نئے طلبہ کا نہیں ہوا داخلہ ۔ضلع شمالی کینرا میں 12سرکاری اسکولوں پر لگا تالا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th July 2018, 12:25 PM | ساحلی خبریں |

کاروار10؍جولائی ( ایس اونیوز) محکمہ تعلیمات کی جانب سے فراہم کردہ معلومات کے مطابق امسال ایک بھی طالب علم کا نیا داخلہ نہ ہونے کی وجہ سے ضلع شمالی کینرا میں 12سرکاری اسکولوں کو عارضی طور پر بند کردیا گیا ہے۔ اس میں کاروار تعلیمی ضلع میں 7 اور سرسی تعلیمی ضلع میں 5لوئرپرائمری اسکول شامل ہیں۔

سرسی تعلیمی ضلع کے ڈپٹی انچارج ڈائریکٹر سی ایس نائک کا کہنا ہے کہ یہاں پر پہاڑی اور جنگلاتی علاقے میں بہت ہی کم آبادی ہے۔ اس لئے یہاں پرائمری اسکول کے طلبہ موجود نہیں ہیں۔ پچھلے سال ایسے علاقوں میں صرف تین اور چار طلبہ کے ساتھ اسکولوں کو جاری رکھا گیا تھا۔ امسال نئے داخلے صفر پر آگئے ہیں۔ اس لئے ایسے اسکولوں کوسرکاری احکام کے مطابق بند کردیناپڑاہے۔سرسی تعلیمی ضلع میں جن اسکولو ں کو بند کردیا گیا ہے ان میں ماوین کوپّا لوئر پرائمری اسکول سرسی تعلقہ، کلگار لوئر پرائمری اسکول سداپور تعلقہ، ہانچلّی اور بیلکھانڈ لوئر پرائمری اسکول یلاپور تعلقہ اور اردو لوئر پرائمری اسکول جوئیڈا شامل ہیں۔

کاروار تعلیمی ضلع میں جن اسکولوں کو بند کردیا گیا ہے ان میں کبگال لوئر پرائمری اسکول انکولہ تعلقہ ، مانگوڈلا لوئر پرائمری اسکول کمٹہ تعلقہ، بوگری بیل، کوڈلے اور نندن گدّا لوئر پرائمری اسکول کاروار ، سونکیری اردو پرائمری اسکول اور کھاروی واڈا لوئر پرائمری اسکول شامل ہیں۔

کاروار تعلیمی ضلع کے ڈپٹی ڈائریکٹر این جی نائک نے بتایا کہ بند کیے گئے اسکولوں کو آئندہ تین برسوں تک نہیں کھولا جائے گا۔ ان اسکولوں میں جو اساتذہ پڑھا رہے تھے انہیں عارضی طور پردوسرے اسکولوں میں بھیج دیا جائے گا۔پھر اگراسکولوں میں نیا داخلہ ہوتا ہے تو تین برسوں کے بعد یہ اسکول دوبارہ کھول دئے جائیں گے اوران اساتذہ واپس انہی اسکولوں میں تعینات کیا جائے گا۔

ایک نظر اس پر بھی

ریت کی سپلائی کا مستقل حل ڈھونڈ نکالنے بھٹکل رکن اسمبلی کی وزیراعلیٰ سے ملاقات؛ تعمیراتی کام ٹھپ پڑنے سے مزدوربھی پریشان

منگل کی شام بنگلورو کے ودھان سبھا ہال میں وزیرا علیٰ کمار سوامی کی صدارت میں منعقدہ میٹنگ میں بھٹکل کے رکن اسمبلی سنیل نائک نے اترکنڑا، اُڈپی اور دکشن کنڑا اضلاع میں ریت سپلائی شروع نہیں  کئے جانے سے پیش آنے والے مسائل کا تذکرہ کرتے ہوئے خوشگوار طورپر حل کرنے  کے لئے ریاستی ...

ہیلمٹ اور کاغذات نہ ہونے پربھٹکل پولس نے وصولا ایک ماہ میں 85 ہزار روپیہ جرمانہ؛ بائک اور کار کے بعد اب آئی آٹو کی شامت

شہر میں نئے آنے والے پولس سب انسپکٹر " کے کوسومادھر" جگہ جگہ گاڑیوں کی چیکنگ کرنے  میں لگے ہوئے ہیں اور ہیلمیٹ نہ پہننے ، گاڑی کے ضروری دستاویزات نہ ہونے، بغیر لائسنس گاڑی چلانے وغیرہ پر جرمانہ عائد کررہے ہیں۔  اب تک موٹر بائک اور کار وغیرہ کو روک کر چیکنگ کی جارہی تھی، مگر آج ...

کاروار: کرناٹکا اوپن یونیورسٹی کے لئے بی اے ، بی کام، ایم اے ، ایم کام داخلے کے لئے عرضیاں مطلوب: خواہش مند طلبا توجہ دیں

کرناٹکا اوپن یونیورسٹی کے  2018-2019کے تعلیمی سال سے لے کر 2022-2023تک یوجی سی کی طرف سے تصدیق کردہ بی اے ،بی کام ، بی لب،اور ایم اے کے مختلف کورسس کے لئے عرضیاں مطلوب ہیں۔ داخلے کے لئے بغیر جرمانہ کے 1اکتوبر آخری تاریخ  ہونے کی پریس ریلیز میں جانکاری دی گئی ہے۔

بھٹکل انجمن پی یوکالج  طلبا کی 3ٹیمیں ’آئی ٹی کوئز ‘مقابلے  میں ریجنل لیول کے لئے منتخب

انجمن پی یو کالج بھٹکل کی 3طلبا ٹیمیں کاروار  کے بال مندر ہائی اسکول میں منعقدہ ٹاٹا کنسلٹنسی انٹرکالج ابتدائی  آئی ٹی کوئز مقابلے میں  اپنی بہترین کارکردگی کامظاہرہ کرتے ہوئے ریجنل لیول کے لئے منتخب ہوئی ہیں۔ 10 اکتوبر کو دھارواڑ میں منعقد ہونے والے ریجنل لیول میں کالج کی ...

کیا جنگلاتی زمین کے حقوق سے متعلقہ مسائل حل کرنے میں دیش پانڈے ہورہے ہیں ناکام ؟ کاروار میٹنگ میں کئی اہم آفسران کی غیر حاضری پر دیش پانڈے گرم

کیا جنگلاتی زمین کے حقوق سے متعلقہ مسائل حل کرنے میں ضلع اُترکنڑا کے انچارج وزیر آر وی  دیش پانڈے ہورہے ہیں ناکام ثابت ہورہے ہیں ؟ یہ سوال اس لئے پیدا ہورہا ہے کہ پیر کو کاروار کے  ضلع پنچایت میٹنگ ہال میں منعقدہ کرناٹکا ڈیولپمنٹ پروگرام (کے ڈی پی) کی میٹنگ کی صدارت کرتے ہوئے ...