9؍ بدعنوان افسران کو اے سی بی نے نشانہ بنایا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th March 2018, 8:30 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،9؍مارچ(ایس او نیوز) ریاست میں بدعنوان سرکاری افسران اور ملازمین کو دھرنے کی مہم جاری رکھتے ہوئے آج صبح سویرے بنگلور، کولار، چکمگلور، بیجاپور، بلگاوی، ہبلی، اور منگلور سمیت 36مقامات پر انسداد کرپشن بیورو کے افسران نے چھاپے مارے اور بدعنوان سرکاری افسران کے گھروں ، دفاتر اور دیگر مقامات کو نشانہ بناکر ان کے پاس سے بھاری رقم اثاثوں کے دستاویزات وغیرہ ضبط کئے۔ بلگاوی نے اے سی بی افسران نے کوئمپونگر علاقے میں اپر کرشنا پراجکٹ کے لینڈ اکویزیشن آفیسر راجہ شری جین کے گھر اور دفتر کو نشانہ بنایا۔ ڈی وائی ایس پی رگھوملیش دوڈ منی کی قیادت میں اے سی بی افسران کی ٹیم نے راج شری کے ٹھکانوں پر دھاوا بول کر دستاویزات کی جانچ کی۔ ہبلی کے کیشو پور میں راج شری کی رہائش گا ہ ، بیجاپور اور دھارو اڑ کے دومکانوں ، دفتر ، راج شری کے شوہر کے مکان اور وجئے پور میں ایک اور ٹھکانے کے ساتھ ان کے رشتہ داروں کے مکانوں پر بھی دھاوے بولے۔ کولار ضلع کے ملباگل تعلقہ میں دیہی آب رسانی محکمے کے ایگزی کیٹیو انجینئر اپا ریڈی کے ٹھکانوں پر پانچ اے سی بی ٹیموں نے بیک وقت دھاوا بولا ، اسی طرح گنگاوتی کے جئے نگر میں اے سی بی کی ایک ٹیم نے ان کے مکان پر چھاپہ مارا۔ رائچور میں 30 اے سی بی افسران نے الگ الگ مقامات پر چھاپے مارے ۔ بنگلور میں بعض بی بی ایم پی افسران کے ٹھکانوں پر بھی آج اے سی بی نے چھاپے مارے ، ان میں ایگزی کیٹیو انجینئر گنگا دھر شامل ہیں۔ ٹمکور میں گنگا دھر کی رہائش گاہ پر بھی چھاپہ مارا گیا۔ کرناٹکا گروپ انشورنس ڈپارٹمنٹ کے آفیسر ردرا پرساد ، چکمگلور ضلع کے کڈور میں اسسٹنٹ ڈائرکٹر محکمۂ زراعت شیوکمار کی ٹپٹور میں واقع رہائش گاہ پر ڈی وائی ایس پی موہن کی قیادت میں چھاپہ مارا گیا۔اس کے علاوہ چکمگلور آرٹی اور ویرو پاکشا ، گنگا وتی کے ایگزی کیٹیو انجینئروجئے کمار ، منگلور کے ایکسائز انسپکٹر ونود کمار کے ٹھکانوں پر بھی جو بلاری اور رائچور میں موجود تھے آج دھاوے بولے گئے۔ 

ایک نظر اس پر بھی

کانگریس لیجسلیچر پارٹی میٹنگ میں سدرامیا پھر غالب، ہنگامہ خیزی کے اندیشوں کے برعکس میٹنگ میں کسی نے بھی زبان نہیں کھولی

حسب اعلان 22دسمبر کو ریاستی کابینہ میں توسیع کی تصدیق کرتے ہوئے آج سابق وزیراعلیٰ اور کانگریس لیجسلیچر پارٹی لیڈر سدرامیا نے تمام کانگریسی اراکین کو خاموش کردیا۔

مندروں کو دئے جانے والے فنڈز کو فرقہ وارنہ رنگ دینے بی جے پی کی مذموم کوشش، اسمبلی میں اسپیکر نے فرقہ پرست جماعت کی ایک نہ چلنے دی

وقفۂ سوالات میں بی جے پی رکن اسمبلی سی ٹی روی کی طرف سے سوالات تک خود کو محدود رکھنے کی بجائے ایک معاملے پر بحث شروع کرنے کی کوشش کو جب اسپیکر رمیش کمار نے روک دیا تو اس بات پر بی جے پی اراکین اور اسپیکر کے درمیان نوک جھونک شروع ہوگئی۔

ریاست کرناٹک میں 800 نئے سرویرس کا تقرر

وزیر مالگزاری آر وی دیش پانڈے نے آج ریاستی اسمبلی کو بتایاکہ ریاست بھر میں اراضی سروے کی ذمہ داری ادا کرنے کے لئے محکمے کی طرف سے 800نئے سرویرس کا تقرر کیا گیا ہے۔

پسماندہ طبقات کے سروے کی رپورٹ تیاری کے مراحل میں: پٹ رنگا شٹی

ریاستی وزیر برائے پسماندہ طبقات پٹ رنگا شٹی نے کہا ہے کہ سابقہ سدرامیا حکومت کی طرف سے درج فہرست طبقات کی ہمہ جہت ترقی کو یقینی بنانے کے مقصد سے جو سماجی ومعاشی سروے کروایا گیا تھا اس کے اعداد وشمار کو کمپیوٹرائز کرنے کا عمل جاری ہے۔