کجریوال کے 3 سال’ آپ‘ نے شمار کرائیں کامیابیاں تو حزب اختلاف نے گنوادیں ناکامیاں

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 14th February 2018, 3:43 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی 14 فروری (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)اروندکجریوال کی قیادت میں دہلی کی عام آدمی پارٹی نشیب و فراز دیکھتے ہوئے 14 فروری کو ا پنی مدت کے تین سال پورے کر رہی ہے۔ تیسری مدت کی تکمیل کے موقع پر جہاں کجریوال حکومت اپنی کامیابیاں شمار کروارہی ہے تو وہیں اپوزیشن پارٹی بی جے پی اور کانگریس حکومت کی ناکامیوں کو دکھانے کے لئے آمادہ ہے۔ ایک طرف جہاں عام آدمی پارٹی ایک کے بعد ایک ٹویٹ کر اپنی کامیابیاں شمار رہی ہے، وہیں بی جے پی اورکانگریس بھی ٹویٹ سے حکومت کو گھیرنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑ رہی ہے۔ عام آدمی پارٹی نے ٹویٹ کر اپنی کامیابیاں گنواتے ہوئے کہاکہ ہم نے بجلی کمپنیوں کی سی اے جی جانچ کرائی، جس سے کمپنیوں میں سراسیمگی پھیل گئی ، معاً اس کے کہا کہ ہم نے بل میں 50 فیصد کی کمی کی، بجلی کی گھنٹوں عدم دستیابی کو بند کیا اور بجلی کمپنیوں پر جرمانہ عائد کیا اور تین سال میں بجلی کی شرح میں کوئی اضافہ بھی نہیں ہوئی۔ خواتین کمیشن کے بارے میں عام آدمی پارٹی نے کہا کہ آپ کی حکومت آتے ہی دہلی خواتین کمیشن فعال ہو گئی، حکومت نے خواتین کمیشن میں جان پھونک دی ہے ، ساتھ ہی وریندر دکشت جیسے مکار ڈھونگی بابا کا قلعہ منہدم کر دیا ۔مگر کانگریس نے آپ حکومت کے تین سال مکمل ہونے پر ریاستی صدر اجے ماکن نے تنقید کی ہے اور اس کو ناکامی بتاتے ہوئے کئی امور کا انکشاف بھی کیا ہے ۔ کانگریس نے ان امور کا انکشاف کرتے ہوئے حکومتی طرز عمل پر ناکامی کی مہر لگاتے ہوئے کہا کہ ڈی ٹی سی اورکلسٹر بسوں میں نہ تو سی سی ٹی وی اور نہ ہی کوئی مارشل کا بندوبست ہو پا یا ہے ۔اجے ماکن نے مزید انکشاف کرتے ہوئے کہا کہ آپ حکومت کے کابینہ میں کوئی خاتون وزیر نہیں ہے جو آپ کی کارکردگی پر شبہ پیدا کرتا ہے ۔دلی شہری پناہ بہتری بورڈ نے ابھی تک محض 29 فیصدبیت الخلاؤں کی تعمیر کرائی یعنی کہ 384. ، دراں حالے کہ حکومت کا ہدف 1314 کا تھا۔ اس کے علاوہ الزام لگایا کہ خواتین کو بااختیار بنانے کے لئے کانگریس کی اہم منصوبہ جی آر سی اور خواتین ہیلپ لائن نمبر 181 کو غیر فعال بھی کر دیا ہے۔ وہیں بی جے پی کے ریاستی صدر منوج تیواری نے بھی کجریوال حکومت کے تین سال مکمل ہونے پر تنقیدکرتے ہوئے ناکام بتایا ہے ۔ انہوں نے ٹویٹ کرکے کہا کہ اروند کیجریوال کی حکومت اشتہارات کی حکومت ہے ۔ منوج تیوار ی نے الزام لگاتے ہوئے کہا کہ عام آدمی پارٹی بھرم پیدا کرنے کی ماسٹری ہے ۔ ساتھ ہی انہوں نے ٹوئٹر پر ہیش ٹیگ بھی دیا ہے ’’تین سال، دلی بے حال ‘‘ علاوہ ازیں منوج تیواری نے کجریوال پرتنقید کرتے ہوئے یہ بھی الزام لگایا کہ دہلی کجریوال حکومت کی ناکامی کی وجہ سے 3 سال میں 30 سال پیچھے چلی گئی ہے۔وہیں بی جے پی نے اپنے ٹوئٹر ہینڈل سے ٹویٹ کیا کہ کیا کجریوال خود کو ملک کے قانون اورآئین سے بالاسمجھتے ہیں ؛ اس لیے بار بار آئین کی خلاف ورزی کرتے رہتے ہیں۔ 

