اُترکنڑا میں گزشتہ 6مہینوں میں چھاپہ ماری کے دوران 8.95کوئنٹل پلاسٹک ضبط۔ مگر استعمال پر نہیں لگی روک !

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 23rd July 2018, 1:14 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بھٹکل 23؍جولائی (ایس او نیوز)ماحولیاتی تحفظ کے لئے پلاسٹک تھیلیوں اور دیگر اشیاء کے استعمال پر پابندی لگانے کی کوششیں کامیاب ہوتی نظر نہیں آرہی ہیں، کیونکہ یہ عام زندگی کا ایک اٹوٹ حصہ بن چکی ہیں۔

ایک رپورٹ کے مطابق ضلع شمالی کینرا میں گزشتہ چھ مہینوں میں افسران نے دکانوں پر چھاپے مار کر 8.95کوئنٹل پلاسٹک ضبط کیا ہے ۔ لیکن بازار اور مچھلی مارکیٹوں میں پلاسٹک تھیلیوں کا استعمال ذرا بھی رکا نہیں ہے۔ حالانکہ ضلع شمالی کینرا میں پلاسٹک تھیلیاں اور دیگر چیزیں تیار کرنے کے کارخانے موجود نہیں ہیں مگر پلاسٹک کا استعمال زوروں پر ہے۔ اس وجہ سے پلاسٹک کے استعمال پر پابندی کو لاگو کرنا افسران کے لئے دردِ سر بن گیا ہے۔

گزشتہ چھ مہینوں کے دوران ضلع کے مختلف شہروں میں152مقامات پربلدیاتی اداروں کے افسران نے پلاسٹک کی فروخت اور استعمال کے خلاف چھاپے مارے تھے۔ اور 67,600روپے جرمانہ بھی وصول کیا تھا۔ تعلقہ وار سطح پر افسران پوسٹرس، پمفلیٹس وغیرہ تقسیم کرنے کے علاوہ عوامی پروگرام کے ذریعے پلاسٹک کے استعمال سے پرہیز کرنے کے سلسلے میں بیداری لانے کی کوشش میں لگے ہوئے ہیں اور ا س پر لاکھوں روپے خرچ بھی کیے جارہے ہیں۔ مگر اس کا اثرعملی طور پر ہوتا نظر نہیں آتا۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ ہر قسم کے پلاسٹک پر پابندی لگانے کی بات کرنے والے سرکاری افسران اپنے پروگراموں اورجلسوں میں پلاسٹک بینرس اور پینے کے لئے پانی کی پلاسٹک بوتلیں استعمال کرتے نظر آتے ہیں۔ گزشتہ دنوں کاروار میں محکمہ صحت عامہ کے ایک پروگرام میں ضلع ڈپٹی کمشنرایس ایس نکول کو پلاسٹک کی بوتل والا پانی پینے سے انکار کرتے ہوئے دیکھا گیا۔ مگر سوال پیدا ہوتا ہے کہ عام جلسوں میں پانی کی پلاسٹک بوتلوں سے کیسے بچا جاسکتا ہے، جو زندگی کا لامی حصہ بن کر رہ گئے ہیں۔ اس کے علاوہ مچھلی مارکیٹ ، گوشت وغیرہ کے لئے بھی پلاسٹک کی تھیلیاں لازمی سی ہوکر رہ گئی ہیں۔یہی وجہ ہے کہ سرکاری افسران کی لاکھ کوشش کے باوجود پلاسٹک کا استعمال عام زندگی میں روکنا ممکن ہوتا نظر نہیں آرہا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

مرڈیشور پالی ٹکنک طلبا کی طرف سے بم ناکارہ مشین کی نمائش

کورگ ضلع کے پونمپیٹ کے کورگ انسٹی ٹیوٹ آف ٹکنالوجی میں منعقدہ سال 2019کے پراجکٹ ایگزیبشن  مقابلے میں مرڈیشور آر این ایس پالی ٹکنک کالج کے طلبا کی طرف سے پیش کردہ الکڑانک بم کو ناکارہ بنانے والی مشین کے متعلق ہر ایک نے تعاریفی کلمات کہے۔

بھٹکل روٹری کلب کا انڈور اسٹیڈیم بھی قومی شاہراہ کی نذر : یادداشت کے لئے 29مارچ سے شٹل بیڈمنٹن ٹورنامنٹ کا انعقاد

قومی شاہراہ توسیع کام کو لے کر کچھ ہی دنوں میں نکال باہر ہونے والے دوردرشن مرکز سے متصل روٹری کلب کے انڈور اسٹیڈیم میں 29مارچ سے تین دنوں تک شٹل بیڈمنٹن ٹورنامنٹ منعقد کئے جانے کی روٹری کلب کے سکریٹری شری نواس پڈیار نے جانکاری دی ۔

سداپور : 5مرتبہ ایم پی منتخب ہونے والے اننت کمار سے ضلع کو کوئی فائدہ نہیں : آزاد امیدوار کی حمایت کریں گے

آئندہ ہونے والے لوک سبھا انتخابات میں آزاد امیدوار کی حیثیت سے انتخاب لڑنےو الے وکیل جی ٹی نائک کی ہم لوگ حمایت کریں گے۔ کیونکہ وکیل جی ٹی نائک غریب، پسماندہ ، کسان اور مظلو م طبقات کے متعلق فکر رکھتے ہیں ۔ہیمنت نائک، ہریش نائک، ارون نائک نے پریس ریلیز جاری کرتے ہوئے اعلان کیا ...

کانگریس کاچیلنج: مودی بتائیں کہ وہ ’نیائے‘ منصوبہ کے حق میں ہیں یا مخالف، بی جے پی گمراہی نہ پھیلائے،پالیسی کمیشن اب پالٹیکل کمیشن بن گیاہے

کانگریس نے ’کم از کم آمدنی منصوبہ بندی‘ کے تحت غریب خاندانوں کو سالانہ 72 ہزار روپے دینے کے انتخابی وعدے کو لے کر بی جے پی کے حملے پر جوابی حملہ کیا اور کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کو یہ واضح کرنا چاہئے کہ کیا وہ غر یبوں کے مسائل کا تکفل کرنے والے اس مجوزہ اقدام کے حامی ہیں یا ...

پتور: منگلورو جارہے ٹرک ڈرائیور کو باندھ کرنیشنل ہائی وے 75پر لوٹا گیا

ایک تین رکنی لٹیروں کی ٹیم نے نیشنل ہائی وے 75پر مال سے لدے ہوئے ٹرک کو روکا اور ڈرائیور کے منھ میں کپڑا ٹھونس کر اسے باندھنے کے بعد ٹرک سے کچھ ساما ن کے علاوہ ٹرک ڈرائیور کے پاس موجود 5,200روپے اور موبائل فون لوٹ کر فرار ہوگئے ۔