5 تا 16/ جون ریاستی لیجسلیچر کا بقیہ بجٹ اجلاس

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 18th May 2017, 1:31 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو:17/مئی(ایس او نیوز) ریاستی لیجسلیچر کا بقیہ بجٹ اجلاس 5/ سے 16جون تک طلب کیاگیا ہے۔ آج وزیر اعلیٰ سدرامیا کی صدارت میں منعقدہ کابینہ میٹنگ میں یہ فیصلہ لیا گیا ہے۔ کابینہ میٹنگ کی تفصیلات سے میڈیا کو آگاہ کراتے ہوئے وزیر قانون وپارلیمانی امور ٹی بی جئے چندرا نے بتایاکہ بجٹ کا بقیہ اجلاس ودھان سودھا میں 5تا16/ جون مقرر ہوگا۔ انہوں نے کہاکہ اکرما سکرما اسکیم کے تحت سائٹوں کو باقاعدگی دینے کیلئے درج فہرست طبقات کو پانچ ہزار روپے ادا کرنے پڑیں گے، اور عام زمرے کے لوگوں کو حسب معمول فیس ادا کرنی پڑے گی۔کابینہ نے آج اس فیس کو منظوری دی۔ شہری علاقوں میں پائپ لائن کے ذریعہ رسوئی گیس کی فراہمی کے متعلق کابینہ نے ایک نئی کمپنی تشکیل دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ کے ایس ایس آئی ڈی سی اور گیاس اتھارٹی آف انڈیا پرمشتمل کمپنی شہر کے مختلف علاقوں میں پائپ لائن کے ذریعہ رسوئی گیاس مہیا کرائے گی۔ شہر کے ماگڑی روڈ پر زیر تعمیر آروگیہ بھون کی تکمیل کیلئے پہلے اور دوسرے مرحلے کے پراجکٹ کیلئے کابینہ نے مزید22.85کروڑ روپے منظور کئے۔کوشیلیا ابھیرودھی مشن کے تحت فروغ ہنر کی کارروائیوں کو تقویت دینے کیلئے دیگر ایجنسیوں کے قیام پر بھی اتفاق کیاگیا۔ مرکزی حکومت کی اسکیم کے تحت سبسیڈی پر اناج حاصل کرکے مختلف خوردنی اسکیموں کیلئے حکومت نے مفت اناج فراہم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ راشن کی دکانوں کی سطح پر بیداری کمیٹیاں اور مضبوط کرنے اور ان کے ذریعہ راشن کی دکانوں پر نگرانی یقینی بنانے کیلئے بھی کابینہ نے پہل کی ہے۔ 

ایک نظر اس پر بھی

اسکولی بچوں کے سوشیل میڈیا استعمال کرنے پر پابندی،پابندی پامال کرنے والوں کو اسکول سے نکال دینے کی تاکید

ریاستی محکمۂ تعلیمات نے کمسن ذہنوں پر سوشیل میڈیا کے اثرات کو دیکھتے ہوئے سختی سے یہ فرمان جاری کیا ہے کہ 13سال کی عمر تک کے بچوں کو سوشیل میڈیا کا استعمال کرنے کی اجازت قطعاً نہ دی جائے۔

مودی حکومت کے انسداد گؤ کشی قانون کو کمار سوامی نے قرار دیا خوش آئند: گائیوں کی دیکھ بھال کیلئے مراکز قائم کرنے کا بھی مشورہ

مرکزی حکومت کی طرف سے کل ملک بھر میں لاگو کئے گئے انسداد گؤ کشی قانون کا سابق وزیراعلیٰ اور ریاستی جنتادل(ایس) صدر ایچ ڈی کمار سوامی نے خیر مقدم کیااور کہاکہ مرکزی حکومت کو چاہئے کہ اس قانون کو نافذ کرنے کے ساتھ ملک بھر میں گائیوں کی دیکھ بھال کیلئے مراکز قائم کرے۔

موسلادھار بارش کی وجہ سے شہر میں عام زندگی متاثر،نشیبی علاقے زیر آب ، دوسو سے زائد درخت اور متعدد بجلی کے کھمبے زمین بوس

شہر میں کل رات ہوئی زبردست بارش کے سبب 200 سے زائد مقامات پر درخت اور بجلی کے کھمبے اکھڑگئے اور ساتھ ہی نہ صرف نشیبی علاقے بلکہ چند مشہور ومعروف سرکاری اور دیگر عمارتوں میں بھی بارش کا پانی گھس آیا۔