جموں وکشمیر: جواہر سرنگ کے قریب لینڈسلائڈنگ، 3 جوانوں کو نکالا گیا، 7 کی تلاش جاری

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 9th February 2019, 1:17 PM | ملکی خبریں |

سرینگر،9؍فروری(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) شمالی ہند میں ایک بار پھر سخت سردی نے واپسی کی ہے۔ جموں و کشمیر، ہماچل پردیش اور اتراکھنڈ میں خوب برفباری ہو رہی ہے۔جموں و کشمیر کے کولگام ضلع میں موجود جواہر سرنگ کے قریب برفباری اتنی بھاری ہوئی ہے، بہت سے پولیس اہلکار زد میں آ گئے۔یہاں برف کا ایک پہاڑ پولیس پوسٹ پر گر گیا، اس کی وجہ سے 10 پولیس اہلکار دب گئے تھے، حادثے کے بعد سرچ آپریشن شروع کیا گیا ہے، تاہم اس آپریشن میں 3 جوانوں کو محفوظ نکال لیا گیا ہے، باقی 7 کو نکالنے کا کام جاری ہے۔صرف پہاڑی ریاست کیا جمعرات کو تو دہلی، نوئیڈا سمیت قومی دارالحکومت علاقہ کے علاقے میں بھی ایسے حالات ہوئے جو برفباری جیسے ہی تھے۔جمعرات کو دہلی این سی آر میں ہوئی اولوں کی بارش سے ہر جگہ سفید چادر پھیل گئی۔آسمان سے مسلسل گر رہی برف کے درمیان زندگی کو آگے بڑھانے کی کوششیں جاری ہیں۔ آسمان سے مسلسل گر رہی برفباری کے درمیان گاڑیوں آہستہ آہستہ آگے بڑھ رہی ہیں، لوگوں کو دن میں بھی گاڑیوں کی ہیڈلائٹ اور انڈکیٹر جلاکرآگے بڑھناپڑرہا ہے۔آسمان سے جیسے ہی برف گرنی بند ہوتی ہے، لوگ گھروں کی چھت پر منجمد برف ہٹانے کا کام شروع کر دیتے ہیں. لیکن، دوبارہ برفباری شروع ہوتے ہی لوگوں کی مشکلیں دوبارہ بڑھ جاتی ہیں۔ جموں و کشمیر کے علاوہ اتراکھنڈ میں بھی حالات صحیح نہیں ہیں، یہاں کیدارناتھ مندر کے ارد گرد کی عمارتوں پر ایک سے دو فٹ برف جم گئی ہے، بھاری برفباری سے کیدارناتھ دھام میں بجلی اور پانی کی سپلائی 10 دنوں سے ٹھپ ہے، جان لیوا سردی کی وجہ سے پنرنما کے کام میں لگے زیادہ تر مزدور واپس لوٹ گئے ہیں۔یہاں مسلسل ہو رہی برفباری کی وجہ سے ٹریفک پر بھی اثر پڑ رہا ہے۔جموں و کشمیر، ہماچل پردیش اور اتراکھنڈ میں برف کی وجہ سے ریلوے اسٹیشن، بس اڈے، سڑک پر بچھی برف کی شیٹ نے گاڑیوں کا چلنا مشکل کر دیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

کورٹ نے راجیو سکسینہ کو بیرون ملک جانے کی اجازت دینے والے عدالت کے فیصلے پر روک لگائی

سپریم کورٹ نے آگسٹا ویسٹ لینڈ ہیلی کاپٹر سودے سے منسلک منی لانڈرنگ معاملے میں سرکاری گواہ راجیو سکسینہ کو دیگر بیماریوں کا علاج کرانے کے لئے بیرون ملک جانے کی اجازت دینے کے دہلی ہائی کورٹ کے حکم پر بدھ کو روک لگا دی