ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے
Mohtis Side Banner
img

بھٹکل:جھوٹی یقین دہانیوں میں ہی بوسیدگی کا شکار پلی ندی کا پُل: عوامی نمائندوں کا منتظر

یہاں عوام مسجد کو ’’پَلیِّ‘‘ کے نام سے بھی موسوم کرتے ہیں ، تعلقہ کے شرالی سے الویکوڑی جانے کے لئے سفر کرتے ہیں تو وہاں ایک ندی بہتی نظر آئے گی ، ندی کے بالکل پاس ہی مسجد ہونے کی وجہ سےیہ ندی ’’ پلی ندی ‘‘کے نام سے معروف و مشہور ہے۔ ندی کو پار کرنے کے لئے زمانہ قدیم پہلے جو برج تعمیر کیا گیاتھا وہ بوسیدہ ہوگیا ہے ، سیاست دانوں کے جھوٹی یقین دہانیوں کی بدولت یہ پُل خطرے میں ہے اور اس پر گزرنے والے مسافر جان مٹھی میں باندھ کر گزرنے کی شکایت کررہے ہیں۔

img

سول سروسس کے امتحانات اور مسلم نوجوان تحریر: آفتاب حسین کولا

ہندوستان میں اکثر مسلم نوجوان اپنی اعلیٰ تعلیم کے لئے ڈاکٹر، انجینئریا ایم بی اے کا شعبہ اختیار کرتے ہیں۔جس کی وجہ سے دیگر پیشہ وارانہ شعبہ جات اورخاص کر سول سروسس کے اہم ترین شعبے میں مسلمانوں کی نمائندگی بہت ہی کم نظر آتی ہے۔حالانکہ مسلمانوں میں تعلیم کا گراف کافی حد تک بڑھ گیا ہے مگر طلباء کی صحیح سمت میں رہنمائی کے فقدان کی وجہ سے حقیقی معنوں میں مسلم ملت کی سماجی ترقی کا رخ متعین نہیں ہوسکا ہے۔

img

یہ ہے شہر بھٹکل کا بس اسٹانڈ!۔۔۔ کیا یہ کلین بھٹکل۔گرین بھٹکل ہے؟!

ایک جانب سارے ملک میں سوچّتا ابھیان (صفائی مہم) چل رہی ہے تو دوسری جانب بھٹکل شہر میں کلین سٹی۔ گرین سٹی کی مہم چلائی جا ری ہے۔یہ ایک عام قاعدہ ہے کہ کسی شہر کی ترقی کے بارے میں اندازہ لگانا ہوتو پھر وہاں کے بس اسٹانڈاوراس کے اطراف پر ایک نظر ڈالنا کافی ہوتا ہے۔ اس سے سارے شہر کی جو حالت ہے اس کا نقشہ سامنے آجا تا ہے۔

img

دہلی، مسلم تنظیمیں او ردہشت گردی از:شکیل رشید

دہلی ان دنوں ڈینگی وائرس اور ڈینگو کی چپیٹ میں ہے مگراس کی رفتار دھیمی نہیں پڑ ی ہے۔ سڑکوں پر ٹریفک کا وہی اژدہام ہے جسے کم کرنے کے لئے وزیراعلیٰ اروند کیجری وال نے Odd & Evenکا سلسلہ شروع کیا تھا۔ لوگوں کی دوڑ بھاگ بھی ویسی ہی ہے جیسی کہ عام دنوں میں رہا کرتی ہے۔ ممبئی کی طرح دہلی شہر بھی رات میں جاگتا ہے مگر یہ راتوں کاجاگنا سب کونظر نہیں آتا ۔