گزشتہ سال فرقہ وارانہ تشدد کے 822واقعات میں111افرادہلاک ہوئے:حکومت

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 6th February 2018, 8:10 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی،6؍ فروری (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)ایک طرف بی جے پی لیڈران یہ دعوے کرتے ہیں کہ بی جے پی کے اقتدارمیں آنے کے بعدلاء اینڈرآرڈردرست ہوئے۔بی جے پی مذہب کی سیاست نہیں کرتی ،وہ سب کاساتھ سب کاوکاس کررہی ہے اورفرقہ وارانہ فسادات یاتشددنہیں ہوئے دوسری طرف حکومت نے کہاہے کہ گزشتہ سال ملک بھر میں 822فرقہ وارانہ واقعات ہوئے جن میں111افرادہلاک ہو گئے اور 2,384 افراد زخمی ہو گئے۔لوک سبھا میں ایک سوال کے جواب میں وزیر داخلہ ہنس راج اہیرنے کہاہے کہ 2017میں فرقہ وارانہ تشدد کے سب سے زیادہ 195 واقعات اتر پردیش میں ہوئے جہاں44افرادہلاک اور542زخمی ہوئے۔انہوں نے کہاہے کہ کرناٹک میں گزشتہ سال 100فرقہ وارانہ واقعات ہوئے جن میں نوافراد ہلاک اور 229زخمی ہوگئے۔راجستھان میں ایسے 91واقعات ہوئے جن میں 12 افراد ہلاک اور175زخمی ہوگئے۔وزیر نے کہا کہ 2017میں بہار میں 85فرقہ وارانہ واقعات ہوئے جن میں تین لوگوں کی موت ہوگئی اور 321زخمی ہوئے۔مدھیہ پردیش میں 60 واقعات ہوئے اور ان میں نو افراد ہلاک اور 191زخمی ہوئے۔انہوں نے کہا کہ گزشتہ سال مغربی بنگال میں فرقہ وارانہ تشدد کے 58واقعات ہوئے جن میں نو افراد ہلاک اور 230زخمی ہوگئے۔گجرات میں 50 واقعات ہوئے اور آٹھ افراد ہلاک اور 125 زخمی ہوگئے۔

ایک نظر اس پر بھی

سیلاب متاثرہ کیرالہ کی مدد کے لیے اکھلیش یادونے کی جذباتی اپیل 

کیرالہ اب صدی کی سب سے بڑی تباہی کا شکار ہے۔گزشتہ 100 سالوں میں کیرل نے ایسی تباہی نہیں دیکھی تھی، جس کی مار ابھی وہ جھیل رہا ہے۔ سیلاب سے تباہ کیرالہ اور وہاں کے لوگوں کے لئے چاروں طرف سے مدد کے ہاتھ اٹھ رہے ہیں۔

مظفر پورشیلٹرہوم: منجو ورماکے خلاف آرمس ایکٹ کے تحت مقدمہ درج

مظفر پورشیلٹرہوم جنسی تشدد معاملے میں بہار کی سابق سماجی فلاح وبہبودکی وزیر منجو ورما کی رہائش گاہ پر ہوئے سی بی آئی کے چھاپے کے دوران 50کارتوس ملنے کے بعد ورما اور ان کے شوہر کے خلاف ایف آئی آر درج کر لی گئی ہے۔

مڈکیری میں سیلاب سے متاثرہ علاقہ کے دورہ کے وقت ہی زمین کھسک گئی؛ ایم پی اور ایس پی بال بال بچ گئے

ضلع کورگ کے مڈکیری عرف مرکیرہ کے رکن اسمبلی اپاجو رنجن کے  بارش سے متاثرہ علاقوں کا  دورہ کرنے کے موقع پر اچانک زمین کھسکنے کی واردات پیش آئی ہے، بتایا گیاہے کہ ان کے ہمراہ ضلع کورگ کی ایس پی ڈاکٹڑ سومنا پنّیکر بھی موجود تھی۔

نابالغ 5 سال کی بھتیجی کے ساتھ چچا نے کیا ریپ ، قتل کرکے جنگل میں پھینکا

مدھیہ پردیش کے رائے سین ضلع میں نابالغ سے ریپ کا ایسا معاملہ سامنے آیا ہے ۔ جس میں ایک چچا نے چاچا ۔ بھتیجی کے رشتے کو شرمسار کر دیا ہے۔ چاچا نے پانچ سال کی بھتیجی کے ساتھ ریپ کرکے اس کا قتل کرکے اسے جنگل میں پھینک دیا۔