بلنڈور تالاب کی حفاظت میں لاپروائی کا الزام، حکومت اور بی بی ایم پی 50اور 25 کروڑ کا جرمانہ

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 7th December 2018, 1:13 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو:6/دسمبر (ایس او نیوز)  مضافات شہر بلنڈور تالاب میں بڑھتی ہوئی آلودگی وقتاً فوقتاً اس تالاب سے بدبو دار جھاگ خارج ہونے اور تالاب میں آگ لگنے کے واقعات سے نپٹنے میں ریاستی حکومت اور برہت بنگلور مہانگر پالیکے کی بارہا ناکامیوں پر سخت کارروائی کرتے ہوئے آج نیشنل گرین ٹریبونل نے ریاستی حکومت پر 50کروڑ روپے اور بی بی ایم پی پر 25کروڑ روپیوں کا جرمانہ عائد کیا اور ہدایت دی کہ حکومت اور بی بی ایم پی یہ رقم آلودگی کنٹرول بورڈ کو ادا کریں۔ نیشنل گرین ٹریبونل نے ہدایت دی کہ بلنڈور تالاب کی دیکھ بھال کے لئے پانچ سو کروڑ روپیوں کا ایک ریزرو فنڈ قائم کیا جائے۔ نیشنل گرین ٹریبونل کے چیرمین جسٹس این گوپال نے آج اس معاملے پر دائر عرضی کی سماعت مکمل کرنے کے بعد فیصلہ سناتے ہوئے کہاکہ بلنڈور تالاب کے پاس جتنے بھی غیر قانونی قبضے ہیں فوری طور پر انہیں خالی کرایا جائے۔ تالاب میں آلودگی کے پھیلاؤ کو روکنے میں ناکام بی بی ایم پی افسرآئندہ اس طرح کی لاپروائی برتنے نہ پائیں اس کے لئے کارروائی کی جائے۔ بلنڈور تالاب کی حفاظت کے سلسلے میں اعلیٰ اختیاری کمیٹی نے جو سفارشات کی ہیں ان تمام کو من وعن لاگو کیا جائے ۔ ٹریبونل نے بارہا لاپروائی کے لئے بی بی ایم پی افسروں کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ فوری طور پر تالاب کے آس پاس جو بھی غیر قانونی قبضے ہوئے ہیں ان کو ہٹانے کے ساتھ یہ بھی یقینی بنایا جائے کہ آلودہ پانی تالاب میں نہ بہنے پائے۔تالاب کے آس پاس موجود صنعتوں کے ذریعے بہائے جانے والے کیمیکل پانی میں گھل جانے کی وجہ سے بارہا تالاب میں آگ لگتی ہے۔ جس کی وجہ سے تالاب کے آس پاس کا ماحول بھی پراگندہ ہورہاہے۔ اسی لئے فوری طور پر بی بی ایم پی اور ریاستی حکومت یہ یقینی بنائیں کہ اس تالاب میں کیمیکل کا بہا ؤ بند کیا جائے اور اس کے لئے ذمہ دار کارخانوں کے خلاف بھی کارروائی کی جائے۔ تالاب سے بارہا جھاگ نکلنے اور آس پاس کی سڑکوں پر جمع ہوجانے کی شکایت کا بھی ٹریبونل نے سخت نوٹس لیا اور ہدایت دی کہ آئندہ ایسی صورتحال پیدا نہ ہونے پائے اس کے لئے ماہرین کی مدد لے کر کارروائی کی جائے۔ 

ایک نظر اس پر بھی

بنگلور میں 23/ مئی کو ووٹوں کی گنتی کے دوران امتناعی احکامات نافذ

23 مئی کو لوک سبھاانتخابات کے نتائج کا اعلان ہورہا ہے۔ انتخابات کے نتائج ظاہر ہونے کے مرحلے میں کوئی ناخوشگوار صورتحال پیدا نہ ہونے پائے اس کے لئے شہر کے پولیس کمشنر سنیل کمار نے 23مئی کی صبح چھ بجے سے شہر بھر میں امتناعی احکامات نافذ کرنے کا اعلان کیا ہے۔

کرناٹک کے کندگول اور چنچولی حلقوں میں آج ہوگی پولنگ؛ 85 پولنگ بوتھوں کو قرار دیا گیا ہے حساس

ریاست کرناٹک  کے دو اسمبلی حلقوں کندگول اور چنچولی کے لئے آج اتوار کو  ووٹ ڈالے جائیں گے۔ دونوں حلقوں پر کامیابی درج  کرنے کے لئے کانگریس جے ڈی ایس اتحاد اور بی جے پی نے ایڑی چوٹی کا زور لگایا ہے۔

محمد محسن کی فرض شناسی کو پھر نشانہ بنانے کی کوشش، الیکشن کمیشن تادیبی کارروائی کے لئے ہائی کورٹ سے رجوع

اڈیشہ میں انتخابی مشاہد کے طور پر متعین کرناٹک کیڈر کے آئی اے ایس افسر محمد محسن نے وزیراعظم مودی کے ہیلی کاپٹر کی تلاشی لے کر جس فرض شناسی کا ثبوت پیش کیا اسے فرض شکنی قرار دیتے ہوئے الیکشن کمیشن نے نہ صرف انہیں معطل کردیا بلکہ اب ایسا لگتا ہے کہ الیکشن کمیشن نے انہیں نشانہ ...