ایک سال کے دوران ایران میں 530 افراد کو پھانسی دی گئی

Source: S.O. News Service | Published on 21st April 2017, 6:20 PM | عالمی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

تہران،21اپریل(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)ایران میں انسانی حقوق کے لیے کام کرنے والی ایک تنظیم کی طرف سے جاری کردہ سالانہ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ گذشتہ ایک سال کے دوران 530 افراد کو پھانسی دی گئی۔ ان میں ایران کے عرب اکثریتی صوبہ اھواز اور کردستان کے 44 کارکن بھی شامل ہیں۔ ایرانی ریاست نے ملزمان پربغاوت اور اللہ اور اس کے رسول کے خلاف جنگ کے الزام کے تحت انقلاب عدالتوں میں مقدمات چلائے۔ عدالتوں کی طرف ہونے والی سزاؤں کے بعد انہیں موت کے گھاٹ اتار دیا گیا۔
ایرانی انسانی حقوق گروپ کی طرف سے جاری کردہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ایرانی حکام کی طرف سے اللہ اور اس کے رسول کے خلاف جنگ کا الزام اکثر سیاسی قیدیوں پر بھی عاید کیا جاتا ہے مگر آج تک اس کی کوئی واضح تعریف نہیں کی جاسکی ہے۔ایرانی پولیس پرامن سرگرمیوں کے الزام میں گرفتار افراد کے خلاف بھی ممنوعہ اپوزیشن گروپوں سے تعلقات جوڑ کرانہیں پھانسی دلوانے کی کوششیں کرتی رہی ہے۔ عموما سزائے موت کے قیدیوں کو ’فساد فی الارض‘ کا مرتکب قرار دے کر ان کا ٹرائل کیا جاتا ہے۔عدالتیں کسی ملزم کو شک کا فائدہ دینے کے بجائے ان کے موت کے پروانے جاری کرنے میں زیادہ فخر محسوس کرتی ہیں۔ایرانی انسانی حقوق کی تنظیموں کی طرف سے جاری کردہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ گذشتہ ایک سال کے دوران کرد اور عرب برادری کے 44 سیاسی کارکنوں کو بھی موت کے گھاٹ اتار دیا گیا۔
رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ 17 اگست 2016ء کو ایرانی حکام نے عرب اکثریتی صوبہ الاھواز سے تعلق رکھنے والے تین کارکنوں 25 سالہ قیس عبیداوی، اس کے بھائی 20 سالہ احمد عبیداوی اورچچا زاد سجاد بلاوی کو اللہ اور اس کے رسول کے خلاف جنگ، فساد فی الارض اور ایران کی قومی سلامتی کو نقصان پہنچانے کے الزام میں پھانسی دی گئی۔ایرانی پولیس نے 20 افراد کو پولیس پارٹی پر فائرنگ کے الزام میں حراست میں لیا۔ ان میں سے تین کو پھانسی دی گئی اور چار کو طویل قید کی سزائیں سنائی گئیں جب کہ باقی ملزمان کو رہا کردیا گیا تھا۔
انسانی حقوق کی تنظیم کے مطابق گذشتہ برس ایران کی انقلاب عدالتوں سے 25 سنی کرد کارکنوں کو پھانسی دلوائی گئی۔ پھانسی پانے والے سنی مسلمانوں میں نوجوان عالم دین شہرام احمدی بھی شامل تھے۔ایرانی انسانی حقوق گروپ نے قیدیوں سے تفتیش کے طریقہ کار پربھی کڑی تنقید کی ہے اور کہا ہے کہ تمام ملزمان سے تشدد کے ذریعے اقبال جرم کرایا گیا جس یے بعد انہیں پھانسی دی گئی۔ ملزمان کو وکیل کا حق دیا گیا اور نہ ہی آخری وقت ان کے لواحقین سے ملاقات کرائی گئی۔گذشت برس 9 اگست کو پھانسی پانے والوں میں کرد سیاسی رہ نما محمد عبدللھی بھی شامل تھے۔ انسانی حقوق کی تنظیموں نے عبداللھی کو بے گناہ قرار دے دیا تھا کیونکہ وہ کسی بھی مسلح کارروائی میں ملوث نہیں تھے۔ گذشتہ برس پھانسی پانے والی سرکردہ شخصیات میں معروف سائنسدان شہرامی امیری بھی شامل تھے۔ امیری کو 3 اگست 2016ء کو پھانسی دی گئی۔ان پر دشمن کے لیے جاسوسی اور قومی سلامتی کے راز دشمن کو فراہم کرنے کا الزام عاید کیا گیا تھا۔


