کرناٹک میں اقلیتوں کی بہبودی کیلئے 3850 کروڑ خرچ کئے گئے

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th January 2018, 10:43 AM | ریاستی خبریں |

کلبرگی،12؍جنوری(ایس او نیوز) وائی سعید احمدچیرمین کرناٹک پردیش کانگریس کمیٹی (کے پی سی سی)نے دورہ کلبرگی کے موقع پر گرانڈ ہوٹل کلبرگی میں ایک صحافتی بیان میں کہا کہ9جنوری کو کانگریس اقلیتی سیل کلبرگی زون کاایک اجلاس منعقد ہوا۔اس اجلاس میں کرناٹک پردیش کانگریس کمیٹی اقلیتی ڈپارٹمنٹ حیدر آباد کرناٹک زون کے صدرنشین بابا نذر محمد خان ، فاتحہ خوانی ،رفیق حسین ابو اور سارے ضلع کلبرگی کے صدور و عہدہ داران کانگریس شریک تھے ۔سعید احمد نے کہا کہ گزشتہ4 سال7 مہینوں کے دوران کرناٹک میں وزیراعلیٰ سدرامیاکی قیادت میں خاص طور پر اقلیتی طبقات کے جو بھی مسائل تھے ان کی یکسوئی میں اور انھیں حل کرنے میں سدرامیا جی نے تمام اقلیتی طبقات اوراقلیتی طبقات کے قائدین کا شانہ بہ شانہ ساتھ دیا ہے ۔انھوں نے کہا کہ ریاستی حکومت کی جانب سے اقلیتی طبقات کی فلاح و بہبود کی خاطر3850 کروڑ روپئے خرچ کئے گئے ۔اقلیتوں کی بھلائی کے لئے ان ساری باتوں کو مد نظر رکھتے ہوئے تمام اقلیتی طبقات کیلئے اخلاقی طور پر ضروری ہے کہ وہ کانگریس کا ساتھ دیں۔انہوں نے کہا کہ کرناٹک کے50لاکھ سے زیادہ اقلیتی طبقات کے افراد کو ریاستی حکومت کی فلاحی اسکیموں سے فائدہ پہنچا ہے ۔ انھوں نے بتایا کہ اوقافی جائیدادوں کے لئے 79کروڑ روپئے جاری کئے گئے ہیں۔ اقلیتوں کے لئے ودیا شری تعلیمی اسکیم اور شادی بھاگیہ اسکیم کے245کروڑ روپئے جاری کئے گئے ۔ اقلیتی طلبا کے لئے150سے زیادہ ہاسٹلس تعمیر کئے گئے ۔ عیسائی اقلیتوں کی ترقی کے لئے 267کروڑ روپئے جاری کئے گئے ۔ اس موقع پر سعید احمدنے قوم کے نوجوانوں سے گزارش کی کہ وہ بی جے پی کے منصوبوں سے ہوشیار رہیں کیوں کہ بی جے پی فرقہ وارانہ فسادات بر پا کرنے اور فرقہ وارانہ ماحول بنانے کی کوشش کررہی ہے ۔ نوجوانوں کو ہوش کے ساتھ کام لیناچاہئے صرف جوش کے ساتھ نہیں ۔

ایک نظر اس پر بھی

امبیڈنٹ گھوٹالہ پر پردہ ڈالنے کی منظم سازش گھپلہ باز وجئے تا تا کو بچانے میں سینئر پولیس افسرملوث :ویدیکے

امبیڈنٹ چٹ فنڈ کمپنی کے گھوٹالہ معاملہ پر پردہ ڈالنے کی منظم کوشش ہورہی ہے ۔ حکومت کرپٹ سیاستدانوں کو بچانے کیلئے امبیڈنٹ سے دھوکہ کھائے متاثرین کے ساتھ ناانصافی کررہی ہے۔

ریاست کرناٹک میں پلاسٹک پر پابندی سے تمام اقتصادی شعبہ جات متاثر

یاست کرناٹک اور خاص طور پر بنگلور شہر میں پلاسٹک پر پابندی کے اقدام کو حکام اور افسران کی طرف سے پوری شدت کے ساتھ نافذ کیا جا رہا ہے اور اس کی وجہ سے پلاسٹک کا کاروبار کرنے والے افراد خاص طورپر بہت ہی زیادہ متاثر ہو رہے ہیں۔

بی جے پی سیاسی فائدہ کی خاطر ایوان میں غیر ضروری معاملے نہ اٹھائے :ضمیر احمد خان وقف بورڈ میں دھاندلیوں کاجائزہ لینے حکومت نے کوئی کمیٹی تشکیل نہیں دی۔مانپاڑی کمیٹی غیر قانونی

ریاستی وزیر برائے امور اقلیت ، اوقاف اور حج بی زیڈ ضمیر احمد خان نے آج ریاستی قانون ساز کونسل میں کہا کہ بشمول شمالی کرناٹک ریاست کی ترقی اور مسائل پر بحث و مباحثہ کے لئے بیلگاوی اسمبلی سیشن منعقد کیا گیا ہے ۔