ایک نظر اس پر بھی

پہلے للت، پھر مالیا، اب نیرو بھی ہوا فرار، کہاں ہے ملک کا چوکیدار ؟ راہل گاندھی کا مودی حکومت پرپھر حملہ

پی این بی گھوٹالے پر کانگریس صدر راہل گاندھی نے پیر کو وزیر اعظم نریندر مودی حملہ بولا ہے۔ راہل نے ٹوئٹ کرتے ہوئے  کہا ہے کہ پہلے للت مودی پھر وجے مالیا اور اب نیرو بھی ہوا فرار۔ اس سے پہلے راہل نے پی ایم مودی اور اور وزیر خزانہ ارون جیٹلی سے اس معاملے پر بولنے اور گناہگار کی طرح ...

راجستھان میں اپوزیشن لیڈر کی وضاحت کولے کرہنگامہ

 راجستھان اسمبلی میں آج اپوزیشن لیڈر رامیشور دویدی کی طرف سے خود پر لگے الزامات پر وضاحت دینے کے دوران بجٹ اعلانات کو لے کر کے گئے تبصرہ کو لے کر ہنگامہ ہوا۔ ہنگامہ کے دوران صدر کیلاش میگھوال نے اپوزیشن لیڈر کو سمجھاتے ہوئے قانون سازی کام نپٹانا شروع کر دیا۔

راجستھان میں افرازالاسلام کا قاتل شبمھو لال ریگر نے سسٹم کو دکھایا ٹھینگا، جیل کے اندر بنایااشتعال انگیز ویڈیو

راجستھان کے راجسمندمیں افرازالاسلام کے وحشیانہ قتل کا ملزم شبمھو لال ریگر اس وقت جودھپور کی جیل میں ہے۔نجی ٹی ویNDTVنے دعویٰ کیاہے کہ اسے ایک خصوصی ویڈیوہاتھ لگاہے۔ جس میں شبمھو لال ریگر نفرت پھیلانے والی باتیں کررہاہے۔

مظفر نگر میں علامہ اقبال پر غزل و نظم سرائی کے مقابلے کا انعقاد؛ تحسین علی کو ’’نشان اقبال ‘‘ اور ارمیلہ شرما کو ’’تعلیمی خدمات ایوارڈ‘‘

عوامی ایکتا ویلفیئر سوسائٹی دہلی و علامہ اقبال اکیڈمی دہلی کے اشتراک سے آج ایک عظیم الشان پروگرام بعنوان کلام اقبال غزل و نظم سرائی کے مقابلے کا انعقاد ایم.آر.ڈی. پبلک اسکول سانجک میں کیا گیاجس میں مختلف مدارس کے طلباء وطالبات نے حصہ لیا۔

بنگلور میں جے ڈی ایس کا شاندار اجلاس؛ مایاوتی کی شرکت؛ کہا مودی حکومت اب آخری سانس لے رہی ہے؛ کمارسوامی نے جاری کی 126 اُمیدواروں کی پہلی فہرست

شہر کے یلہنکا میں جنتادل (ایس) کا  شاندار جلسہ کمارا پرو یاترا کنونشن کے نام پر سنیچر شام کو منعقد ہوا ، جس میں ریاست کے مختلف گائوں اور دیہاتوں سے کثیر تعداد میں لوگوں نے   شرکت کی۔ اس موقع پر سابق وزیراعلیٰ  کماراسوامی نے  ریاست کرناٹک میں آئندہ دو  تین ماہ بعد ہونے والے ...