 

ایک نظر اس پر بھی

کرد ملیشیا کی عفرین میں ترکی کے خلاف اسدی فوج سے معاہدے کی تردید

شام کے علاقے عفرین میں ترک فوج کا مقابلہ کرنے والی کردملیشیا ’کرد پروٹیکشن یونٹ‘ کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں ان خبروں کی سختی سے تردید کی ہے جن میں دعویٰ کیا گیا تھا کہ کرد ملیشیا نے ترکی کا مقابلہ کرنے کے لیے اسدی فوج کے ساتھ ساز باز کرلیا ہے۔

مینگلور کے قریب سولیا میں لڑکے نے اپنے ہی کالج کی لڑکی کو چھرا گھونپ دیا؛ خودکشی کی ناکام کوشش کے بعد گرفتار؛ محبت میں ناکامی کا شبہ

یہاں سے قریب 85 کلو میٹر دور سولیا  میں پیش آئے ایک اندوہناک واقعے میں کالج کی ایک طالبہ کی موت واقع ہوگئی، جبکہ اس کو چھرا گھونپنے والے طالب العلم کو خودکشی کی ناکام کوشش کے بعد گرفتار کرلیا گیا۔  مہلوک طالبہ  کی  شناخت  اکشتھا کی حیثیت سے کی گئی ہے جو سولیا کے  نہرو میموریل ...

بی جے پی صدر امت شاہ کے پروگرام سے واپس لوٹنے کے دوران تین نوجوانوں پر حملہ؛ مینگلور میں پیش آیا واقعہ

  اُڈپی کے ملپے میں بی جے پی کی جانب سے منعقدہ  ماہی گیروں کے ایک جلسہ میں شریک ہوکر واپس لوٹنے کے دوران  مینگلور کے  تھوٹا بینگرے میں تین  نوجوانوں پر حملہ کئے جانے کی واردات پیش آئی ہے، جس میں تینوں کو شدید چوٹ لگی ہے اور اُنہیں مینگلور کے نجی اسپتال میں داخل کیا گیا ہے۔

اسلام میں عورت کے حقوق ...............آز: گل افشاں تحسین

صدیوں سے انسانی سماج اور معاشرہ میں عورت کے مقام ومرتبہ کو لیکر گفتگو ہوتی آئی ہے ان کے حقوق کے نام پر بحثیں ہوتی آئی ہیں لیکن گذشتہ چند دہائیوں سے عورت کے حقوق کے نام پرمختلف تحریکیں اور تنظیمیں وجود میں آئی ہیں اور صنف نازک کے مقام ومرتبہ کی بحثوں نے سنجیدہ رخ اختیار کیا ...

نوئیڈا میں پولیس انکاؤنٹر میں انعامی بدمعاش ہلاک

ضلع کے تھانہ کاسنہ علاقے کے اومی کرن سیکٹر کے پاس گزشتہ رات پولیس اور بدمعاشوں کے درمیان انکاؤنٹر میں گولی لگنے سے ایک انعامی بدمعاش کی موت ہو گئی۔بدمعاشوں کی طرف سے چلائی گئی گولی سے ایک سپاہی بھی زخمی ہوا ہے۔

این اے حارث نے فرزند کی حرکت پر اسمبلی میں کی معذرت خواہی

رکن اسمبلی این اے حارث کے فرزند نلپاڈ محمد کی طرف سے کل پیر کو ایک طالب العلم کو زودوکوب کرنے کا معاملہ سامنے آنے کے بعد آج این اے حارث نے ریاستی اسمبلی میں معذرت طلب کی اور کہا کہ ان کے بیٹے کی حرکت کی وجہ سے  اُنہیں جس طرح ندامت اُٹھانی پڑی، وہ وقت کسی باپ پر نہ آئے۔