پی یو سی سال دوم کے امتحانی پرچے افشاء کرنے پر 5سال جیل اور5لاکھ روپے جرمانے کی سزا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th February 2018, 8:39 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو 10؍فروری (ایس او نیوز) ڈپارٹمنٹ آف پری یونیورسٹی ایجوکیشن سے جاری سرکیولر کے مطابق کرناٹکا ایجوکیشن ایکٹ 1983میں ترمیم کے بعد پری یونیورسٹی سال دوم کے پرچے افشاء (لِیک) کرنے والوں کے لئے اب 5سال تک کی جیل اور5لاکھ روپے جرمانے کی سزاتجویز کی گئی ہے۔

پی یو کالجس کے نام جاری سرکیولر میں کالج کے ذمہ داران کو ہدایت دی گئی ہے کہ اس نئی ترمیم اور سز ا کے بارے میں طلباء کے والدین کو آگاہ کریں اور بتائیں کہ طلباء سمیت جو کوئی بھی سال دوم کا امتحانی پرچہ لِیک کرنے کا مجرم پایا جائے گا اسے مذکورہ بالاسزا بھگتنی پڑے گی۔نئے قانون کے مطابق افشاء کیا گیا پرچہ خریدنے والابھی اسی سزاکا مستحق ہوگا۔

ڈپارٹمنٹ آف پی یو ایجوکیشن کی ڈائریکٹرسی شیکھانے کہا کہ:’’اس سے قبل پرچہ افشاء ہونے سے متعلق جو تشریح تھی وہ کچھ زیادہ واضح نہیں تھی۔ اب اس نئی ترمیم کے بعد اس کا دائرہ وسیع ہوگیا ہے ۔ اور پرچے کے سوالات کو امتحان سے قبل سوشیل میڈیا پر پھیلانا بھی پیپر لیک کرنے کے زمرے میں شامل کردیا گیا ہے۔ اب محکمہ اس قانون کو سختی کے نافذ کرے گا اور ایسے لوگوں کے خلاف کٹھن کارروائیاں کی جائیں گی۔‘‘

خیال رہے کہ سال 2016میں کیمسٹری کے پرچے ایک سے زائد بار افشاء کیے گئے تھے۔ اس طرح پیپر لیک ہونے سے تقریباً2لاکھ طلباء متاثر ہوئے تھے۔ اسی پس منظر میں 1983ایکٹ میں ترمیم کی گئی اور سزا کا دائرہ بڑھایا گیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹک کی کانگریس حکومت پر نشانہ لگانے پر سدرامیا نے کیا پلٹ وار؛ کہا مودی میں وزیراعظم بننے کی صلاحیت ہی نہیں

کرناٹک کی کانگریس حکومت پر نشانہ سادھنے پر پلٹ وار کرتے ہوئے ریاست کے وزیر اعلیٰ سدرامیا نے وزیراعظم نریندر مودی کو جھوٹ کا پلندہ   قرار دیتے ہوئے    کہا  کہ نریندر مودی   میں وزیراعظم بننے کی صلاحیت ہی نہیں ہے

کانگریس لیڈر کی بی بی ایم پی دفتر کو آگ لگادینے کی دھمکی؛سی سی ٹی وی میں قیدہوا پورا منظر؛ سدارامیا نے دکھایا پارٹی سے باہر کا راستہ

کانگریس لیڈر نارائن سوامی کے  بی بی ایم پی دفتر میں گھس کر پٹرول چھڑکنے اوردفتر کو آگ لگادینے کی دھمکی کی وڈیو نیوز چینلوں میں نشر ہونے کے بعد فوری حرکت کرتے ہوئے سدرامیا نے نارائن سوامی کو   کانگریس پارٹی سے باہر کا راستہ دکھادیا ہے۔

این اے حارث نے فرزند کی حرکت پر اسمبلی میں کی معذرت خواہی

رکن اسمبلی این اے حارث کے فرزند نلپاڈ محمد کی طرف سے کل پیر کو ایک طالب العلم کو زودوکوب کرنے کا معاملہ سامنے آنے کے بعد آج این اے حارث نے ریاستی اسمبلی میں معذرت طلب کی اور کہا کہ ان کے بیٹے کی حرکت کی وجہ سے  اُنہیں جس طرح ندامت اُٹھانی پڑی، وہ وقت کسی باپ پر نہ آئے۔

بی جے پی صدر امت شاہ کا کرناٹک دورہ؛ کرناٹک سے کانگریس کو اُکھاڑ پھینکنے کا کیا دعویٰ

کرناٹک کے دورہ پر آئے  بی جے پی کے قومی صدر امت شاہ نے کانگریس پر حملہ بولتے ہوئے کہا کہ کرناٹک حکومت لوگوں کی اُمیدوں پر پورا اُترنے میں بری طرح ناکام ہوگئی ہے۔جس کی بنا پر  آئندہ انتخابات میں یہاں بی جے پی کو شاندار جیت حاصل ہوگی۔ وہ یہاں مینگلور کے قریب سولیا میں منگل ...