ملپے بوٹ کی گمشدگی کا معاملہ؛ بوٹ سمیت ماہی گیروں کا سراغ لگانے 200 بوٹ لے کر ماہی گیر خود نکل پڑے؛ مہاراشٹرا میں قید رکھے جانے کا وزیر ماہی گیری کو شک

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 14th January 2019, 2:49 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں | ملکی خبریں |

منگلورو14؍جنوری (ایس او نیوز) گہرے سمندر میں ماہی گیری کے دوران 15دسمبر کو لاپتہ ہونے والی کشتی سمیت اُس پر سوار سات  ماہی گیروں کا ابھی تک کوئی سراغ نہیں ملا ہے جس کو لے کر پورے ساحلی کرناٹکا کے ماہی گیروں میں سخت تشویش پائی جارہی ہے۔ سرکار کی طرف سے تلاشی مہم برابر جاری ہے مگر ہنوز کوئی پتہ نہ چلنے سے اب ماہی گیروں نے خود سمندر میں اُتر کر لاپتہ بوٹ کا پتہ لگانے کا فیصلہ کیا ہے۔ ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق ملپے سے قریب دو سو بوٹوں پر سوار سینکڑوں ماہی گیر  لاپتہ بوٹ کا پتہ لگانے سمندر میں اُترچکی ہیں۔

اس دوران کبھی انٹلی جنس بیوریو کے حوالے سے اور کبھی وزراء کے حوالے سے کئی طرح کے شکوک و شبہات پیش  ظاہر کیے جارہے ہیں۔ ابھی ایک دن قبل اس کو’سمندری جہاد‘ کے تربیت یافتہ پاکستانی دہشت گردوں کی کارستانی سے جوڑنے والی خبریں میڈیا میں آئی تھیں۔ مگر اب ریاستی وزیر ماہی گیری وینکٹ راؤ ناڈاگوڈا نے بنگلورو میں اخبار نویسوں سے بات چیت کے دوران شبہ ظاہر کیا ہے  کہ مہاراشٹرا کے رتناگیری اور سندھو درگ کے علاقے میں ان ماہی گیروں کو قید کرکے رکھا گیا ہوگا۔ اس سلسلے میں وزارت داخلہ، کوسٹ گارڈبحریہ اور اِسرو وغیرہ کے تعاون لینے ، وائرلیس پیغامات سے کچھ سراغ لگنے ، مہاراشٹرا اور گوا کی حکومتوں کے ساتھ بات چیت ہونے کے بارے میں بھی انہوں نے  اشارے کیے۔ 

لیکن دوسری طرف وزیر داخلہ ایم بی پاٹل نے صاف انکار کرتے ہوئے کہا کہ’’ ماہی گیروں کے تعلق سے کسی قسم کا سراغ ملنے کی باتیں بالکل غلط ہیں۔ بات صرف اتنی ہے کہ حکومت اپنے طور پر پوری کوشش کررہی ہے اور تلاشی مہم تیزی کے ساتھ جاری ہے۔‘‘

ذرائع سے ملنے والی اطلاع  کے مطابق فی الحال اُڈپی ڈسٹرکٹ  پولس کی قیادت میں پولیس کی 2ٹیمیں’ سوورنا بھوجا‘ نامی لاپتہ کشتی اور سات ماہی گیروں کی تلاش میں لگی ہوئی ہیں۔جو مہاراشٹرا کے رتناگیری، سندھودرگ ، گوا اور کیرالہ کے مختلف علاقوں میں سرچ آپریشن چلارہی ہیں ان کے ساتھ مقامی ماہی گیروں کو بھی شامل کیا گیا ہے، مگر  کہیں سے بھی تاحال کوئی بھی مثبت سراغ ہاتھ نہیں لگا ہے ۔ 

اس بات کی بھی خبر ملی ہے کہ اُڈپی کے ضلعی ایس پی لکشمن نمبرگی نے ممبئی ایس پی سے درخواست کی ہے کہ وہ اُس  وائرلیس پیغام کے تعلق سے  جانکاری حاصل کریں جو سندھودرگ کے مالوان  کے بعض ماہی گیروں نے سُنا تھا ، جس میں ایک بوٹ سے   پوچھا جارہا  تھا کہ کیا وہاں کوئی حادثہ پیش آیا ہے ؟ 

