ایشیا کپ کے دوران افغان اوپنر محمد شہزاد کو اسپاٹ فکسنگ کی پیشکش

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 25th September 2018, 1:24 PM | اسپورٹس |

دبئی، 25؍ستمبر (ایس او نیوز؍ایجنسی) انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) کے سخت اقدامات کے باوجود اسپاٹ فکسنگ کے عفریت نے ایک مرتبہ پھر کھیل پر اثرانداز ہونے کی کوشش کی ہے، ایشیا کپ کے دوران افغانستان کے اوپنر محمد شہزاد کو اسپاٹ فکسنگ کی پیشکش کی گئی۔

اسپاٹ فکسرز نے ایشیا کپ کے دوران محمد شہزاد سے رابطہ کیا اور انہیں 5 سے 23 اکتوبر کے دوران شارجہ میں ہونے والی افغان پریمیئر لیگ میں خراب کارکردگی دکھانے کے عوض بھاری رقم کی پیشکش کی گئی۔

محمد شہزاد نے فوری طور پر اس حوالے سے ٹیم مینجمنٹ کو آگاہ کیا جس نے آئی سی سی اینٹی کرپشن یونٹ کے علم میں معاملے لانے کے لیے تمام ضوابط پر عمل کیا۔

افغان پریمیئر لیگ کے دوران محمد شہزاد کو پکتیکا فرنچائز نے لیا ہے جس میں برینڈن میک کولم، شاہد آفریدی اور کرس گیل جیسے بڑے نام شامل ہیں۔

آئی سی سی آفیشل کے مطابق ایشیا کپ کے دوران ایک کھلاڑی تک رسائی کی کوشش کی گئی لیکن یہ کوشش افغانستان کی اپنی لیگ کے لیے تھی۔ یہ معاملہ ہفتے کو تمام تر طریقہ کار پر عمل کرتے ہوئے علم میں لایا گیا اور اینٹی کرپشن یونٹ اس پر غور کر رہا ہے۔

پیر کو دبئی میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے آئی سی سی کے اینٹی کرپشن یونٹ کے سربراہ ایلکس مارشل نے تصدیق کی کہ گزشتہ 12ماہ کے دوران 5 انٹرنیشنل ٹیموں کے کپتانوں سے اسپاٹ فکسنگ کے سلسلے میں رابطہ کیا جن میں سے 4 کا تعلق آئی سی سی کے فل ممبران ٹیموں سے ہے۔

ان پانچ میں سے پاکستان کے کپتان سرفراز احمد وہ واحد کھلاڑی تھے جنہوں نے عوامی سطح پر اس حوالے سے بات کی اور انہیں گزشتہ سال سری لنکا کے خلاف سیریز کے دوران یہ پیشکش کی گئی تھی۔

ایلکس مارشل نے بتایا کہ گزشتہ 12ماہ کے دوران 32 معاملات کی تفتیش کی گئی جن میں 8 کھلاڑیوں کو شک کے دائرے میں لایا گیا۔ اس کے علاوہ 5 منتظمین یا کرکٹ نہ کھیلنے والے افراد شامل تھے جن میں سے 3 افراد پر فرد جرم عائد کی گئی جبکہ 5 کپتانوں نے بھی آئی سی سی کو آگاہ کیا کہ ان سے اسپاٹ فکسنگ کے لیے رابطہ کیا گیا۔

مارشل نے کرپشن کے خاتمے کے لیے تمام بورڈز کے ساتھ مل کر کام کرنے اور میچ فکسنگ کے طریقوں کے حوالے سے کھلاڑیوں کو تعلیم دینے کی ضرورت پر زور دیا کیونکہ میچ فکسنگ کے یہ گڑھ نئی ٹی 20 لیگز پر اثرانداز ہونے اور کھلاڑیوں کو پھنسانے کی کوششوں میں مصروف ہیں۔

