ہندواڑہ میں تصادم، لشکر کے دودہشت گرد ہلاک

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 11th September 2018, 8:32 PM | ملکی خبریں |

جموں،11؍ ستمبر (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) جموں و کشمر کے ہندواڑہ کے لنگیٹ میں سیکورٹی دستوں اور دہشت گردوں کے درمیان ہوئے ایک تصادم میں سیکورٹی دستوں نے لشکر طیبہ کے دو دہشت گردوں کو مار گرایا ہے۔ سیکورٹی دستوں کے ذریعہ جائے وقوع سے دہشت گردوں کی لاشوں کے ساتھ ہتھیار اور گولہ بارود بھی برآمد کیا گیا ہے۔آخری خبریں موصول ہونے تک سیکورٹی دستے علاقہ میں تلاشی مہم چلارہے تھے۔

موصولہ اطلاع کے مطابق پیر کی شب ڈھائی بجے کے قریب لنگیٹ کے گلورا علاقہ میں دہشت گردوں کی موجودگی کی اطلاع کی بنیاد پر فوج کی 30آر آر(راشٹریہ رائفلز)، سی آر پی ایف کی 92بٹالین اور پولس کے جوانوں کی ایک مشترکہ ٹیم نے پورے علاقہ کو گھیر کر دہشت گردوں کوپکڑنے کے لئے تلاشی مہم چلائی۔تلاشی مہم کے دوران علاقہ میں چھپے دہشت گردوں نے سیکورٹی دستوں کو قریب آتا دیکھ کرگولہ باری شروع کر دی۔ اس کے بعد تصادم شروع ہو گیا۔ منگل کی صبح تک چلے تصادم میں سیکورٹی دستوں نے لشکر کے دو دہشت گردوں وک مار گرایا ۔سیکورٹی دستوں کے ذریعہ دہشت گردوں کی لاشوں کو برآمد کر لیا گیا ہے۔ ڈی جی پی دلباغ سنگھ نے اس تصادم کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ آپریشن تقریباً ختم ہو گیا ہے۔ اس دوران تصادم کے پیش نظر انتظامیہ نے ہندواڑہ کے کئی علاقوں میں موبائل انٹرنیٹ خدمات منسوخ کردی ہیں۔ تصادم میں دو دہشت گردوں کی موت کی وجہ سے تشدد پھیلے کے خدشہ کے پیش نظر انتظامیہ نے منگل کے روز جی ڈی سی ہندواڑہ اور لنگیٹ و ماوار علاقوں میں ہائر سیکنڈری تک کے اسکولوں میں بند رکھنے کا فیصلہ لیا گیا ہے۔ 
 

ایک نظر اس پر بھی

سابق وزیراعظم دیوے گوڈا کا بھٹکل دورہ؛ کہا، جمہوریت خطرے میں ہے، اُسے بچانے کے لئے ہر شہری کو آگے آنا ہوگا

اس بار کے انتخابات سب سے زیادہ اہم اس لئے  ہے کہ مودی کے زیر اقتدار ملک کی جمہوریت کو خطرہ لاحق ہوگیا ہے۔جب سے مودی ملک کے وزیراعظم  بنے ہیں ملک کے سرکاری جمہوری اداروں میں  دخل اندازی سے  عدالت تک محفوظ نہیں ہے، ریزروبینک آف انڈیا  ہو ، انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ ہو، سی بی آئی ...

آگرہ - لکھنو ایکسپریس وے پرخطرناک حادثہ، 7 لوگوں کی موت اور34 زخمی

اترپردیش میں مین پوری کے پاس آگرہ - لکھنوایکسپریس وے پرہفتہ دیررات خطرناک سڑک حادثہ ہوا۔ یہاں مین پوری ضلع کے کرہل تھانہ علاقے کے پاس دہلی سے وارانسی جارہی ایک پرائیویٹ بس بے قابوہوکرایک ٹرک کے ساتھ ٹکراگئی۔ اس خطرناک سڑک حادثے میں کم از کم7 لوگوں کی موت ہوگئی جبکہ 30 سے زیادہ ...

چیف جسٹس آف انڈیا پرجنسی ہراسانی کا الزام سماعت کے لئے بنچ مقرر۔ الزامات بے بنیاد من گھڑت ہیں۔ عدلیہ خطرہ میں: سی جے آئی

ہندوستان کہاں جارہاہے؟ دلدل کی طرف یا پھر عروج کی اپنی آخری منزل کی طرف۔ موجودہ وقت میں یہ ایسے سوالات ہیں جو ہر ہندوستانی شہری کے ذہن پر کچو کے لگارہے ہیں۔ اقتدار پر بر قرار رہنے کے لئے وزارت عظمیٰ کے تقدس اور اس کے احترام کا بھی خیال نہیں کیاجاتا۔دوسری طرف سب سے بڑا انصاف کا ...