ہندی میں خطاب کرنے اب میدان میں اُترے گی ممتا بینرجی؛ کیا ان کا اُترنا وزیراعظم مودی کیلئے خطرے کی گھنٹی تو نہیں ؟

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 29th December 2016, 3:08 PM | ملکی خبریں | اسپیشل رپورٹس |

کولکاتا 28؍دسمبر(ایجنسی) نوٹ بندی کی وجہ سے پیدا شدہ کرنسی بحران کے بعد مرکزی حکومت کے خلاف مورچہ کھولنے والی ممتا بنرجی اب ہندی بیلٹوں میں وزیر اعظم مودی کا مقابلہ کرنے کیلئے کمرکستی ہوئی نظر آرہی ہیں اور اخباری رپورٹوں پر بھروسہ کریں تو ممتا بینرجی اب ہندی زبان پر عبور حاصل کرنے کی کوشش کررہی ہیں ۔

ذرائع سے ملی خبر کے مطابق دارجلنگ میں نیپالی اور مدنی پور میں سنتھالی زبان بول کرعوام کا دل جیتنے والی ممتا بنرجی ہندی بیلٹ میں وزیر اعظم مودی کے خلاف اپنی مہم کوپراثر بنانے کیلئے ہندی زبان پر مکمل عبور حاصل کرنا چاہتی ہیں ۔اگلے عشرے میں ممتا بنرجی کرنسی بحران پر لکھنو اور پٹنہ میں عوامی ریلی سے خطاب کرنے والی ہیں ۔ ترنمول کانگریس کے ذرائع کے مطابق ممتا بنرجی اس کیلئے ایک ہندی ٹیچر کی مدد لے رہی ہیں اور اپنے ساتھ ہندی ۔بنگلہ ڈکشنری بھی ساتھ میں رکھ رہی ہیں ۔سمجھا جارہا ہے کہ اگر ممتا بنرجی ہندی میں عبور حاصل کرتے ہوئے عوامی خطاب کرنے میدان میں اُترئیں گی تو مودی کے لئے خطرے کی گھنٹی ثابت ہوں گی۔

حال ہی میں ممتا بنرجی نے اپنے ایک بیان میں کہا تھا کہ وہ 1984سے دہلی میں رہتے ہوئے آرہی ہیں ۔ممبر پارلیمنٹ ،مرکزی وزیر رہنے کی وجہ سے ہندی بولنا سیکھ لیا تھا مگر 2011میں بنگال کا وزیر اعلیٰ بننے کے بعد ہندی بولنے کی پریکٹس میں کمی آگئی ۔اس کی وجہ سے اُن کی ہندی کمزور ہوگئی۔ ترنمول کانگریس کے ذرائع کے مطابق ممتا بنرجی اپنی شاعری کی کتاب ہندی میں لارہی ہیں ۔اس سے قبل ان کا مجموعہ کلام اردو زبان میں آچکا ہے ۔اس کے علاوہ 2013میں شایع ہونے والی ممتا بنرجی کی سوانح عمری میری سنگھرس پر یاترا کا ہندی ترجمہ بھی ہورہا ہے ۔

ہندی اخبار سن مارگ کے ایڈیٹر و ترنمول کانگریس کے راجیہ سبھا ممبر وویک گپتا ممتا بنرجی کی ہندی تقریر کی تیاری میں تعاون کرتے ہیں ۔16نومبر کو ممتا بنرجی نے ہندی میں ٹویٹ کیا تھا اور اس میں دہلی کے آزاد مارکیٹ میں دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کجریوال کے ساتھ مشترکہ ریلی کا اعلان کیا گیا تھا ۔اس کے بعد انہوں نے اپنی کئی ٹویٹ ہندی میں کرکے وزیر اعظم مودی کی تنقید کی تھی۔ دیگر بنگالی لیڈروں کے مقابلے ممتا بنرجی کی ہندی زبان کی صلاحیت بہتر ہے اور وہ آسانی سے ہندی میں تقریر کرلیتی ہیں او ر وہ اپنی تقریروں میں علامہ اقبال کے اشعار کو بھی پڑھتی ہیں ۔

ایک نظر اس پر بھی

اپریل فول منانا مسلمانوں کو زیب نہیں دیتا! ۔۔۔۔۔ از: ندیم احمد انصاری

مزاح کرنا انسان کے لیے ضروری ہے، یہ ایک ایسی نعمت ہے جس کے ذریعے انسان بہت سے غموں کو بھلا کر تروتازہ محسوس کرتا ہے۔ اسی لیے مزاح کرنا اسلام اور انسانی فطرت میں معیوب نہیں سمجھا گیا، البتہ مزاح کے طریقوں پر ضرور غور کرلینا چاہیے۔

ہندوستانی فوجی جنرل نے جمہوری لائن آف کنٹرول کو پھلانگ دیا .... تحریر: مولانا محمد برہان الدین قاسمی

ہندوستانی افواج کے سربراہ جنرل بپن راوت نے سیاسی جماعتوں پر تبصرہ کر کے ۲۱ فروری، بروز بدھ ملک میں ایک غیر ضروری طوفان برپا کر دیا۔ مولانا بدرالدین اجمل کی نگرانی میں چلنے والی آل انڈیا یونائیٹیڈ ڈیموکریٹک فرنٹ آسام کی ایک مقبول سیاسی جماعت ہے۔ جنرل بپن راوت نے دعوی کیاہے کہ ...

اسلام میں عورت کے حقوق ...............آز: گل افشاں تحسین

صدیوں سے انسانی سماج اور معاشرہ میں عورت کے مقام ومرتبہ کو لیکر گفتگو ہوتی آئی ہے ان کے حقوق کے نام پر بحثیں ہوتی آئی ہیں لیکن گذشتہ چند دہائیوں سے عورت کے حقوق کے نام پرمختلف تحریکیں اور تنظیمیں وجود میں آئی ہیں اور صنف نازک کے مقام ومرتبہ کی بحثوں نے سنجیدہ رخ اختیار کیا ...

بابری مسجد، مسلم پرسنل لابورڈ اور مولانا سید سلمان ندوی : سوشل میڈیا پر وائر ل سید سعادت اللہ حسینی کی ایک تحریر

بابری مسجد ،پرسنل لابورڈ اور مولانا سلمان ندوی صاحب وغیرہ سے متعلق جو واقعات گذشتہ چند دنوں میں پیش آئے ان کے بارے میں ہرطرف سے سوالات کی بوچھار ہے۔ ان مسائل پر اپنی گذارشات اختصار کے ساتھ درج کررہاہوں ۔ اللہ تعالیٰ ہم سب کی صحیح اور مبنی برعدل و اعتدال ، سوچ کی طرف رہنمائی ...

آل انڈیامسلم پرسنل لا بورڈ ماضی اور حال کے آئینے میں ..... آز: محمد عمرین محفوظ رحمانی (سکریٹری آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ) ۔

آج جمعہ بعد نماز مغرب سے حیدرآباد میں آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کا تین روزہ اجلاس شروع ہورہا ہے، جس میں مسلمانوں کے شرعی مسائل پر کھل کر گفتگو ہوگی۔ اسی پس منظر میں آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کا ایک تعارف بورڈ کے سکریٹری کے ذریعے ہی یہاں قارئین کے لئے پیش خدمت ہے