یاد رہے کہ یہ معاملہ ایک ایسے موقع پر سامنے آیا ہے جب گزشتہ روز ہی پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین احسان مانی نے ٹی10 لیگ کے مالکان پر شکوک کا اظہار کرتے ہوئے آئی سی سی سے مطالبہ کیا تھا کہ وہ اس لیگ میں شامل منتظمین اور دیگر مالکان کی تفصیلات منظر عام پر لائے۔

ایک نظر اس پر بھی

گروسدھیندرا کالج بھٹکل اور جے جی کالج ہبلی نے جیتا کرناٹکا یونیورسٹی شٹل بیڈمنٹن زونل چمپئین کا خطاب؛ بھٹکل انجمن کو سوم مقام

یہاں انجمن ڈگری کالج بھٹکل کے زیراہتمام روٹری کلب میں منعقدہ دو روزہ کرناٹکا یونیورسٹی دھارواڑ سے ملحق کالجوں کے درمیان مردوں اور عورتوں کے زونل لیول شٹل بیڈمینٹن ٹورنامنٹ میں  شری گرو سدھیندرا کالج بھٹکل اور جے جی کالج  ہبلی نے زبردست پرفارمینس پیش کرتے ہوئے بالترتیب ...

ہبلی میں منعقدہ کرکٹ ٹورنامنٹ میں بھٹکل ٹیم کی زبردست کامیابی؛ ٹیم کی بھٹکل آمد پر شاندار استقبال

کرناٹکااسٹیٹ  کرکٹ اسوسی ایشن (KSCA) کے زیر اہتمام ہبلی میں منعقدہ چوتھے  زونل لیول کرکٹ ٹورنامنٹ میں بھٹکل سی سی نے  زبردست  جیت حاصل کی ہے، اس جیت  کے ساتھ ہی بھٹکل کے کرکٹ  کھلاڑی کامیابی کے پہلے زینہ  کو پارکرنے میں کامیاب ہوگئے ہیں ۔ جیت  حاصل کرنے کے بعد جب ٹیم بھٹکل ...

پانچویں ونڈے میں شاندار جیت کے ساتھ ہندوستان کا سیریز پر 1-4 سے قبضہ

مڈل آرڈر کے بلے باز امباٹی رائیڈو کی 90 رن کی شاندار اننگز اور آل راؤنڈر ہاردک پانڈیا (45 رن اور دو وکٹ) کی بہترین آل راونڈر کارکردگی کی بدولت ہندوستان نے نیوزی لینڈ کو پانچویں اور آخری ون ڈے میں آج 35 رن سے شکست دے کر پانچ میچوں کی سیریز 4-1 سے اپنے نام کرلی۔

دوسرے ٹی 20 میچ میں جنوبی افریقہ نے پاکستان کو 7 رنوں سے شکست دی

جنوبی افریقہ اور پاکستان کے درمیان تین ٹی 20 میچوں کی سیریز کے دوسرے میچ میں  کپتان ڈیوڈ ملر کی طوفانی اننگز اور اس کے بعد آخری اوورس میں گیند بازوں کی اچھی گیند بازی کی بدولت جنوبی افریقہ نے سنسنی خیز مقابلہ میں پاکستان کو7 رنوں سے شکست دی ۔ ساتھ ہی ساتھ جنوبی افریقہ نے ...

دبئی کے قریب عجمان میں منعقدہ نوائط پریمیر لیگ کرکٹ ٹورنامنٹ میں ڈی وی ایس یونائٹیڈ کی شاندار جیت؛ الکریمی چیلنجرس کو فائنل میں شکست

دبئی کے قریب عجمان کے  ایڈن گارڈن میدان میں منعقدہ ایز ٹیکس نوائط پرئمیر لیگ (این پی ایل)  کرکٹ کا پہلا ٹورنامنٹ  ڈی وی ایس یونائیٹید نے جیت لیا، جس کے ساتھ ہی  پانچ ٹیموں پر مشتمل یہ ٹورنامنٹ کامیابی کے ساتھ اختتام پذیر ہوا۔