرٹس، سائنس اینڈکامرس کالج اینڈ پی جی سنٹر کے زیرا ہتمام اور کرناٹک اردو اکیڈمی بنگلورو کے اشتراک سے 11فروری بروز اتوار کی شب 30-09بجے انجمن اینگلو اردو ہائی اسکول گراؤنڈ میں شاندار’’کل ہند مشاعرہ ‘‘کا افتتاح اپنے وقت کے مشہور قاری ،گلبرگہ یونیورسٹی کے موظف پروفیسر ڈاکٹر عبدالحمید اکبر کی حلاوت و شرینی سے پُر تلاوتِ قرآن مجید سے ہوا۔

بی کام کے متعلم حسن ابن مولانا عبدالعظیم قاضیا ندوی نے ہدیہ نعت پیش کی تو پی یو سی کے طالب علم حسین ابن مولانا عبدالعظیم قاضیا ندوی نے بہترین انداز میں علامہ اقبال کی غزل پیش کی۔ سمینار و مشاعرہ کے کوآرڈینیٹر پروفیسر عبدالرؤوف سونور نے افتتاحی کلمات پیش کرتےہوئے تمام کا استقبال کیا۔ اس کے بعدبنگلورو سے تشریف فرما مشہور ومعروف شاعر ریاض احمد خمارؔ کی نظامت میں باقاعدہ شعر وشاعری کے دورکا آغاز ہوا۔

بھٹکل کے ابھرتے ہوئے شاعر عفان بافقی نے ابتداء میں ہی اپنے کلام سے مشاعرے کا سماں باندھا توعوامی سطح پر نومتعارف سنجیدہ شاعر ابن حسنؔ بھٹکلی نے معیاری و فکری کلام پیش کرتےہوئے سامعین کے دلوں میں اترکر بھرپور داد تحسین حاصل کی۔ بنگلورو سے تشریف لائے عمران اسلم بنارسی ؔ نے حالاتِ حاضرہ پر اپنے قطعات کے ذریعے بہترین تبصرہ پیش کیا اور’’میرے ابو،محبت زمین و آسمان لانا ‘‘نظم پیش کرتے ہوئے حاضرین کے سامنے ملک کی موجودہ صورت حال کو واضح کیا۔ شہر بھٹکل کے بزرگ شاعر اقبالؔ سعیدی نے اپنافکری کلام پیش کیا۔ ان کے بعد ملکی سطح کے مشاعروں میں اپنی شناخت بنانے والے بھٹکل سید سالک ؔبرماور ندوی نے پرسوز ترنم میں معنی خیز کلام پیش کیا۔بھدراوتی کے مسرت پاشا راہی ؔ نے اپنے قطعات و غزل کے علاوہ روہنگیا کے مسلمانوں پر بیتی ظلم و ستم کی داستان کو ’’یقیں نہیں تھا ‘‘کے عنوان پر آزاد نظم پیش کی۔ ممبئی کے کلیم ضیاءؔ نےاپنی شاعری کے ذریعے نئے زاویوں پر روشنی ڈالی۔ شہر بھٹکل کے کہنہ مشق و بزرگ شاعر سید اشرف برماور نے اپنے قطعات و غزل کے ذریعے فکری کلام پیش کیا۔ اس کے بعد ممبئی کے سراج شولاپوری نے طنزیہ و مزاحیہ کلام پیش کیا۔

ناظم مشاعرہ ریاض احمد خمارؔ نے منتخب اشعار، قطعات ،برجستہ و برمحل مختصر جملوں سےبہترین اور خوبصورت انداز میں مشاعرے کی نظامت انجام دیتےہوئے مشاعرے کی کامیابی میں اہم رول اداکیا۔ اور اپنے فکری و بامعنی کلام سے سامعین کو محظوظ کیا۔ گلبرگہ کے ڈاکٹر عبدالحمید اکبر نے مشاعرے کی صدارت کرتے ہوئے ہرایک شاعر کی خوبیوں کا ذکر کرتے ہوئے شاعری کے نکات بیان کئے اور اپنے کلام کو پرترنم آواز میں پیش کیا۔پروفیسر عبدالرؤوف سونور نے شکریہ اداکیا۔ مشاعرے کی مسند پر شعراء کے علاوہ پٹنہ یونیورسٹی کے صدر شعبہ اردو ڈاکٹر سید جاوید حیات ، انجمن حامئی مسلمین بھٹکل کے جنرل سکریٹری صدیق اسماعیل، کالج بورڈ سکریٹری جاوید حسین آرماراور کالج پرنسپال پروفیسر مشتاق احمد شیخ موجود تھے۔ تمام شعراء کی خدمت میں انجمن کالج کی طرف سے میمونٹو پیش کیاگیا۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں راہول گاندھی کا وزیراعظم مودی پر راست حملہ؛ سی بی آئی کا بتایا نیا مفہوم؛ کہا سینٹرل بیورو آف اللیگل مائننگ

وزیراعظم نریندر مودی پر راست نشانہ لگاتے ہوئے کانگریس صدر راہول گاندھی نے بھٹکل میں اپنے انتخابی جلسہ میں کہا کہ   مودی بسونا کی مورتی پر پھول کا ہار پہناتے ہیں  اوربڑی بڑی باتیں بھی کرتے ہیں ، لیکن بسونا نے جو کہا تھا اُس پر عمل نہیں کرتے۔راہول کے مطابق   بسونا نے کہا تھا کہ ...

اترکنڑا ضلع کے 62پرچہ نامزدگیوں میں سے 4مسترد :58قانونی طورپر درست

ریاستی ودھان سبھا انتخابات کے لئے اترکنڑا ضلع کے 6حلقوں سے کل 62امیدواروں نے پرچہ نامزدگی داخل کئے تھے۔افسران کی طرف سے 25اپریل کو نامزدگیوں کی جانچ پڑتال کے بعد ضلع میں کل 4پرچہ نامزدگیوں کومستردکیاگیا بقیہ 58 صحیح قرار دئیے گئے ہیں۔ کاروار میں تین اور ہلیال میں ایک پرچہ ...