ریاست کے 89 تعلقہ جات خشک سالی سے متاثر،8 ؍ ہزار کروڑ کا نقصان:  آر وی دیش پانڈے

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th September 2018, 11:52 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو12؍ستمبر(ایس او نیوز) ریاستی وزیر برائے مالگزاری آر وی دیش پانڈے نے کہا ہے کہ ریاست کے 16؍اضلاع میں 89 تعلقہ جات بارش کی شدید قلت کے سبب سنگین خشک سالی کا شکار ہوچکے ہیں۔ مرکزی حکومت کی طرف سے خشک سالی کا شکار تعلقہ جات کی نشاندہی کے لئے طے شدہ معیار کے مطابق ان تعلقہ جات میں پانی کی قلت ایک سنگین مسئلہ بنی ہوئی ہے۔

ریاستی حکومت نے مرکزی حکومت کے طے کردہ معیاروں کے مطابق ہی ان 89 تعلقہ جات کو خشک سالی سے متاثرہ قرار دیتے ہوئے ان کے لئے مرکز ی حکومت سے امداد طلب کرنے کی پہل کی ہے۔

آج اس سلسلے میں منعقدہ کابینہ ذیلی کمیٹی کی میٹنگ کے بعد اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ 30 مئی کو ریاست میں مانسون کا داخلہ ہواتھا اور 8؍ جون تک مانسون کی بارشوں نے پوری ریاست کو اپنے گھیرے میں لے لیا ، بجز ملناڈ اور ساحلی علاقوں کے ریاست کے دیگر حصوں میں بارش کا اوسط معمول کے مقابل کم رہا۔ اس کی وجہ سے کاشتکاری کی سرگرمیاں ان علاقوں میں متاثر ہوئی ہیں۔

انہوں نے کہاکہ سیٹلائٹ کے ذریعے جو زرعی تجزیہ حاصل کیا گیا ہے اس کے مطابق کاشتکاری کے لئے ریت کی نمی میں 50فیصد کمی واقع ہوئی ہے۔ ماہرین نے کہا ہے کہ آبی ذخائر میں پانی کازیادہ ذخیرہ بھی اس نمی کی حد کو کم کرنے میں معاون ثابت نہیں ہوسکے گا۔

وزیر موصوف نے بتایاکہ یکم جون سے 6؍ ستمبر تک ریاست میں 721 ایم ایم بارش ہوئی۔ جو معمول کے مقابل بھلے ہی دو فیصد زائد ہو اس کے باوجود بھی 89تعلقہ جات میں بارش معمول کے مقابل کم رہی ہے، رائچور ضلع کا سندھنور تعلق ریاست میں خشک سالی سے متاثرہ بدترین تعلقہ ہے۔ انہوں نے کہاکہ بارش کی قلت کے سبب ریاست میں 15لاکھ ہیکٹر زمین کی فصلیں متاثر ہوئی ہیں۔اس سے آٹھ ہزار کروڑ روپیوں کے نقصان کا اندازہ لگایا گیا ہے۔

وزیر موصوف نے اس موقع پر خشک سالی سے متاثرہ تعلقہ جات کی فہرست بتائی جس میں بنگلور رورل ضلع کے ہوسکوٹہ، رام نگرم ضلع کے چن پٹن ، کنکاپورہ، کولار ضلع کے کولار ، بنگار پیٹ ، مالور ، ملباگل، سری نواس پور، چکبالاپور ضلع کے باگے پلی،چکبالا پور، چنتامنی ، گوری بدنور، گڑی بنڈے اور سدلگٹہ، ٹمکور ضلع کے چکنائکناہلی ، سرا ، گبی ،کورٹگیرے ، کنگل، مدھوگیری، پاؤگڑھ ، ٹپٹور اور ٹمکور شامل ہیں۔ چترادرگہ ضلع میں چلکیرے ، چترادرگہ، ہریور ، اور ملکالمرو ، داونگیرے ضلع میں ہرپن ہلی، ہری ہر، چامراج نگر ضلع میں کولیگال، یلندور ،منڈیا ضلع میں مدور ، ملوولی ، منڈیا ، ناگمنگل، اور سری رنگا پٹن، بلاری ضلع میں بلاری ، ہڑگلی ، ہوسپیٹ ، ہگری بمن ہلی ، کودلگی ، سنڈور ، سرگپہ، کوپل ضلع میں کوپل ، گنگا وتی، کشتگی ، یلبرگہ ، رائچور ضلع میں دیودرگ، لنگسگور ، مانوی ، رائچور، سندھنور، کلبرگی ضلع میں افضل پور، کلبرگی، چنچولی ، چیتا پور، جیورگی اور سڑم ، یادگیر ضلع میں شاہ پور ، شورا پور، اور یادگیر، بیدر ضلع میں بیدر اور ہمناباد ، بلگاوی ضلع میں رام درگ اور سودتی، باگلکوٹ ضلع میں باگلکوٹ ، بادامی ، ہندگند، جمکھنڈی، بیجاپور ضلع میں بیجاپور ، بسون باگے واڑی، انڈی، مدے بہال ، سندگی، گدگ ضلع میں گدگ ، مندرگی ، نرگند ، رون ، شرہٹی، ہاویری ضلع میں رانی بنور، دھارواڑ ضلع میں ہبلی ، نول گند، ہاسن ضلع میں ارسیکیرے ، بیلور، چنرائے پٹن، چکمگلور ضلع میں کڈور تعلقہ کو خشک سالی سے متاثرہ قرار دیا گیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

منگلورو:آر ایس ایس پرچارک تربیتی کیمپ میں امیت شاہ کی شرکت۔ سرخ دہشت گردی ، رام مندر، سبریملا اور انتخابات پر ہوئی خاص بات چیت

ملک کی مختلف ریاستوں میں اسمبلی انتخابات کی مصروفیت کے باوجود بی جے پی کے صدر امیت شاہ نے منگلورو میں آر ایس ایس ’ پرچارکوں‘ کے لئے منعقدہ 6 روزہ تربیتی کیمپ کے اختتام سے ایک دن پہلے ’سنگھ نکیتن‘ میں پہنچ نے کے لئے وقت نکالااور تربیتی کیمپ کے شرکاء سے خطاب کیا۔

مشاعروں کو با مقصد بنا کر نفرت کے ماحول کو پیار اور محبت میں بدلا جاسکتا ہے : سید شفیع اللہ

مشاعرے اردو زبان اور ادب کی تہذیب کے ساتھ ساتھ امن اور اتحاد کو فروغ دینے کا ذریعہ بھی ہیں۔ ملک اور سماج کے موجودہ حالات کو بہتر بنانے کیلئے زیادہ سے زیادہ مشاعروں کا انعقاد کیا جائے۔ بنگلورو میں بزم شاہین کے کل ہند مشاعرے میں ان خیالات کا اظہار کیا گیا۔

ٹیپوجینتی منسوخ کرنے کی کوئی تجویز نہیں ہے جواہر لال نہروکی جنم دن تقریب سے وزیراعلیٰ کااظہار خیال

کسانوں کی طرف سے حاصل کردہ زرعی قرضہ معاف کئے جانے کے سلسلہ میں شکوک وشبہات کا شکار نہ ہوں۔ قرضہ وصولی کیلئے کسانو ں کوغیر ضروری طور پر اذیت دی گئی تو بینک منیجرکو بھی گرفتار کیا جاسکتا ہے ۔