عبد الکریم ٹنڈاکو عمر قید کی سزا مزید 1لاکھ کا جرمانہ 

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 11th October 2017, 12:20 AM | ملکی خبریں |

سونی پت10؍اکتوبر ( ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا ) مقامی عدالت نے سلسلہ وار بم دھماکے کے ملزم 75 سالہ عبدالکریم عرف ٹنڈا کو آج عمر قید اور ایک لاکھ روپے جرمانہ کی سزا سنائی ہے ۔ اگرجرمانہ کی رقم 1لاکھ کی ادائیگی نہیں کی گئی تو مزید ایک سال کا اضافلہ کر دیا جائے گا۔ ایڈیشنل ضلع و سیشن جج ڈاکٹر سشیل کمار گرگ نے فیصلہ سناتے ہوئے قتل کی کوشش، سازش اور دھماکہ کرنے کی صورت میں مجرم قرار دیتے ہوئے عمر قید اور ایک لاکھ روپے جرمانہ بطور سزا سنائی ہے۔ دو الگ الگ دفعات کے تحت میں 50۔50 ہزار روپے جرمانہ بطور سزا مقرر کیا گیا ہے ۔ٹنڈا کے وکیل آشیش وتس نے بتایا کہ سزا کے خلاف ٹنڈا کی جانب سے ہائی کورٹ میں اپیل کی جائے گی۔ غور طلب ہے کہ 28 دسمبر 1996 میں سونی پت میں ترانہ سنیما کے باہر اور گیتا چوک واقع گلشن سوئٹ ہاوس کے قریب 10 منٹ کے وقفے پر دو بم دھماکے ہوئے تھے، اس میں ایک درجن سے زائد افراد زخمی بھی ہوئے تھے ۔ عبدالکریم ٹنڈا کے معاملے میں دو دیگر افراد پر بھی مبینہ سلسلہ وار بم دھماکہ کا ملزم گردانا گیا ہے ۔ دہلی پولیس نے اگست 2013 میں نیپال کی سرحد سے ٹنڈا کو گرفتار کیاتھا ۔ عدالت نے پیر کو ٹنڈا کو قصور وار قرار دیا تھا آج عدلیہ میں سزا کیلئے پیشی ہوئی تھی ۔ قریب 15 منٹ کے بعد ہی عدالت نے اسے عمر قید کے علاوہ دونوں دفعات کے تحت 1لاکھ جرمانہ بطور سزا سنا دیا تھا ۔ سزا کے اعلان کے بعد ایک گھنٹہ کے بعد پولیس نے عدالت سے ٹنڈا کو لے گئی ، ٹنڈا کو غازی آباد جیل لے جایا گیا ہے ۔ سزا صادر ہونے کے بعد قصور وار ٹنڈا نے عدلیہ سے درخواست کی کہ اسے غازی آباد کے ڈاسنا جیل منتقل کیا جائے۔ عدالت نے درخواست کو قبول کیا اور اسے ہدایت دی کہ اسے اسے غازی آباد میں واقع ڈاسنا منتقل کر دیا جائے ۔

ایک نظر اس پر بھی

مودی پر لالو کا وار ، کیا سخت تبصرہ ،چائے نہیں چرس بیچتے تھے مودی ،جے شاہ کے بہانے اینٹی کرپشن کے دعووں پرراجدلیڈرنے نشانہ پرلیا

آرجے ڈی صدر لالو پرساد مسلسل وزیر اعظم نریندر مودی اور بی جے پی پر حملہ کر رہے ہیں۔ اب انہوں نے وزیر اعظم پر سخت تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ وہ چائے نہیں چرس بیچتے تھے ۔

گجرات میں پھر وکاس کی شوشہ بازی ، روڈ شو میں بھیڑ کم ،ہماری سرکار وکاس کیلئے پابندعہد : مودی 

ملک میں وکاس کے نام پر وناش نے اپنے پاؤں پسار لیے ، نوٹ بندی ملک کی معیشت کو لے ڈوبی اور رہی سہی کسر جی ایس ٹی نے پوری کر دی؛ لیکن ان تمام حالات کے بعد بھی گجرات اسمبلی الیکشن کے تناظر میں وکاس کا کارڈ کھیلا جا رہا ہے۔

وسندھرا کے بل پر راہل کا تیکھا طنز،ہم اکیسویں صدی میں جی رہے ہیں ، یہ 2017ہے 1817نہیں : راہل گاندھی

کانگریس کے نائب صدر راہل گاندھی نے ایک متنازع آرڈیننس کے متعلق راجستھان کی وزیراعلی وسندھرا راجے کو ٹوئٹ کرتے ہوئے کہاکہ میڈم! ہم اکیسویں صدی میں جی رہے ہیں یہ 2017ہے ،1817نہیں ہے ۔