اگر اکھلیش۔مایا پہل نہیں کریں گے تو کانگریس اکیلے الیکشن لڑے گی، بی جے پی کوہرانے کے لیے ساتھ آناضروری، راج ببرکاسخت رخ،ریزرویشن مسئلے پر حکومت کوگھیرا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 8th January 2019, 12:07 AM | ملکی خبریں |

الہ آباد7جنوری(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) مرکز کی مودی حکومت کی طرف سے غریب اعلی ٰذات کو دس فیصد ریزرویشن دیئے جانے کے مودی حکومت کی تجویز پر یوپی کانگریس کے صدر راج ببر نے کہا ہے کہ کانگریس پارٹی بھی اس کی حمایت میں ہے۔

ان کے مطابق کانگریس خود بھی پسماندہ اعلی ذات کوریزرویشن کے دائرے میں لانا چاہتی تھی، لیکن کئی وجوہات سے یہ ممکن نہیں ہو سکا تھا۔اگرچہ راج ببر نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ کہیں اعلی ذات کو ریزرویشن کا یہ فیصلہ بھی مودی حکومت کی جملے بازی نہ ثابت ہو۔

ان کا کہنا ہے کہ پی ایم مودی نے 2014 کے انتخابات کے وقت جو بھی وعدے کیے تھے، وہ تمام جملے بازی ہی ثابت ہوئے ہیں، ایسے میں مدت کے آخری وقت میں اس طرح کی تجویز صرف سیاسی فوائد کے لیے ہوسکتی ہے اور دوسرے وعدوں کی طرح جملے بازی ہی ثابت ہو سکتا ہے۔راج ببر کے مطابق مودی حکومت کے اس فیصلے سے لوک سبھا انتخابات میں کانگریس کو کوئی نقصان نہیں ہو گا۔

یوپی میں سماجوادی پارٹی اور بی ایس پی کی طرف سے آج کی گئی مشترکہ پریس کانفرنس اور اتحاد سے کانگریس کوالگ رکھے جانے کے فیصلے پر راج ببر نے کہا کہ الگ الگ لڑنے سے بی جے پی کو فائدہ ہو سکتا ہے، لہٰذا اگر بی جے پی کو ہرانا ہے تو سب کو ساتھ مل کررہناہوگا۔ان کے مطابق اکھلیش یامایاوتی نے ابھی تک اتحاد کو لے کر کانگریس پارٹی سے کوئی بات تک نہیں کی ہے۔اگریہ دونوں خود کانگریس سے بات نہیں کرتے ہیں، تو ان کی پارٹی اپنی طرف سے بات چیت کی کوئی پہل نہیں کرے گی اور اکیلے ہی الیکشن لڑے گی۔

ان کا کہنا ہے کہ ایس پی بی ایس پی اگر کانگریس کے ساتھ ملے ہوتے تو گزشتہ ماہ ہوئے تین ریاستوں کے انتخابات میں بی جے پی کو اور کراری شکست کاسامناکرنا پڑتا۔

ایک نظر اس پر بھی

اپوزیشن کی جانب سے وزیراعظم کا اُمیدوارکون ؟ راہول گاندھی، مایاوتی یا ممتا بنرجی ؟

آنے والے لوک سبھا انتخابات میں اپوزیشن کی جانب سے وزیراعظم کے عہدے کا اُمیدوار کون ہوگا اس سوال کا جواب ہرکوئی تلاش کررہا ہے، ایسے میں سابق وزیر خارجہ اور کانگریس کے سابق سنئیر لیڈر نٹور سنگھ نے بڑا بیان دیتے ہوئے کہا ہے کہ  اس وقت بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) سربراہ مایاوتی ...

مدھیہ پردیش میں 5روپے، 13روپے کی ہوئی قرض معافی، کسانوں نے کہا،اتنی کی تو ہم بیڑی پی جاتے ہیں

مدھیہ پردیش میں جے کسان زراعت منصوبہ کے تحت کسانوں کے قرض معافی کے فارم بھرنے لگے ہیں لیکن کسانوں کو اس فہرست سے لیکن جوفہرست سرکاری دفاترمیں چپکائی جارہی ہے اس سے کسان کافی پریشان ہیں،