وشویشوریا ٹیکنالوجیکل یونیورسٹی (وی ٹی یو) کے200؍میں سے 44؍کالج غیر معیاری

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 1st August 2018, 11:29 AM | ریاستی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بنگلورویکم اگست (ایس او  نیوز) وشویشوریا ٹیکنالوجیکل یونویرسٹی سے ملحق دو سو انجینئرنگ کالجوں میں سے 44؍کالجوں کو سی اور ڈی زمرہ میں شامل کیا گیا ہے ، واضح رہے کہ ایسے کالج جن میں بنیادی ڈھانچہ کی کمی ہوتی ہے یا جہاں با صلاحیت تدریسی عملہ کی قلت ہوتی ہیں ان کالجوں کو سی اور ڈی کے زمرہ میں شمار کیا جاتا ہے۔یہ زمرہ بندی حال ہی میں مقامی تحقیقاتی کمیٹی ( ایل آئی سی) کی طرف سے داخل کردہ رپورٹ کی بنیاد پر کی گئی ہے ، اس رپورٹ کو یونیورسٹی کی اکیڈمک سینیٹ کے سامنے پیش کیا گیا تھا۔

ان44؍ میں سے8؍سرکاری کالج ہیں اور باقی تمام خانگی کالج ہیں جن میں امدادی اور غیر امدادی دونوں شامل ہیں، اس تمام کالجوں کے صدر مدرسین کو اس تعلق سے اطلاع فراہم کرنے کے لئے مراسلہ روانہ کر دیا گیا ہے۔نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے یونیورسٹی کے رجسٹرار پروفیسر جگناتھ ریڈی نے بتایا کہ ’’ان کالجوں کو یہ تنبیہ کی گئی ہے کہ جہاں تک بنیادی ڈھانچہ اور تدریسی عملہ کا معاملہ ہے وہ آل انڈیا کونسل فار ٹیکنیکل ایجوکیشن (اے آئی سی ٹی اجی) اور وی ٹی یو کے ضابطوں کو پورا کرنے کی کوشش کریں ۔اگر وہ اگلی مرتبہ ایل آئی سی کے دورے سے قبل خود کو بہتر بنانے میں ناکام ہو تے ہیں تو ان کالجوں کے خلاف اگلے اقدام کے لئے یونویرسٹی مجبور ہوگی‘‘۔

اپنے دورے کے دوران ایل آئی سی نے جن باتوں کا مشاہدہ کیا ہے ان کے مطابق ان 44؍ کالجوں میں مناسب بنیادی ڈھانچہ کا فقدان ہے، تجربہ گاہوں کی سہولیات بھی میسر نہیں ہیں ، اتنا ہی نہیں بلکہ اساتذہ بھی بہتر اہلیت کے حامل نہیں ہیں، جس کی وجہ سے ان کالجوں کو سی اور ڈی کے زمرات میں شامل کیا گیا ہے اور ان کے خلاف اقدامات کرتے ہوئے یونیورسٹی نے ان کے نام تنبیہی خطوط روانہ کئے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

امبیڈنٹ گھوٹالہ پر پردہ ڈالنے کی منظم سازش گھپلہ باز وجئے تا تا کو بچانے میں سینئر پولیس افسرملوث :ویدیکے

امبیڈنٹ چٹ فنڈ کمپنی کے گھوٹالہ معاملہ پر پردہ ڈالنے کی منظم کوشش ہورہی ہے ۔ حکومت کرپٹ سیاستدانوں کو بچانے کیلئے امبیڈنٹ سے دھوکہ کھائے متاثرین کے ساتھ ناانصافی کررہی ہے۔

ریاست کرناٹک میں پلاسٹک پر پابندی سے تمام اقتصادی شعبہ جات متاثر

یاست کرناٹک اور خاص طور پر بنگلور شہر میں پلاسٹک پر پابندی کے اقدام کو حکام اور افسران کی طرف سے پوری شدت کے ساتھ نافذ کیا جا رہا ہے اور اس کی وجہ سے پلاسٹک کا کاروبار کرنے والے افراد خاص طورپر بہت ہی زیادہ متاثر ہو رہے ہیں۔

بی جے پی سیاسی فائدہ کی خاطر ایوان میں غیر ضروری معاملے نہ اٹھائے :ضمیر احمد خان وقف بورڈ میں دھاندلیوں کاجائزہ لینے حکومت نے کوئی کمیٹی تشکیل نہیں دی۔مانپاڑی کمیٹی غیر قانونی

ریاستی وزیر برائے امور اقلیت ، اوقاف اور حج بی زیڈ ضمیر احمد خان نے آج ریاستی قانون ساز کونسل میں کہا کہ بشمول شمالی کرناٹک ریاست کی ترقی اور مسائل پر بحث و مباحثہ کے لئے بیلگاوی اسمبلی سیشن منعقد کیا گیا ہے ۔

بھٹکل کے مرڈیشور میں دو لوگوں پر حملے کی پولس تھانہ میں دو الگ الگ شکایتیں

تعلقہ کے مرڈیشور میں کل جمعرات کو  دو لوگوں پر حملہ اور پھر جوابی حملہ کے تعلق سے آج مرڈیشور تھانہ میں دو الگ الگ شکایتیں درج کی گئی ہیں اور پولس نے دونوں پارٹیوں کی شکایت درج کرتے ہوئے چھان بین شروع کردی ہے۔