’بگ بین‘ آج جنگ عظیم اول کے اختتام کی یاد دلانے کو تیار!

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 11th November 2017, 8:18 PM | عالمی خبریں |

لندن،11؍نومبر (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)برطانیہ کے دارالحکومت لندن میں قائم 157 سال پرانا گھڑیال ’بگ بِین‘ مرمت کے جاری کاموں کی وجہ سے کئی ماہ سے خاموش ہے مگر آج 11 نومبر بہ روز ہفتہ پہلی جنگ عظیم کے اختتام کی یاد میں ’بگ بین‘ اپنی خاموشی توڑ کر اپنی مخصوص آواز میں جنگ بندی کی یاد تازہ کرے گا۔ برطانوی پارلیمنٹ کی عمارت سے متصل برج بلڈنگ پر لگے گھڑیال کی مرمت جاری ہے۔ اسے صرف ہنگامی طورپر پہلی جنگ عظیم کے اختتام کی اور جنگ بندی کی یاد میں دوبارہ بجایا جا رہا ہے۔ ایک ہفتے کے بعد بگ بین خاموش ہو جائے گا اور توقع ہے کہ سال نو کی تقریبات کے موقع پر اسے پھر سے استعمال کیا جائے گا۔’بگ بین‘ رواں سال وسط اگست سے خاموش ہے۔ اس کی مرمت کام جاری ہے جو چار سال تک جاری ہے گا۔ اس دوران صرف اہم مواقع پر ہی بگ بین کو بجایا جائے گا۔ بگ بین کیمرمتی منصوبے پر 61 ملین پاؤنڈز کا تخمینہ لگایا گیا ہے۔خیال رہے کہ لندن کا یہ مشہور زمانہ گھڑیال ایک سو ستاون سال پرانا ہے۔ طویل عرصہ گذرنے کے بعد اس میں خرابیاں پیدا ہونے کے ساتھ دراڑیں بھی پڑ گئی ہیں۔ برطانوی حکومت ایک عرصے سے اس گونج دار آواز والے گھڑیال کو دس ٹن کے ’لٹل جان‘ گھنٹے سے تبدیل کرنے پر غور کررہی تھی۔خیال رہے کہ لندن میں پارلیمان کی عمارت ویسٹ منسٹر محل میں واقع گھڑیال کا ٹاور 96 میٹر بلند ہے۔ 13.7 ٹن وزنی اس گھڑیال کو ’بِگ بین‘ کا نام دیا گیا۔ یہ گھڑیال اگرچہ اگلے چار سال کے دوران گھنٹہ پورا ہونے کی گھنٹی تو نہیں بجائے گا البتہ یہ متبادل مشین کی مدد سے درست اوقات دکھاتا رہے گا۔

ایک نظر اس پر بھی

فرش سے عرش تک لبیک اللھم کی صدائیں،مناسک حج کا آغاز؛ عرفات پہنچنے والے لاکھوں افراد میں 175025 ہندوستانی عازمین بھی شامل

دنیا بھر سے ہر قوم و نسل کے تقریبا 30 لاکھ عازمین حج جس میں ہندوستان کے 175025 عازمین بھی شام ل ہیں،  بیت اللہ کیلئے مکہ مکرمہ میں ہیں جو عمرے کی ادائیگی کے بعد رات سے ہی بسوں اور دیگر گاڑیوں میں سوار ہوکر اور پیدل منیٰ پہنچ رہے ہیں۔

عمران خان نے پاکستانی وزیراعظم کے عہدے کا حلف لیا

پاکستان کے نو منتخب وزیر اعظم عمران خان نے ہفتہ کو ملک کے22ویں وزیر اعظم کے عہدے کا حلف لیا۔صدر ممنون حسین نے ایوان صدر (پریسیڈنٹ ہاؤس) میں منعقدہ ایک سادہ تقریب میں مسٹر خان کو وزیر اعظم کے عہدے کا حلف دلایا۔