کرناٹک کو انیل بھاگیہ اسکیم سے زیادہ کنکشن فراہم کرنے کا مطالبہ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th September 2018, 9:15 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،10؍ستمبر(ایس اونیوز) وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی نے آج مرکزی وزیر برائے پٹرولیم دھرمیندر پردھان سے مطالبہ کیا کہ ریاستی حکومت کو مرکزی حکومت کی انیل بھاگیہ اسکیم کے تحت زیادہ گیس کنکشن مہیا کرائے جائیں اور کرناٹک میں اجولا اسکیم کے نفاذ کے لئے مرکزی حکومت بھرپور تعاون کرے۔

وزیر اعلیٰ نے مرکزی وزیر سے کہا کہ تیل کمپنیوں کو ہدایت دی جائے کہ وہ شہری اور دیہی علاقوں میں خط افلاس سے نیچے زندگی بسر کرنے والے خاندانوں کو اجولا اسکیم کے تحت گیس کنکشنوں کی فراہمی میں تاخیر نہ کرے۔ انہوں نے کہاکہ وزیر اعظم اجولا اسکیم کے تحت غریب خاندانوں کو مفت ایل پی جی کنکشن اور دو سلینڈر مہیا کرانے کی اسکیم کو ریاستی حکومت نے وزیراعلیٰ انیل بھاگیہ اسکیم سے مربوط کیا ہے۔ اس اسکیم کے تحت اگلے 18تا24ماہ کے دوران 30لاکھ خاندانوں کو گیس کنکشن مہیا کرائے جائیں گے۔

وزیر اعلیٰ نے بتایاکہ 2018کی شروعات میں ہی اس اسکیم کے نفاذ کی پہل کی گئی تھی، لیکن انتخابات کی وجہ سے اسے ٹالنا پڑا۔ انہوں نے مرکزی وزیر سے مانگ کی کہ تیل کمپنیوں کو ہدایت دی جائے کہ ستمبر کے اواخر تک ریاست میں انیل بھاگیہ اسکیم کے تحت گیس کنکشن اور سلینڈر مہیاکرائے جائیں۔ مرکزی وزیر نے اس سلسلے میں تیل کمپنیوں کو مناسب ہدایت دینے کا تیقن دیا۔ وزیراعلیٰ کے ہمراہ وزیر برائے تعمیرات عامہ ایچ ڈی ریونا بھی موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

ودھان سودھا میں میڈیا کے داخلے پر پابندی سے قریب ایک اور قدم، محکمۂ اطلاعات میں سرکاری میڈیا سنٹر کا قیام

ریاست کے مرکز اقدار ودھان سودھا میں صحافیوں کے داخلے پر پابندی لگانے پر بضد وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمارسوامی نے آج ایک بار پھر یہ بات دہرائی کہ شہر کے محکمۂ اطلاعات کے دفتر میں قائم مہاتما گاندھی میڈیا سنٹر کا استعمال صحافی اپنی سرگرمیوں کے لئے کرسکتے ہیں۔

احتجاجی کسانوں کو منانے کمار سوامی کی پہل، شکر کارخانوں کے مالکوں کو بقایا جات ادا کرنے کی سخت ہدایت

ریاست بھر کے کسانوں کی طرف سے کل شہر میں پرزور احتجاج کے بعد آج وزیراعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی نے کسان قائدین کے ساتھ بات چیت کی اور گنے کے کاشتکاروں کے مسائل کو جلد ازجلد حل کرنے کی یقین دہانی کے ساتھ آج شکر کے کارخانوں کے مالکوں سے بھی تبادلۂ خیال کیا۔

کاروار میں اترکنڑا ماہی گیروں کی جانب سے احتجاج کے بعد گوا حکومت پربڑھ گیا مچھلی کی درآمد پر لگائے گئے نئے قانون کو ہٹانے کا دبائو

کاروار میں اترکنڑا ماہی گیروں کی جانب سے احتجاج کے بعد گوا حکومت  مچھلی کی درآمد پر لگائے گئے نئے قانون کو ہٹانے کا دبائو بڑھ گیا ہے۔ کاروار میں ہوئے  سخت احتجاج کو دیکھتے ہوئے پیر کو گوا کے پنجی میں آل انڈیا فشرمین کانگریس (AIFC) اور گوا بوٹ یونین کے درمیان مسئلہ کے حل کے لئے ...