ملپے سے 200 بوٹ سراغ لگانے کے لئے سمندر میں اُتر گئیں:   اس دوران پچھلے کئی دنوں سے ہڑتال کرنے اور سمندر میں ماہی گیری کے لئے نہ نکلنے والی کشتیوں نے ملپے بندرگاہ سے دوبارہ سمندر میں اترنے کا فیصلہ کیا تا کہ ماہی گیری کے ساتھ ساتھ لاپتہ افراد اور کشتی کا پتہ لگانے کی مہم میں ساتھ دیا جاسکے۔ماہی گیروں کی تنظیم کے صدر ستیش کُندر کے مطابق سنیچر کی رات سے ہی تقریباً 200ماہی گیر کشتیاں سمندر میں نکل گئیں۔ اس کے علاوہ ماہی گیروں کی تلاشی مہم میں تعاون کرنے کے لئے مختلف ماہی گیر تنظیموں سے وابستہ 26 مچھیروں پر مشتمل ایک کمیٹی تشکیل دی گئی ہے ، جو پولیس اور دیگر محکمہ جات کی طرف سے کی جارہی تلاشی کی نگرانی کرے گی۔ انہوں نے بتایا کہ جب تک لاپتہ کشتی اور مچھیروں کا پتہ نہیں چلتا، تب تک یہ ٹیم پوری طرح سرگرم رہے گی۔

ستیش کندر نے بتایا کہ مزید دو دنوں تک تحقیقاتی سرگرمیوں اوراس کے نتائج کا جائزہ لینے کے بعد اگلی کارروائی کے سلسلے میں فیصلہ کیا جائے گا۔کیونکہ ڈسٹرکٹ انچارج وزیر جیا مالا سے اِسرو سے تعاون لینے کے بارے میں پوچھنے پر کوئی واضح جواب نہیں ملا ہے۔ اس مسئلے کو وزیر داخلہ ایم بی پاٹل کے سامنے لایا جائے گا۔

یاد رہے کہ ملپے سے ماہی گیری کے لئے اُتر ی بوٹ پر  ملپے کے دو، بھٹکل کے دو، کمٹہ کے دو اور ہوناور تعلقہ کے منکی کا ایک ماہی گیر سوار تھا، یہ لوگ 13 ڈسمبر کو ماہی گیری کے لئے ملپے بوٹ سے روانہ ہوئے تھے، 15 ڈسمبر کو ان سے رابطہ منقطع ہوگیا تھا، تب سے لے کر اب تک ان کا کوئی سراغ نہیں مل پایا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

اسپتال قائم کرنا میری ذمہ داری نہیں ہے: کاروار میں ایم پی اننت کمار ہیگڈے کا تکبرانہ بیان

ضلع شمالی کینرا میں ایک ٹراما سینٹر اور سوپر اسپیشالٹی ہاسپٹل تعمیر کرنے کے لئے سوشیل میڈیا جو مہم چلائی جارہی ہے اور متعلقہ محکمہ جات کے افسران کو میمورنڈم دئے جارہے ہیں اس سلسلے میں ضلع کے رکن پارلیمان اننت کمار ہیگڈے نے اب تک کسی قسم کاردعمل ظاہر نہیں کیاتھا۔ الٹے سوشیل ...

اڈپی کے موٹر بائک شوروم میں بھیانک آتشزدگی۔ فائربریگیڈ کی بروقت کارروائی سے ٹل گیا سنگین حادثہ

یہاں اندرالی ریلوے پل سے قریب واقع ہیرو ہونڈا موٹربائک کے جئے دیوا شو روم میں اتوار کی شب میں بھیانک آتشزدگی کا واقعہ پیش آیا۔ چونکہ اس شوروم سے متصل پٹرول بنک موجود ہے اس لئے حادثہ سنگین رخ اختیار کرنے کے امکانات پیدا ہوگئے تھے، لیکن فائر بریگیڈ عملے کی بروقت کارروائی کی وجہ ...

منگلورو میں ڈینگی بخار کے 40مشتبہ مریض اسپتال میں داخل۔ریاستی سطح پر% 70ملیریا کے معاملات منگلورو میں درج ہوئے

گزشتہ تین ہفتوں کے دوران منگلورو کے گجّر کیرے نامی علاقے میں ڈینگی بخار کے 40مشتبہ مریض اسپتال میں داخل کیے گئے ہیں تفتیش کے بعد ان میں سے ایک معاملے میں ڈینگی بخار کی تصدیق ہوگئی ہے۔

منگلورو ایئر پورٹ پر 20.67لاکھ روپے مالیت کا سونا ضبط

منگلورو انٹرنیشنل ایئر پورٹ پر سونا اسمگلنگ کرنے کی کوشش کو ناکام بناتے ہوئے کسٹم کے افسران نے ایک مسافر کے قبضے سے 24کیریٹ کا608  گرام سونا ضبط کرلیا جو مسافر نے پیسٹ کی شکل میں اپنے مقعد میں چھپاکر رکھا تھا۔

کاروار میں شراب کے نشے میں دُھت کار چلانے کے دوران چار سواریوں کو ٹکر دینے کے بعد عوام نے نیوی اہلکار کی لی خوب خبر

نیوی اہلکار کو کاروار میں  اُس وقت عوام  کے ہاتھوں بری طرح    پٹنا پڑا جب  شراب کے نشے میں ڈرائیونگ کرنے کے دوران اس کی کار  یکے بعد دیگرے چار کاروں سے ٹکرا گئی۔ واردات  کاروار کے بِنگا میں کدمبا نیوی کے گیٹ کے قریب سنیچر شب کو  پیش آیا۔

آئی ایم اے معاملہ:منصورخان نے کی خودسپردگی کی پیشکش،ویڈیو پیغام میں جان کے خطرے کے خدشے کا اظہار-پولیس کمشنر کے سامنے تمام تفصیلات رکھنے کی یقین دہانی

ای ڈی کے ذریعہ سمن جاری ہونے کے تین دن کے بعد گذشتہ 8 جون سے مفرور آئی ایم اے کے منیجنگ ڈائرکٹر محمدمنصورخان نے اپنی زندگی کا ثبوت دیتے ہوئے ایک ریکارڈ ویڈیو پیغام پولیس کمشنر الوک کمار اوردیگر سرمایہ کاروں کے لئے ریلیز کیا -

لوگوں کا دکھ درد جاننے دیہات کے دورے پر نکلے وزیراعلی کمارسوامی، اسکول کی فرش پر گزاری رات

کرناٹک کے وزیر اعلی ایچ ڈی کمارسوامی گرام قیام پروگرام کے تحت دیہاتوں  کا دورہ کر رہے ہیں،وہ جمعہ کو جنوبی کرناٹک میں یادگیر ضلع میں گرمیتکل تعلقہ میں آنے والے چندرکی گاؤں پہنچے جہاں گاؤں والوں نے جم کر ان کا استقبال کیا۔ ...

الیکشن کمیشن کا حلف نامہ - گجرات میں راجیہ سبھا انتخابات قانون کے مطابق، کمزور پڑ رہی کانگریس 

گجرات میں راجیہ سبھا انتخابات کو لے کر کانگریس کی درخواست پر الیکشن کمیشن نے حلف نامہ داخل کیا ہے الیکشن کمیشن نے دو سیٹوں پر الگ الگ انتخابات کرانے کے اپنے فیصلے کو برقرار رکھا۔

بی ایس این ایل کی حالت خراب؛ ملازمین کو جون کی تنخواہ دینے کے لیے نہیں ہیں رقم

رکاری ٹیلی کام کمپنی بی ایس این ایل نے حکومت کو ایک خط  بھیجا ہے، جس میں کمپنی نے آپریشنز جاری رکھنے میں تقریبا نااہلی ظاہر کی ہے۔کمپنی نے کہا ہے کہ رقم میں  کمی کے سبب کمپنی کے ملازمین کو  جون ماہ کی تنخواہ  تقریبا 850 کروڑ روپے  دے پانا مشکل ہے۔کمپنی پر ابھی قریب 13 ہزار کروڑ ...